تازہ ترین

Marquee xml rss feed

وزیر اعظم عمران خان کی روضہ رسول ﷺ پر حاضری، سعودی حکام کی جانب سے روضہ رسولﷺ کے دروازے خصوصی طور پر کھول دیئے گئے-آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی چین کے سنٹرل ملٹری کمیشن کے وائس چیئرمین جنرل یانگ یوشیا سے ملاقات کی، دہشتگردی کے خاتمے، ہتھیاروں و سازوسامان کی ٹیکنالوجی اور ٹریننگ ... مزید-ڈاکٹر بننے کا خواب دیکھنے والی خاتون نے ٹرک چلانا شروع کر دیا ناگرپارکر سے تعلق رکھنے والی خاتون مالی مشکلات کی وجہ سے ڈاکٹر نہیں بن سکی تھی-موسمیاتی تغیرات کے اس دور میں بجلی پیدا کرنے کیلئے ایٹمی توانائی کا استعمال امید افزاء آپشن ہے، ہم پاکستان میں نیوکلیئر ٹیکنالوجی کے پرامن استعمال کے فروغ کیلئے آئی ... مزید-سعودی عرب اور پاکستان کے درمیان دوستانہ اور تاریخی تعلقات قائم ہیں، وزیراعظم عمران خان کا دورہ انتہائی اہمیت کا حامل ہے،سعودی عرب اور پاکستان دنیا میں اسلام کی حقیقی ... مزید-کیا کل نواز شریف اور مریم نواز کی سزا معطل کی جا رہی ہے؟ نیب عدالت کو مطمئن نہیں کر پا رہی اس سے اندازہ ہو رہا ہے کہ معاملات کس طرف جا رہے ہیں،ملزمان کا پلڑہ بھاری نظر آ ... مزید-اسد عمر اور اسحاق ڈار میں کوئی فرق نہیں اسد عمر نے بھی اعدادو شمار کا ہیر پھیر کر کے اسحاق ڈار والے کام کیے-پی ٹی آئی نے جو منشور دیاتھا اور جو اعلانات کیے ، ان پر عملدرآمد حکومت کا امتحان ہے ‘سراج الحق عوام نے انہیں گیس ، بجلی اور پٹرول مہنگا کرنے کے لیے نہیں، سستا کرنے کے ... مزید-اہل بیت کی عظم قربانی درحقیقت پوری امت مسلمہ کے لئے درخشاں مثال ہے‘چوہدری محمد سرور اللہ کی رسی کو مضبوطی سے تھامے رکھنا اور فرقہ واریت کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنا وقت کی ... مزید-وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کا وزیراعلیٰ سیکریٹریٹ کے مختلف شعبوں کا معائنہ

GB News

غذر میں دہشت گردی کے خدشات

Share Button

صوبائی وزیر سیاحت فدا محمد خان نے کہا ہے کہ گلگت سے غذر جانے والی گاڑیوں کی خصوصی چیکنگ ہونی چاہیے’شاہراہ غذر ہی وہ واحد راستہ ہے جہاں سے دہشت گرد داخل ہو سکتے ہیں۔دہشت گردی نے پورے ملک کو اپنی لپیٹ میں لے رکھا ہے اگرچہ آپریشن ضرب عضب کے بعد دہشت گردوں کی کمر توڑ دی گئی ہے اور وہ چوہوں کی طرح کونے کھدروں میں چھپے ہوئے ملک دشمنوں کی ایما پہ وقتا فوقتا دہشت گردانہ کارروائیوں کے ذریعے بے گناہوں کا خون بہا کر اپنی موجودگی کا ثبوت دینے کی کوشش کرتے ہیں لیکن یہ باقی ماندہ دہشت گرد بھی جلد کیفر کردار کو پہنچنے والے ہیں۔گلگت بلتستان میں دہشت گردوں کی جانب سے دی جانے والی دھمکیاں نظر انداز کرنے کے قابل نہیں ہیں ان دہشت گردوں کو جنہوں نے مبینہ طور پہ یہ دھمکیاں دی ہیں انہیں کیفر کردار تک پہنچانے کا لائحہ عمل متعین کیا جانا چاہیے ۔اگر شاہراہ غذر کے ذریعے دہشت گردوں کے داخلے کے امکانات ہیں تو اس شاہراہ پہ سیکیورٹی کے فول پروف انتظامات کرنے چاہیں تاکہ دہشت گرد کسی بھی صورت علاقے میں داخل نہ ہو سکیں۔سابق ممبر قانون ساز اسمبلی ایوب شاہ نے بھی یہ مطالبہ کیا ہے کہ غذر کے داخلی راستوں پہ پاک فوج کے دستے تعینات کیے جائیں ان کا کہناہے شندور ‘اشکومن اور درکور کے بارڈر سے دہشت گردوں کے گھسنے کے خدشات ہیں توضرورت اس بات کی ہے کہ ان علاقوں پہ سیکیورٹی اور انٹیلی جنس کوزیادہ مربوط و منظم بنایا جائے اور ضرورت کے مطابق پاک فوج کے دستوں کی تعیناتی پہ بھی غور کیا جائے۔

Facebook Comments
Share Button