تازہ ترین

Marquee xml rss feed

حب کول فائر پاور پلانٹ اگست 2019ء میں پوری طرح چالو ہو جائے گا ،چیئرمین تعمیراتی کمپنی پاکستانی قومی گرڈ میں سالانہ 9بلین کلوواٹ بجلی شامل کرے گا تعمیر کے دوران مقامی ... مزید-یوم پاکستان ; آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے میڈیا کا شکریہ ادا کردیا-فیصل موورز نے لاہور تا اسلام آباد پریمئیر بس سروس شروع کرنے کا فیصلہ کر لیا-پانامہ کا فیصلہ مارچ کے آخری دنوں میں آجائے گا۔ ڈاکٹر شاہد مسعود-مینار پاکستان میں پنجاب پولیس کا شہری سے ناروا سلوک، پنجاب حکومت نے نوٹس لے لیا پولیس حکام کو اس طرح عوام سے بد تمیزی کی اجازت نہیں دی جا سکتی۔ ترجمان پنجاب حکومت-پانامہ کا فیصلہ انشااللہ اگلے ہفتے آ جائے گا۔ عمران خان سپریم کورٹ کے فیصلے سے ایک نیا دور شروع ہو گا۔ ہمیں نہیں معلوم کہ کیا فیصلہ ہوا ہے۔ عمران خان کی لاہور آمد پر میڈیا ... مزید-ملک میں سیاسی فسادی زیادہ ہیںجو ملک کی ترقی کوہضم نہیں کر پا ررہے ، عابد شیر علی وہ چا ہتے ہیں کہ ملک میں افرا تفری پھیلی رہے اور امن نہ رہے، عمران خان اور اُسکے حواریوں ... مزید-پاکستان اور سری لنکا مل کر سارک کے اہداف حاصل کرسکتے ہیں،وزیراعظم-پاکستان افغانستان بارے ماسکو میں ہونے والی کانفرنس میں شرکت کر یگا ،ترجمان دفتر خارجہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کا سلسلہ بتدریج جاری ،بھارت کی مقبو ضہ کشمیر میں ... مزید-وزیراعظم نے گھوڑا گلی میں فاریسٹ سروسز اکیڈمی کا افتتاح کردیا فاریسٹ سروسز اکیڈمی گرین پاکستان پروگرام کے تحت قائم کی گئی ‘ اکیڈمی کے ذریعے محکمہ جنگلات کے افسران اور ... مزید

GB News

فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع کیلئے آئینی ترمیم کی جائے گی،وزیراعظم

attempt-to-attack-pm-sharif-convoy-foiled-1438532558-2556-680x360

اسلام آباد(ایجنسیاں،مانیٹرنگ ڈیسک)وفاقی حکومت نے ملٹری کورٹس کی توسیع کے لئے آئینی ترمیم پر مشاورت شروع کر دی ہے۔وزیراعظم میاں محمد نواز شریف کی زیر صدارت اعلی سطح اجلاس میں اتفاق کیا گیا کہ ملٹری کورٹس نے آپریشن ضرب عضب کے نتائج کو مستحکم کرنے میں اہم کردارادا کیا ہے۔وزیر اعظم نواز شریف کی زیر صدارت اہم امور پر اعلی سطح کا اجلاس ہوا، جس میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ، ڈی جی آئی ایس آئی نوید مختار ،وفاقی وزرا اسحاق ڈار، چوہدری نثار، مشیر سلامتی ناصر جنجوعہ،سرتاج عزیز ،معاون خصوصی طارق فاطمی، سیکریٹری خارجہ اعزاز چوہدری اور دیگر حکام نے شرکت کی۔اجلاس کے شرکا نے اس بات پر اتفاق کیا کہ ملٹری کورٹس نے دہشت گردی کے انتہا پسندی کے خاتمے میں بہت اہم کردار ادا کیا ہے، فوجی عدالتوں نے آپریشن ضرب عضب کے نتائج کو مستحکم کرنے میں بھی اہم کردار ادا کیا۔اجلاس میں طے کیا گیا ہے کہ پارلیمنٹ میں موجود تمام سیاسی جماعتوں کے ساتھ ملٹری کورٹس کی مدت میں توسیع کے متعلق وسیع تر اتفاق پیدا کیا جائے گا۔اجلاس میں ملکی و علاقائی سلامتی کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا جبکہ دہشت گردی کے خلاف جاری آپریشن کے نتائج مستحکم بنانے کے امور کا جائزہ لیا گیا۔شرکا نے اس عزم کا اظہار کیا کہ دہشت گردی کے خلاف پاکستان کی پالیسی واضح طور پر زیرو ٹالرنس کی ہے، دہشت گردی اور انتہا پسندی کا خاتمہ ملکی امن کیلیے ضرورری ہے، قومی پالیسی کے اہداف کے حصول کیلیے کوششوں کو تیز کیا جائے گا۔اجلاس میں اتفاق کیا گیا کہ پاکستان خطے میں امن و استحکام کیلیے کوششیں جاری رکھے گا، اندرونی سلامتی اور امن کے استحکام کیلیے تمام کوششیں کی جائیں گی۔حکومت نے فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع کے لئے اپوزیشن جماعتوں سے مشاورت کا فیصلہ کر لیا ، وزیر خزانہ اسحاق ڈار کی زیر قیادت حکومتی کمیٹی اپوزیشن جماعتوں سے رابطے کرکے معاملہ پر اتفاق رائے حاصل کرنے کی کوشش کرے گی اگر فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع پر سیاسی اتفاق رائے ہو سکا تو حکومت پارلیمنٹ سے منظوری لے گی ، حکومتی کمیٹی میں وزیر قانون زاہد حامد ، وزیر ریلوے سعد رفیق اور وزیر مملکت برائے انوشہ رحمان، وزیر برائے دفاعی پیداوار رانا تنویر شامل ہونگے ، کمیٹی تحریک انصاف ، پیپلز پارٹی ، جماعت اسلامی ، ق لیگ ، جے یو آئی ، ایم کیو ایم سمیت دیگر جماعتوں کے پارلیمانی قائدین سے ملاقاتیں کرکے فوجی عدالتوں میں توسیع پر تبادلہ خیال کرے گی اگر سیاسی جماعتوں نے فوجی عدالتوں کی توسیع پر اتفاق کیا تو پھر حکومت اس معاملے پر پارلیمنٹ کی منظوری لے گی ۔ اتفاق رائے کی صورت میں چھ ماہ یا ایک سال کے لئے فوجی عدالتوں میں توسیع کی جا سکتی ہے ۔ وزیر اعظم محمد نواز شریف نے کہا ہے کہ فوجی عدالتوں کے قیام میں توسع کیلئے سیاسی جماعتوں سے مشاورت شروع کر دی ہے ، فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع کیلئے آئینی ترمیم کی جائے گی۔دہشتگردی اور انتہا پسندی کے خلاف پاکستان کی زیرو ٹالرنس پالیسی ہے۔ وزیر اعظم نے کہا کہ وفاق نے فوجی عدالتوں کے قیام میں توسع کیلئے مشاورت شروع کر دی ہے فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع کیلئے آئینی ترمیم کی جائے گی انسداد دہشت گردی کی کارروائیوں کے ذریعے کی جانے والی کامیابیوں کو مضبوط بنایا جائے گا شرکا نے پاکستان کو اندرونی امن کے حصول کے لئے اپنی کوششوں کو جاری رکھنے اورامن کیلئے بھرپور کردار ادا کرنے پر اتفاق کیا۔

Share Button