تازہ ترین

Marquee xml rss feed

قومی احتساب بیورو میں افسران کی خلاف ضابطہ تقرریوں کا معاملہ، نیب لاہور کے چار سینئر افسران نے استعفیٰ دیدیا-سابق ادوار میں کیشنگی کے نام پر کروڑوں کی کرپشن کی گئی،میر غلام دستگیر بادینی عوام کو مصنوعی طورپر پسماندہ رکھنے والوں کے مکروہ چہرے آشکارہوچکے ہیں،رکن بلوچستان اسمبلی-آئندہ الیکشن میں پیپلزپارٹی بھرپور کامیابی حاصل کرکے حکومت بنائے گی،ڈاکٹرسیدہ نفیسہ شاہ-پیپلزپارٹی کے رہنما سینیٹر عاجز دھامرہ کا شیخوپورہ کے قریب ریلوے حادثے پر اظہار افسوس-ماہ رجب کی رویت کا شرعی فیصلہ کرنے کے لیے مرکزی رویتِ ہلال کمیٹی کا اجلاس کل ہوگا، مفتی منیب الرحمن-مسلم لیگ(ن)آئندہ الیکشن میں مخالف جماعتوں کاصفایاکردے گی،شہبازشریف پیپلزپارٹی پہلے کراچی کاکچراصاف کرے پھرپنجاب کی بات کرے،میٹروکوجنگلابس کہنے والوں نے فوائددیکھے ... مزید-کراچی ،ناظم آباد میں بس پر فائرنگ پولیس اہلکار نے کی ، معمہ حل پولیس اہلکار واقعے کے بعد جائے حادثہ سے غائب ، شک پڑنے پر حراست میں لے لیا گیا ، مقدمہ درج کر کے تفتیش کا ... مزید-اوور لوڈنگ یا چھتوں پر مسافروں کو سوار کرنے والی بسوں، وینز یا کوچز کے خلاف قانونی کارروائی کو یقینی بنایا جائے،آئی جی سندھ-امتحانات کے دوران لوڈشیڈنگ نہ کی جائے،جام مہتاب حسین ڈھر-طلبا ملکی ترقی میں بڑھ چڑھ کر حصہ ڈالیں،بلاول بھٹو

GB News

وفاقی دارالحکومت اور گرد و نواح سے چار افراد کے اغواء ہونے کے واقعات کی تفتیش جاری ہے’ وزیرداخلہ

ch-nisar-ali-khan-peace-talks1-600x360

اسلام آباد (آئی این پی ) وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے واضح کیا ہے کہ موجودہ حکومت کی کسی کو لاپتہ کرنے کی پالیسی ہے نہ ایسی کوئی بات برداشت کی جائے گی’ بہت سی خرابیاں اس دور کی ہیں جب پالیسیاں کہیں اور بنتی تھیں پیپلز پارٹی کے حالیہ دور میں 2009.10میں دہشت گردی کے روزانہ پانچ سے چھ واقعات ہو رہے تھے’ سیاسی تقاریر اور پوائنٹ سکورنگ کرتے ہوئے وفاق اور صوبوں کے دائرہ کار کو مدنظر رکھنا چاہیے، وفاقی دارالحکومت اور گرد و نواح سے چار افراد کے اغواء ہونے کے واقعات کی تفتیش جاری ہے’ کچھ شواہد سامنے آئے ہیں جنہیں قبل از وقت افشاں کرنے سے تفتیش پر اثر پڑے گا’ پنجاب حکومت بھی ان واقعات کی تحقیقات کر رہی ہے’ تفتیش کو منطقی انجام تک پہنچایا جائے گا’ پہلی ترجیح ان افراد کی بحفاظت واپسی ہے’ 11 سال بعد دہشتگردی کے سب سے کم واقعات 2016ء میں ہوئے ہیں’ انسداد دہشتگردی اور سیکیورٹی سمیت مختلف معاملات پر وزارت داخلہ میں 142 سے زائد اجلاس ہوئے جبکہ وزیراعظم ہائوس میں 44 اجلاس ہوئے’ دنیا بھر میں دہشتگردی بڑھ رہی ہے جبکہ پاکستان میں کم ہو رہی ہے’ یہ سب کی مشترکہ کاوشوں کا نتیجہ ہے’ میرے بارے میں بات کرنے والوں کو جواب سننے کے لئے تیار رہنا چاہیے ،سینیٹ کا اپنا وقار ہے اس سے ہمیں سیکھنے کو ملتا تھا ۔ منگل کو ایوان بالا کے اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے کہا کہ حکومتیں بنتی رہتی ہیں’ کسی نے ہمیشہ حکومت میں نہیں رہنا’ اہم ایشوز پر سیاست اور پارٹی وابستگی کو ایک طرف رکھ کر بات کرنی چاہیے۔ ماضی میں یہی روایت رہی ہے۔ قومی اسمبلی ارکان سینٹ آکر استفادہ کرتے تھے۔ یہاں کی گفتگو سے سیکھتے تھے۔ قومی اسمبلی اور سینٹ دونوں جمہوری ایوان ہیں لیکن اس ایوان کی اپنی روایات ہیں۔ موجودہ چیئرمین نے سینٹ کے مقصد کو صحیح کرنے میں بہت بڑا کردار ادا کیا ہے۔ اگرچہ اب بھی بہت بڑی گنجائش ہے۔ جس قومی اسمبلی کے سپیکر یا چیئرمین سینٹ کو اپوزیشن داد دے وہ قابل ستائش ہیں اور اس عہدے کے لئے زیادہ موزوں ہے۔ انہوں نے بتایا کہ گزشتہ دنوں اغواء کے جو واقعات ہوئے ان میں ایک واقعہ اسلام آباد میں پیش آیا جس میں ایک شخص کو اغواء کیا گیا جبکہ دو واقعات پنجاب میں ہوئے جن میں تین افراد کو اغواء کیا گیا۔ پنجاب حکومت سے بھی رابطہ کرکے معلومات حاصل کی ہیں۔

Share Button