تازہ ترین

Marquee xml rss feed

قومی اسمبلی میں پارلیمانی سیکرٹریٹ برائے پائیدار ترقیاتی اہداف کے قیام کو ایک سال مکمل ہوگیا،رکن قومی اسمبلی و وزیر مملکت برائے اطلاعات ونشریات وقومی ورثہ ایم این اے ... مزید-وفاقی دارالحکومت کے پولی کلینک اسپتال میں کامیاب آپریشن کے ذریعے 13سالہ لڑکی کی جنس تبدیل ، عطیہ نامی لڑکی کا نام جنس بندلنے کے بعد عدنان رکھ دیا گیا میڈیکل کے لحاظ سے ... مزید-سیالکوٹ ،بھارتی سیکیورٹی فورسز کی سرحدی گائوں پر فائرنگ سے 54 سالہ خاتون شہید رینجرز حکام کے بی ایس ایف سے مذاکرات ،خاتون کی نعش واپس کر دی ، رینجر زحکام نے لو احقین ... مزید-ایف آئی اے نے اسلام آباد سے انسانی اسمگلر گرفتار کر لیا ،ملزم نے شہریوں کو بیرون ملک کا جھانسا دے کر لاکھوں روپے بٹورے-وزیر اعلیٰ پنجاب کاراولپنڈی میں پتنگ بازی اور ہوائی فائرنگ کے واقعات کا سخت نوٹس، اے ایس پی اور ایس ایچ او تھانہ صدر راولپنڈی کو فوری معطل کرنے کا حکم-پانامہ کیس میں سپریم کورٹ کا ہرفیصلہ قبول کریں گے ‘ عدالت کے خلاف نہیں جائیں گے ‘ وزیر اعظم ترکی میں بیٹھ کر دہشت گردی کے خلاف جنگ لڑ رہے ہیں ‘ افغانستان سے فوجی انخلاء ... مزید-پشاو: بس ریپڈ ٹرانزٹ منصوبے پر تعمیراتی کا م کا آغاز کرکیکم سے کم مدت میں مکمل کیا جائے،پرویز خٹک ْمنصوبے کے تینوں پیکیجز کاٹینڈر30 اپریل تک جاری کیا جائے، منصوبے کو ایک ... مزید-پشاور:صوبائی حکومت نے ہر فیصلے میں عام آدمی کو مد نظر رکھنیکی وجہ سیتحریک انصاف پر عوام کا اعتماد روز بروز بڑھتا جارہا ہے، پرویز خٹک تحریک انصاف گزشتہ تین سالوں سے نظام ... مزید-پشاور: مردان میں جاری ترقیاتی سکیموں کو بروقت مکمل کیا جائے،پرویز خٹک تحصیل کاٹلنگ کی عمارت 31مارچ تک مکمل کرکے متعلقہ حکام کے حوالے جبکہ کاٹلنگ میں ریسکیو 1122کے لئے اراضی ... مزید-آپریشن ردالفساد پاکستان میں دہشت گردی اور انتہا پسندی کے تابوت میں آخری کیل ثابت ہو گا،مقررین کا سیمینار سے خطاب

GB News

پاکستان میں واقع 10 حیرت انگیز پہاڑی درے جن کے بارے میں شاید کبھی سنا ہوگا

page

ایک پہاڑی درہ  پہاڑ کی حد کے ذریعے یا ایک چوٹی پر راستہ ہوتا  ہے جو کہ سفر کرنے کے لئے استعمال کیا جاتا ہے دروں نے تجارت ، جنگ ، اور منتقلی میں اہم کردار ادا کیا ہے آپ نے قراقرم  کا نام تو سنا ہوگا مگر پاکستان میں اور بھی بلند درے موجود ہیں جن پر خوبصورت چراگاہیں اور ایسی جھیلیں موجود ہیں جنہیں چودویں کی رات کو دیکھنے پر دیوانگی طاری ہو سکتی ہے

 1 منتقا پاس Mintaka Pass (4,700)

سطح سمندر سے 4،700 میٹر پر واقع ، خنجراب کے مغرب قراقرم میں یہ مشہور اعلی پہاڑ کے پاس قدیم شاہراہ ریشم پر مسافروں کی طرف سے استعمال کیا جاتا تھا

The Mintaka Pass

2 گوندوگورو لا Gondogoro La( 5,940 m)

یہ حیران کن درہ 5.940 میٹرکی بلندی پر واقع ہے ، یہ گلگت بلتستان میں حوشی وادی کو کونکورڈیا سے منسلک کرتا ہے دنیا میں سب سے اونچے دروں میں سے ایک ہے . اس کے اوپر سے کے ٹو اور 8،000 میٹر کے تین دیگر پہاڑوں کو دیکھا جا سکتا ہے

Gondogoro La (Pass)

3 ددریلی پاس Dadarili Pass (5,030m)

یہ علی پہاڑی درہ گلگت بلتستان میں غذر کی وادی کو بالائی سوات سے جوڑتا ہے

m4

 4 چلنجی لاChillinji La(5300m)

یہ پاس 5،300 سے زائد میٹر پر واقع ہے، یہ پاس بالائی ہنزہ کے چپرسن کی وادی کے ساتھ اشکومن میں کرمبر کی وادی کو جوڑتا ہے

Chillinji la

5 برزل پاس Burzil Pass(4,100m)

گلگت بلتستان کے ضلع استور، دیوسائی نیشنل پارک کے مغرب میں واقع . یہ ایک  پاس ہے  – لیکن یہ لائن آف کنٹرول (اسے سرینگر کے ساتھ گلگت مربوط کرنے کے لئے استعمال کیا جاتا) کے قریب ہے ،  پاس کو عبور کر کے پاکستانی حدود تک ہی جایا جاسکتا ہے

Burzil Pass

Burzil Pass Photo Basitt Ali

6 شمشال پاس Shimshal Pass (4,735m)

یہ درہ 4.735 میٹرکی بلندی پر واقع ہے ،یہ شمشال کی وادی برلڈو دریا کی طرف ہے یہ علاقےکے ٹو کے شمال چہرے کی طرف جانے کے لیے کوہ پیما استعمال کرتے ہیں

shimshal_pass

7 کرمبر پاس Karambar Pass(4,300m)

یہ درہ 4،300 میٹرکی بلندی پر واقع ہے  ، یہ درہ  ضلع غزر کے اشکومن وادی کو  کرمبر دریا  کے بالائی چترال میں وادی سےجوڑتا ہے

karumbar lake and pass

8 بورگل پاس Boroghil Pass (3,800m)

یہ درہ 3،800 میٹرکی بلندی پر واقع ہے ،یہ پہاڑی درہ افسانوی واخان کوریڈور میں ہے جو افغانستان کے بدخشاں صوبے کو پاکستان کے ضلع چترال سے ملاتا ہے

Borghil Valley Photo By Atif Saeed

Borghil Valley Photo By Atif Saeed

9 کاچی کانی پاس Kachikani Pass (4,700m)

یہ درہ 4،700 میٹرکی بلندی پر واقع ہے  اس پاس کے مغرب میں چترال کی وادی ہے جس کو پاکستان کے سرمی وادی سوات کے ساتھ جوڑتا ہے

The Kachikani Pass

10 بابوسر پاس Babusar Pass (4,173m) 

یہ درہ 4,173 میٹرکی بلندی پر واقع ہے ، وادی کاغان کو شاہراہ قراقرم پر چلاس کے ساتھ سے تھک نالہ کے ذریعے سے منسلک کرتا ہے

Babusar

Share Button