تازہ ترین

Marquee xml rss feed

قومی احتساب بیورو میں افسران کی خلاف ضابطہ تقرریوں کا معاملہ، نیب لاہور کے چار سینئر افسران نے استعفیٰ دیدیا-سابق ادوار میں کیشنگی کے نام پر کروڑوں کی کرپشن کی گئی،میر غلام دستگیر بادینی عوام کو مصنوعی طورپر پسماندہ رکھنے والوں کے مکروہ چہرے آشکارہوچکے ہیں،رکن بلوچستان اسمبلی-آئندہ الیکشن میں پیپلزپارٹی بھرپور کامیابی حاصل کرکے حکومت بنائے گی،ڈاکٹرسیدہ نفیسہ شاہ-پیپلزپارٹی کے رہنما سینیٹر عاجز دھامرہ کا شیخوپورہ کے قریب ریلوے حادثے پر اظہار افسوس-ماہ رجب کی رویت کا شرعی فیصلہ کرنے کے لیے مرکزی رویتِ ہلال کمیٹی کا اجلاس کل ہوگا، مفتی منیب الرحمن-مسلم لیگ(ن)آئندہ الیکشن میں مخالف جماعتوں کاصفایاکردے گی،شہبازشریف پیپلزپارٹی پہلے کراچی کاکچراصاف کرے پھرپنجاب کی بات کرے،میٹروکوجنگلابس کہنے والوں نے فوائددیکھے ... مزید-کراچی ،ناظم آباد میں بس پر فائرنگ پولیس اہلکار نے کی ، معمہ حل پولیس اہلکار واقعے کے بعد جائے حادثہ سے غائب ، شک پڑنے پر حراست میں لے لیا گیا ، مقدمہ درج کر کے تفتیش کا ... مزید-اوور لوڈنگ یا چھتوں پر مسافروں کو سوار کرنے والی بسوں، وینز یا کوچز کے خلاف قانونی کارروائی کو یقینی بنایا جائے،آئی جی سندھ-امتحانات کے دوران لوڈشیڈنگ نہ کی جائے،جام مہتاب حسین ڈھر-طلبا ملکی ترقی میں بڑھ چڑھ کر حصہ ڈالیں،بلاول بھٹو

GB News

پاکستان کو دوبارہ آسٹریلیا میں نہ بلایا جائے، آی این چیپل نے حکام کو مشورہ دے دیا

news-1483439777-6231

آسٹریلیا کے سابق کپتان ای این چیپل نے ٹیسٹ سیریز میں کلین سوئپ شکست سے دوچار ہونے والی پاکستانی ٹیم کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے آسٹریلین کرکٹ حکام کو آئندہ پاکستانی ٹیم کو اپنے ملک نہ بلانے کا مشورہ دیا ہے۔ابتدائی ٹیسٹ میچ میں بھرپور مزاحمت کا مظاہرہ کرنے والی پاکستانی ٹیم بقیہ دونوں ٹیسٹ میچوں میں بدترین شکستوں سے دوچار ہو کر سیریز 3-0 سے ہار گئی۔

آئن   چیپل نے پاکستان کی آسٹریلیا میں ناقص فارم کا تذکرتے ہوئے کہا کہ پاکستان اب آسٹریلیا میں لگاتار 12 ٹیسٹ میچ ہار چکا ہے اور کرکٹ آسٹریلیا کو کہنا چاہیے کہ اگر کارکردگی میں بہتری نہ آئی تو ہم دعوت دینا چھوڑ دیں گے۔سابق آسٹریلین کپتان نے کہا کہ میلبرن ٹیسٹ میں پاکستان کی فیلڈنگ سے اندازہ ہو گیا تھا کہ بقیہ سیریز کا نتیجہ کیا نکلنے والا ہے۔انہوں نے کہا کہ آپ مستقل خراب کرکٹ نہیں کھیل سکتے۔ آپ بری گیندیں نہیں کر سکتے. وہی روایتی فیلڈنگ اور فیلڈنگ میں غلطیاں کر کے آپ آسٹریلیا میں جیتنے کی توقع نہیں رکھ سکتے۔

اس موقع پر انہوں نے ٹیسٹ ٹیم کے کپتان مصباح الحق کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ قومی ٹیم کی مستقل جدوجہد کی ایک بڑی وجہ یہ تھی ٹیم قائدانہ صلاحیتوں سے بالکل عاری تھی، مصباح سے پاکستانی ٹیم کو کوئی تحریک نہیں مل رہی تھی لہٰذا پاکستان میں چیزیں بدلنے کی ضرورت ہے۔مصباح کے مستقبل کے بارے میں سوال پر سابق آسٹریلین بلے باز نے کہا کہ اگر سلیکشن کا اختیار میرے پاس ہوتا تو بطور کپتان مصباح کا دور ختم ہو جاتا لیکن پاکستان میں بہت عجیب و غریب چیزیں ہو جاتیں لہٰذا میں یقین سے کوئی بات نہیں کہہ سکتا۔

Share Button