تازہ ترین

Marquee xml rss feed

شیریں مزاری نے ایران میں سیاہ برقع کیوں پہنا؟ ایران میں خواتین کا سر کو ڈھانپ کر رکھنا سرکاری طور پر لازمی ہے، اس قانون کا اطلاق زوار، سیاح مسافر خواتین، غیر ملکی وفود ... مزید-وفاقی وزیر برائے تعلیم کا پاکستان نیوی کیڈٹ کالج اورماڑہ اور پی این ایس درمان جاہ کا دورہ-پاکستانی لڑکیوں سے کئی ممالک میں جس فروشی کروائے جانے کا انکشاف لڑکیوں کو نوکری کا لالچ دیکر مشرق وسطیٰ لے جا کر ان سے جسم فروشی کرائی جاتی ہے، اہل خانہ کی جانب سے دوبارہ ... مزید-جدید بسیں اب پاکستان میں ہی تیار کی جائیں گی، معاہدہ طے پا گیا چینی کمپنی پاکستان میں لگژری بسوں اور ٹرکوں کا پلانٹ تعمیر کرے گی، 5 ہزار نوکریوں کے مواقع پیدا ہوں گے-وفاقی وزارتِ مذہبی امور نے ملک میں ایک ساتھ رمضان کے آغاز کے لیے صوبوں سے قانونی حمایت مانگ لی ملک بھر میں ایک ہی دن رمضان کے آغاز کے لیے وزارتِ مذہبی امور نے صوبائی اسمبلیوں ... مزید-جہانگیر ترین یا شاہ محمود قریشی، کس کے گروپ کا حصہ ہیں؟ وزیراعلی پنجاب نے بتا دیا میں صرف وزیراعظم عمران خان کی ٹیم کا حصہ ہوں، کسی گروپنگ سے کوئی تعلق نہیں: عثمان بزدار-اسلام آباد میں طوفانی بارش نے تباہی مچا دی جڑواں شہروں راولپنڈی، اسلام آباد میں جمعرات کی شب ہونے والی طوفانی بارش کے باعث درخت جڑوں سے اکھڑ گئے، متعدد گاڑیوں، میٹرو ... مزید-گورنر پنجاب چوہدری سرور کی جانب سے اراکین اسمبلی،وزراء اور راہنماؤں کے لیے دیے جانے والے اعشائیے میں جہانگیرترین کو مدعونہ کیا گیا 185میں سے صرف 125اراکین اسمبلی شریک ہوئے،پرویز ... مزید-بھارت کی جوہری ہتھیاروں میں جدیدیت اور اضافے سے خطے کا استحکام کو خطرات لاحق ہیں،ڈاکٹر شیریں مزاری جنوبی ایشیاء میں ہتھیاروں کی دوڑ سے بچنے کیلئے پاکستان کی جانب سے ... مزید-وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا نے ضلع کرم میں میڈیکل کالج کے قیام اور ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال کی اپ گریڈیشن کا اعلان کردیا ضلع کرم میں صحت اور تعلیم کے اداروں کو ترجیحی بنیادوں ... مزید

GB News

بوا فقیر ابراہیم ہزاروں سوگواروں کی موجودگی میں آہوں سسکیوں میں خپلو میں سپر د خاک

Share Button

سکردو(محمد اسحاق جلال+شمیم بگٹی+سید نظام الدین تھلوی)صوفیہ نور بخشیہ مسلک کے روحانی پیشواءبوا فقیر ابراہیم کو ہزاروں سوگواروں کی موجودگی میں آہوں سسکیوں میں خپلو میں سپر د خاک کر دیا گیا تدفین کے موقع پر رقت آمیز مناظر دیکھنے میں آئے مرحوم کے مرید غم سے نڈھال تھے مرحوم کی نماز جنازہ ہائی سکول خپلو کے گراونڈ میں اداکی گئی معروف عالم دین مفتی سید جمال الدین نے نماز جنازہ پڑھائی نماز جنازہ میں ہزاروں لوگوں کے علاوہ سپیکر قانون ساز اسمبلی حاجی فدا ناشاد ، صوبائی وزیر حاجی ابراہیم ثنائی ،رکن اسمبلی میجر(ر) محمد امین ، محمد شفیق،پیپلزپارٹی کے صوبائی جنرل سکریٹری انجینئر اسماعیل اور دیگر سیاسی مذہبی شخصیات نے شرکت کی بوا فقیراور حادثے میں جاں بحق ہونے والے مریدوں کی میتیں سکردو سے 8گھنٹے کی طویل مسافت کے بعد خپلو پہنچیں ہمایوں پل ، غواڑی ، کھر فق، کورو ، براہ میں نماز جنازہ ادا کی گئی اور مریدوں نے بوافقیر اور ان کے ساتھیوں کی میتوں کو کندھا دیا جگہ جگہ پر لوگ آہ وزاری کرتے رہے سرپیٹ کرمرید اپنے پیشواءکو خراج عقیدت پیش کرتے رہے بوا فقیر اپنے 7مریدوں کے ہمراہ گزشتہ روز سدپارہ روڈ پر ٹریفک کے المناک حادثے میں جاں بحق ہو گئے تھے بوا فقیر کی دو بیگمات تھیں اور ان کی چار بیٹیاں اور 2بیٹے ہیں مرحوم کا جسد خاکی اٹھا تو کہرام مچ گیا اور 3درجن سے زائد مریدرو، روکر بے ہو ش ہو گئے جامع مسجد چقچن کے خطیب مولانا عبدالسلام نے بو ا فقیر ابراہیم کی نماز جنازہ میں شریک افراد سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ الحاج ابراہیم عرف بوافقیر بڑے عالم دین تھے انہوں نے ہمیشہ اسلام کی تبلغ کو اپنا شعار بنایا زندگی بھر ریا ضت کی اور اپنے ہزاروں مرید پیدا کئے لوگوں نے مرحوم کے ساتھ 90،90روز تک بھی اعتکاف کیا انہوں نے کہا کہ بوافقیر ابراہیم بڑے سخی انسان تھے کوئی بھی شخص ان کے گھر سے بھوکا واپس نہیں جاتا تھا لیکن آج ان کی رحلت کے بعد غریبوں کے گھروں میں فاقہ کشی شروع ہو گئی ہے انہوں نے کہاکہ بوا فقیر کے افکارکو ہمیشہ یاد رکھیں گے سپیکر حاجی فدا ناشاد نے کے پی این سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ بوا فقیر کی حادثاتی موت یقیناً ایک عظیم سانحہ ہے اس سانحے پر پوری قوم غمزدہ ہے تمام مکاتب فکر کے لوگوں نے بوا فقیر کی نماز جنازہ میں شرکت کر کے اتحاد بین المسلمین کا بڑا پیغام دیا ہمیں اتحاد بین المسلمین کے جذبے کو پروان چڑھا نا چاہئے صوبائی وزیر تعلیم حاجی ابراہیم ثنائی نے کہاکہ بوا فقیر ابراہیم عظیم شخصیت کے مالک تھے ان کی موت سے صوفیہ نور بخشیہ مسلک کو ناقابل تلافی نقصان پہنچاسابق رکن اسمبلی آمنہ انصاری ایڈووکیٹ نے کہا کہ بوا فقیر تمام مریدوں کو تنہا چھوڑ کر چلے گئے ان کی خدمات شاندار ہیں انہیں یاد رکھا جائے گا دریں اثناءبوا فقیر اور ان کے مریدوں کی موت کے سوگ میں گانچھے میں تجارتی مراکز بند رہے اور ضلع بھر میں عام تعطیل رہی ۔

Facebook Comments
Share Button