GB News

موجودہ حکومت نے ہر روز 4.5 ارب روپے کا ریکارڈ قرضہ لیا

Share Button

کراچی : موجودہ حکومت نے ہر روز ساڑھے چار ارب روپے کا ریکارڈ قرضہ لیا۔ موجودہ حکومت کے ساڑھے تین سالہ دور میں ہر پاکستانی فی کس 30 ہزار روپے کا مزید مقروض ہو گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ سالوں کے دوران پاکستان میں آنے والی حکومتیں ملک میں نئے منصوبے شروع کرنے کے لئے قرضے لیتی رہی ہیں جس وجہ سے اس وقت پاکستان پرغیرملکی قرضوں کا بوجھ 75 کھرب سے زیادہ ہو چکا ہے۔ موجودہ صورت حال میں ہر پاکستانی تقریبا 4 لاکھ روپے کا مقروض ہو چکا ہے اور اس وجہ سے پاکستان میں قائم ہونے والی بیشتر حکومتوں نے مزید قرضے لینے کے لئے انتہائی قیمتی قومی اثاثوں کو گروی بھی رکھنا شروع کر دیا ہے۔

موجودہ حکومت نے یومیہ ساڑھے 4 ارب روپے قرضہ لینے کا ریکارڈ بنا دیا۔ موجودہ حکومت کے گزشتہ ساڑھے 3 سالہ دور میں ہر پاکستانی 30 ہزار کا مزید مقروض ہو گیا ہے۔ اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے اعداد و شمار کے مطابق نومبر 2016 تک پاکستان پر قرضوں کا بوجھ 19 ہزار 717 ارب روپے تک پہنچ گیا۔ جو موجودہ حکومت کے اقتدار میں آنے کے وقت جون 2013 میں 14ہزار 7 ارب روپے تھا۔

اسٹیٹ بینک کے مطابق موجودہ دور حکومت میں 5 ہزار 709 ارب روپے کا ریکارڈ قرضہ لیا گیا۔ آئی ایم ایف کے مطابق پاکستان کا ہرشخص ایک لاکھ 4 ہزار روپے کا مقروض ہے۔

Facebook Comments
Share Button