تازہ ترین

Marquee xml rss feed

سابق وزیراعظم نوازشریف کل نیب میں تفتیش کے لیے پیش ہونگے، سینئر تجزیہ کار کادعویٰ-حکومت کے گزشتہ چار سال کے دوران موثر اقدامات کے تحت ریلوے کی آمدنی میں نمایاں اضافہ ہوا ہی,ریلوے اراضی کی 95 فیصد ڈیجیٹلائزیشن مکمل کرلی ہے‘ قبضہ مافیا کے خلاف کارروائی ... مزید-ایف آئی اے اور پی ٹی اے نے عائشہ گلالئی کے عمران خان پر الزامات کی فرانزک تحقیقات کو ناممکن قرار دے دیا-بدعنوانی کی روک تھام اور لوٹی گئی رقم کی وصولی نیب کی اولین ترجیح ہے، چیئرمین نیب قمر زمان چوہدری-معیشت مضبوط نہ ہو تو ایٹم بم بھی آزادی کی حفاظت نہیں کر سکتے، سیاسی استحکام معیشت کی مضبوطی کا واحد راستہ ہے دوسروں کی جنگیں لڑتے لڑتے ہم نے اپنے معاشرہ کو کھوکھلا ... مزید-مولانا فضل الرحمان کا آرٹیکل 62,63کو آئین سے نکالنے کی حمایت سے انکار صادق اور امین کی بنیادی شقوں کو نکالنا آئین سے مذاق ہے-احتساب عدالت ، سابق وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف کے خلاف رینٹل پاور کرپشن کیس میں دلائل مکمل ، فیصلہ محفوظ-عمران خان کا خیبرپختونخواہ کے خوبصورت علاقے کوہستان کا دورہ تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل، تحریک انصاف کے سربراہ نے دنیا بھر کے سیاحوں کو پاکستان آنے کی دعوت دے دی-میاں صاحب اپنی عقلمندی کی وجہ سے آج یہ دن دیکھ رہے ہیں، خورشید شاہ ملک میں کوئی سیاسی بحران نہیں صرف ایک جماعت میں بحران ہے، چیئرمین نیب کی تقرری کیلئے بطور اپوزیشن لیڈر ... مزید-تاثردرست نہیں کہ فوج کے تمام سربراہوں کے ساتھ مخالفت رہی، محمد نوازشریف قانون کی حکمرانی پریقین رکھتاہوں،کبھی بھی اداروں کے ساتھ ٹکراؤ کی پالیسی نہیں اپنائی،سپریم ... مزید

GB News

فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع کیلئے آئینی ترمیم کی جائے گی،وزیراعظم

Share Button

اسلام آباد(ایجنسیاں،مانیٹرنگ ڈیسک)وفاقی حکومت نے ملٹری کورٹس کی توسیع کے لئے آئینی ترمیم پر مشاورت شروع کر دی ہے۔وزیراعظم میاں محمد نواز شریف کی زیر صدارت اعلی سطح اجلاس میں اتفاق کیا گیا کہ ملٹری کورٹس نے آپریشن ضرب عضب کے نتائج کو مستحکم کرنے میں اہم کردارادا کیا ہے۔وزیر اعظم نواز شریف کی زیر صدارت اہم امور پر اعلی سطح کا اجلاس ہوا، جس میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ، ڈی جی آئی ایس آئی نوید مختار ،وفاقی وزرا اسحاق ڈار، چوہدری نثار، مشیر سلامتی ناصر جنجوعہ،سرتاج عزیز ،معاون خصوصی طارق فاطمی، سیکریٹری خارجہ اعزاز چوہدری اور دیگر حکام نے شرکت کی۔اجلاس کے شرکا نے اس بات پر اتفاق کیا کہ ملٹری کورٹس نے دہشت گردی کے انتہا پسندی کے خاتمے میں بہت اہم کردار ادا کیا ہے، فوجی عدالتوں نے آپریشن ضرب عضب کے نتائج کو مستحکم کرنے میں بھی اہم کردار ادا کیا۔اجلاس میں طے کیا گیا ہے کہ پارلیمنٹ میں موجود تمام سیاسی جماعتوں کے ساتھ ملٹری کورٹس کی مدت میں توسیع کے متعلق وسیع تر اتفاق پیدا کیا جائے گا۔اجلاس میں ملکی و علاقائی سلامتی کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا جبکہ دہشت گردی کے خلاف جاری آپریشن کے نتائج مستحکم بنانے کے امور کا جائزہ لیا گیا۔شرکا نے اس عزم کا اظہار کیا کہ دہشت گردی کے خلاف پاکستان کی پالیسی واضح طور پر زیرو ٹالرنس کی ہے، دہشت گردی اور انتہا پسندی کا خاتمہ ملکی امن کیلیے ضرورری ہے، قومی پالیسی کے اہداف کے حصول کیلیے کوششوں کو تیز کیا جائے گا۔اجلاس میں اتفاق کیا گیا کہ پاکستان خطے میں امن و استحکام کیلیے کوششیں جاری رکھے گا، اندرونی سلامتی اور امن کے استحکام کیلیے تمام کوششیں کی جائیں گی۔حکومت نے فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع کے لئے اپوزیشن جماعتوں سے مشاورت کا فیصلہ کر لیا ، وزیر خزانہ اسحاق ڈار کی زیر قیادت حکومتی کمیٹی اپوزیشن جماعتوں سے رابطے کرکے معاملہ پر اتفاق رائے حاصل کرنے کی کوشش کرے گی اگر فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع پر سیاسی اتفاق رائے ہو سکا تو حکومت پارلیمنٹ سے منظوری لے گی ، حکومتی کمیٹی میں وزیر قانون زاہد حامد ، وزیر ریلوے سعد رفیق اور وزیر مملکت برائے انوشہ رحمان، وزیر برائے دفاعی پیداوار رانا تنویر شامل ہونگے ، کمیٹی تحریک انصاف ، پیپلز پارٹی ، جماعت اسلامی ، ق لیگ ، جے یو آئی ، ایم کیو ایم سمیت دیگر جماعتوں کے پارلیمانی قائدین سے ملاقاتیں کرکے فوجی عدالتوں میں توسیع پر تبادلہ خیال کرے گی اگر سیاسی جماعتوں نے فوجی عدالتوں کی توسیع پر اتفاق کیا تو پھر حکومت اس معاملے پر پارلیمنٹ کی منظوری لے گی ۔ اتفاق رائے کی صورت میں چھ ماہ یا ایک سال کے لئے فوجی عدالتوں میں توسیع کی جا سکتی ہے ۔ وزیر اعظم محمد نواز شریف نے کہا ہے کہ فوجی عدالتوں کے قیام میں توسع کیلئے سیاسی جماعتوں سے مشاورت شروع کر دی ہے ، فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع کیلئے آئینی ترمیم کی جائے گی۔دہشتگردی اور انتہا پسندی کے خلاف پاکستان کی زیرو ٹالرنس پالیسی ہے۔ وزیر اعظم نے کہا کہ وفاق نے فوجی عدالتوں کے قیام میں توسع کیلئے مشاورت شروع کر دی ہے فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع کیلئے آئینی ترمیم کی جائے گی انسداد دہشت گردی کی کارروائیوں کے ذریعے کی جانے والی کامیابیوں کو مضبوط بنایا جائے گا شرکا نے پاکستان کو اندرونی امن کے حصول کے لئے اپنی کوششوں کو جاری رکھنے اورامن کیلئے بھرپور کردار ادا کرنے پر اتفاق کیا۔

Share Button