تازہ ترین

Marquee xml rss feed

قومی اسمبلی میں پارلیمانی سیکرٹریٹ برائے پائیدار ترقیاتی اہداف کے قیام کو ایک سال مکمل ہوگیا،رکن قومی اسمبلی و وزیر مملکت برائے اطلاعات ونشریات وقومی ورثہ ایم این اے ... مزید-وفاقی دارالحکومت کے پولی کلینک اسپتال میں کامیاب آپریشن کے ذریعے 13سالہ لڑکی کی جنس تبدیل ، عطیہ نامی لڑکی کا نام جنس بندلنے کے بعد عدنان رکھ دیا گیا میڈیکل کے لحاظ سے ... مزید-سیالکوٹ ،بھارتی سیکیورٹی فورسز کی سرحدی گائوں پر فائرنگ سے 54 سالہ خاتون شہید رینجرز حکام کے بی ایس ایف سے مذاکرات ،خاتون کی نعش واپس کر دی ، رینجر زحکام نے لو احقین ... مزید-ایف آئی اے نے اسلام آباد سے انسانی اسمگلر گرفتار کر لیا ،ملزم نے شہریوں کو بیرون ملک کا جھانسا دے کر لاکھوں روپے بٹورے-وزیر اعلیٰ پنجاب کاراولپنڈی میں پتنگ بازی اور ہوائی فائرنگ کے واقعات کا سخت نوٹس، اے ایس پی اور ایس ایچ او تھانہ صدر راولپنڈی کو فوری معطل کرنے کا حکم-پانامہ کیس میں سپریم کورٹ کا ہرفیصلہ قبول کریں گے ‘ عدالت کے خلاف نہیں جائیں گے ‘ وزیر اعظم ترکی میں بیٹھ کر دہشت گردی کے خلاف جنگ لڑ رہے ہیں ‘ افغانستان سے فوجی انخلاء ... مزید-پشاو: بس ریپڈ ٹرانزٹ منصوبے پر تعمیراتی کا م کا آغاز کرکیکم سے کم مدت میں مکمل کیا جائے،پرویز خٹک ْمنصوبے کے تینوں پیکیجز کاٹینڈر30 اپریل تک جاری کیا جائے، منصوبے کو ایک ... مزید-پشاور:صوبائی حکومت نے ہر فیصلے میں عام آدمی کو مد نظر رکھنیکی وجہ سیتحریک انصاف پر عوام کا اعتماد روز بروز بڑھتا جارہا ہے، پرویز خٹک تحریک انصاف گزشتہ تین سالوں سے نظام ... مزید-پشاور: مردان میں جاری ترقیاتی سکیموں کو بروقت مکمل کیا جائے،پرویز خٹک تحصیل کاٹلنگ کی عمارت 31مارچ تک مکمل کرکے متعلقہ حکام کے حوالے جبکہ کاٹلنگ میں ریسکیو 1122کے لئے اراضی ... مزید-آپریشن ردالفساد پاکستان میں دہشت گردی اور انتہا پسندی کے تابوت میں آخری کیل ثابت ہو گا،مقررین کا سیمینار سے خطاب

GB News

فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع کیلئے آئینی ترمیم کی جائے گی،وزیراعظم

