تازہ ترین

Marquee xml rss feed

قومی احتساب بیورو میں افسران کی خلاف ضابطہ تقرریوں کا معاملہ، نیب لاہور کے چار سینئر افسران نے استعفیٰ دیدیا-سابق ادوار میں کیشنگی کے نام پر کروڑوں کی کرپشن کی گئی،میر غلام دستگیر بادینی عوام کو مصنوعی طورپر پسماندہ رکھنے والوں کے مکروہ چہرے آشکارہوچکے ہیں،رکن بلوچستان اسمبلی-آئندہ الیکشن میں پیپلزپارٹی بھرپور کامیابی حاصل کرکے حکومت بنائے گی،ڈاکٹرسیدہ نفیسہ شاہ-پیپلزپارٹی کے رہنما سینیٹر عاجز دھامرہ کا شیخوپورہ کے قریب ریلوے حادثے پر اظہار افسوس-ماہ رجب کی رویت کا شرعی فیصلہ کرنے کے لیے مرکزی رویتِ ہلال کمیٹی کا اجلاس کل ہوگا، مفتی منیب الرحمن-مسلم لیگ(ن)آئندہ الیکشن میں مخالف جماعتوں کاصفایاکردے گی،شہبازشریف پیپلزپارٹی پہلے کراچی کاکچراصاف کرے پھرپنجاب کی بات کرے،میٹروکوجنگلابس کہنے والوں نے فوائددیکھے ... مزید-کراچی ،ناظم آباد میں بس پر فائرنگ پولیس اہلکار نے کی ، معمہ حل پولیس اہلکار واقعے کے بعد جائے حادثہ سے غائب ، شک پڑنے پر حراست میں لے لیا گیا ، مقدمہ درج کر کے تفتیش کا ... مزید-اوور لوڈنگ یا چھتوں پر مسافروں کو سوار کرنے والی بسوں، وینز یا کوچز کے خلاف قانونی کارروائی کو یقینی بنایا جائے،آئی جی سندھ-امتحانات کے دوران لوڈشیڈنگ نہ کی جائے،جام مہتاب حسین ڈھر-طلبا ملکی ترقی میں بڑھ چڑھ کر حصہ ڈالیں،بلاول بھٹو

GB News

سینٹ،اپوزیشن جماعتوں کاوزیرداخلہ کے ریمارکس پرواک آئوٹ

parliment

اسلام آباد(آئی این پی ) اپوزیشن جماعتیں دہشت گردی اور فرقہ وارایت کے بارے میں وزیرداخلہ چودھری نثار علی خان کے مبینہ قابل اعتراض ریمارکس کے خلاف سینٹ سے واک آئوٹ کر گئیں۔ منگل کو ایوان بالا میں وزیرداخلہ چودھری نثار علی خان پر ان کے تفصیلی بیان کے بعد اپوزیشن لیڈر چودھری اعتزاز احسن نے ان پر بلاواسطہ طور پر فرقہ وارانہ و کالعدم تنظیموں سے واسطہ تعلق کا الزام عائد کیا جس پر نکتہ وضاحت پر چودھری نثار علی خان نے کہا کہ ان کے کہنے سے کوئی بات سچ تو نہیں ہو سکتی، ان کی عادت ہے کہ یہ ہر چیز کو حکومت کے گلے میں ڈالنے کی کوشش کرتے ہیں ،اپوزیشن سچ بھی بولے جہاں تک کالعدم تنظیمو ں کا معاملہ ہے تو دہشت گردی اور فرقہ واریت کو الگ الگ دیکھا جائے۔ انہوں نے کہا کہ میں نے کہا تھا کہ ضرب عضب آپریشن کی کامیابی سب کی کامیابی ہے اور اس حوالے سے ریکاردڈ ایوان میں پیش کیا تھا ۔اگر حقائق کے منافی ہوا تو میں ایوان میں آکر معذرت کر لوں گا اور اگر یہ غلط ثابت ہوں اور معذرت نہ کر سکیں تو کم ازکم دل ہی دل میں شرمندگی محسوس کریں۔ جب تو کوئی اعتراض نہیں کیا گیا۔ وزیرداخلہ کے اس بیان کے بعد چیئرمین سینٹ نماز مغرب کے لئے وقفے کا اعلان کرنے لگے تو اپوزیشن لیڈر چودھری اعتزاز احسن نے وزیرداخلہ کے بعض ریمارکس پر اعتراض کیا اورواک آئوٹ کا اعلان کیا جس پر اپوزیشن اراکین ایوان سے باہر چلے گئے ۔ چیئرمین سینٹ نے قائد ایوان کو ہدایت کی کہ وہ انہیں منا کر لے آئیں۔

Share Button