attempt-to-attack-pm-sharif-convoy-foiled-1438532558-2556-680x360

اسلام آباد(ایجنسیاں،مانیٹرنگ ڈیسک)وفاقی حکومت نے ملٹری کورٹس کی توسیع کے لئے آئینی ترمیم پر مشاورت شروع کر دی ہے۔وزیراعظم میاں محمد نواز شریف کی زیر صدارت اعلی سطح اجلاس میں اتفاق کیا گیا کہ ملٹری کورٹس نے آپریشن ضرب عضب کے نتائج کو مستحکم کرنے میں اہم کردارادا کیا ہے۔وزیر اعظم نواز شریف کی زیر صدارت اہم امور پر اعلی سطح کا اجلاس ہوا، جس میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ، ڈی جی آئی ایس آئی نوید مختار ،وفاقی وزرا اسحاق ڈار، چوہدری نثار، مشیر سلامتی ناصر جنجوعہ،سرتاج عزیز ،معاون خصوصی طارق فاطمی، سیکریٹری خارجہ اعزاز چوہدری اور دیگر حکام نے شرکت کی۔اجلاس کے شرکا نے اس بات پر اتفاق کیا کہ ملٹری کورٹس نے دہشت گردی کے انتہا پسندی کے خاتمے میں بہت اہم کردار ادا کیا ہے، فوجی عدالتوں نے آپریشن ضرب عضب کے نتائج کو مستحکم کرنے میں بھی اہم کردار ادا کیا۔اجلاس میں طے کیا گیا ہے کہ پارلیمنٹ میں موجود تمام سیاسی جماعتوں کے ساتھ ملٹری کورٹس کی مدت میں توسیع کے متعلق وسیع تر اتفاق پیدا کیا جائے گا۔اجلاس میں ملکی و علاقائی سلامتی کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا جبکہ دہشت گردی کے خلاف جاری آپریشن کے نتائج مستحکم بنانے کے امور کا جائزہ لیا گیا۔شرکا نے اس عزم کا اظہار کیا کہ دہشت گردی کے خلاف پاکستان کی پالیسی واضح طور پر زیرو ٹالرنس کی ہے، دہشت گردی اور انتہا پسندی کا خاتمہ ملکی امن کیلیے ضرورری ہے، قومی پالیسی کے اہداف کے حصول کیلیے کوششوں کو تیز کیا جائے گا۔اجلاس میں اتفاق کیا گیا کہ پاکستان خطے میں امن و استحکام کیلیے کوششیں جاری رکھے گا، اندرونی سلامتی اور امن کے استحکام کیلیے تمام کوششیں کی جائیں گی۔حکومت نے فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع کے لئے اپوزیشن جماعتوں سے مشاورت کا فیصلہ کر لیا ، وزیر خزانہ اسحاق ڈار کی زیر قیادت حکومتی کمیٹی اپوزیشن جماعتوں سے رابطے کرکے معاملہ پر اتفاق رائے حاصل کرنے کی کوشش کرے گی اگر فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع پر سیاسی اتفاق رائے ہو سکا تو حکومت پارلیمنٹ سے منظوری لے گی ، حکومتی کمیٹی میں وزیر قانون زاہد حامد ، وزیر ریلوے سعد رفیق اور وزیر مملکت برائے انوشہ رحمان، وزیر برائے دفاعی پیداوار رانا تنویر شامل ہونگے ، کمیٹی تحریک انصاف ، پیپلز پارٹی ، جماعت اسلامی ، ق لیگ ، جے یو آئی ، ایم کیو ایم سمیت دیگر جماعتوں کے پارلیمانی قائدین سے ملاقاتیں کرکے فوجی عدالتوں میں توسیع پر تبادلہ خیال کرے گی اگر سیاسی جماعتوں نے فوجی عدالتوں کی توسیع پر اتفاق کیا تو پھر حکومت اس معاملے پر پارلیمنٹ کی منظوری لے گی ۔ اتفاق رائے کی صورت میں چھ ماہ یا ایک سال کے لئے فوجی عدالتوں میں توسیع کی جا سکتی ہے ۔ وزیر اعظم محمد نواز شریف نے کہا ہے کہ فوجی عدالتوں کے قیام میں توسع کیلئے سیاسی جماعتوں سے مشاورت شروع کر دی ہے ، فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع کیلئے آئینی ترمیم کی جائے گی۔دہشتگردی اور انتہا پسندی کے خلاف پاکستان کی زیرو ٹالرنس پالیسی ہے۔ وزیر اعظم نے کہا کہ وفاق نے فوجی عدالتوں کے قیام میں توسع کیلئے مشاورت شروع کر دی ہے فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع کیلئے آئینی ترمیم کی جائے گی انسداد دہشت گردی کی کارروائیوں کے ذریعے کی جانے والی کامیابیوں کو مضبوط بنایا جائے گا شرکا نے پاکستان کو اندرونی امن کے حصول کے لئے اپنی کوششوں کو جاری رکھنے اورامن کیلئے بھرپور کردار ادا کرنے پر اتفاق کیا۔

Share Button