تازہ ترین

Marquee xml rss feed

خادم حسین رضوی کا دھرنا ختم نہ کرنے کا اعلان کردیا-پی ٹی ٓئی کی مشکلات میں اضافہ، باغی رہنماوں نے خاموشی سے بڑی چال چل دی-اسحاق ڈار وطن واپس نہیں آرہے ،معاملات جوں کے توں پڑے ہیں اسلئے ملک کو فل ٹائم وزیرخزانہ کی ضرورت ہے، ایم کیوایم پاکستان اور پی ایس پی کا اتحاد ٹوٹتے ہی دونوں جماعتوں ... مزید-شہباز شریف اور چوہدری نثار کی چھٹی جبکہ شاہد خاقان اور نواز شریف میں دوریاں بڑھنے کا وقت قریب آ گیا ہے ختم نبوت کا مسئلہ اٹھا کیوں، حکومت کو راجہ ظفر الحق کی رپورٹ کو فی ... مزید-دنیا کے مشہور ترین یو سی براوزر کی گوگل پلے اسٹور سے چھٹی-سی پیک سے صوبہ بلوچستان کو سب سے زیادہ ترقی اور فائدہ ہو گا، توانائی انفراسٹرکچر کی فراہمی سے بلوچستان میں معاشی اور سماجی انقلاب آئے گا،نوجوانوں کو روزگار کے بھرپورمواقع ... مزید-پاکستان اور بھارت کے ڈی جی ملٹری آپریشنز کے مابین غیر اعلانیہ ہاٹ لائن رابطہ بھارتی فوج کی لائن آف کنٹرول کی مسلسل خلاف ورزیوں ، بے گناہ شہریوں کو نشانہ بنانے کا معاملہ ... مزید-مریم اورنگزیب کی سینئر صحافی مظہر اقبال کی ہمشیرہ اورسینئر صحافی ذوالفقار بیگ کے چچا کے انتقال پر تعزیت-شیخ رشید کی جانب سے عمران خان کو جمائما سے دوبارہ شادی کرنے کا مشورہ-دھرنا قائدین اور حکومت کے درمیان مذاکرات میں پیش رفت ، تحریک لبیک کے رہنمائوں نے شوریٰ سے مشاورت کیلئے حکومت سے وقت مانگ لیا ، حکومت کا دھرنے کے رہنمائوں کے خلاف مقدمات ... مزید

GB News

وفاقی دارالحکومت اور گرد و نواح سے چار افراد کے اغواء ہونے کے واقعات کی تفتیش جاری ہے’ وزیرداخلہ

Share Button

اسلام آباد (آئی این پی ) وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے واضح کیا ہے کہ موجودہ حکومت کی کسی کو لاپتہ کرنے کی پالیسی ہے نہ ایسی کوئی بات برداشت کی جائے گی’ بہت سی خرابیاں اس دور کی ہیں جب پالیسیاں کہیں اور بنتی تھیں پیپلز پارٹی کے حالیہ دور میں 2009.10میں دہشت گردی کے روزانہ پانچ سے چھ واقعات ہو رہے تھے’ سیاسی تقاریر اور پوائنٹ سکورنگ کرتے ہوئے وفاق اور صوبوں کے دائرہ کار کو مدنظر رکھنا چاہیے، وفاقی دارالحکومت اور گرد و نواح سے چار افراد کے اغواء ہونے کے واقعات کی تفتیش جاری ہے’ کچھ شواہد سامنے آئے ہیں جنہیں قبل از وقت افشاں کرنے سے تفتیش پر اثر پڑے گا’ پنجاب حکومت بھی ان واقعات کی تحقیقات کر رہی ہے’ تفتیش کو منطقی انجام تک پہنچایا جائے گا’ پہلی ترجیح ان افراد کی بحفاظت واپسی ہے’ 11 سال بعد دہشتگردی کے سب سے کم واقعات 2016ء میں ہوئے ہیں’ انسداد دہشتگردی اور سیکیورٹی سمیت مختلف معاملات پر وزارت داخلہ میں 142 سے زائد اجلاس ہوئے جبکہ وزیراعظم ہائوس میں 44 اجلاس ہوئے’ دنیا بھر میں دہشتگردی بڑھ رہی ہے جبکہ پاکستان میں کم ہو رہی ہے’ یہ سب کی مشترکہ کاوشوں کا نتیجہ ہے’ میرے بارے میں بات کرنے والوں کو جواب سننے کے لئے تیار رہنا چاہیے ،سینیٹ کا اپنا وقار ہے اس سے ہمیں سیکھنے کو ملتا تھا ۔ منگل کو ایوان بالا کے اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے کہا کہ حکومتیں بنتی رہتی ہیں’ کسی نے ہمیشہ حکومت میں نہیں رہنا’ اہم ایشوز پر سیاست اور پارٹی وابستگی کو ایک طرف رکھ کر بات کرنی چاہیے۔ ماضی میں یہی روایت رہی ہے۔ قومی اسمبلی ارکان سینٹ آکر استفادہ کرتے تھے۔ یہاں کی گفتگو سے سیکھتے تھے۔ قومی اسمبلی اور سینٹ دونوں جمہوری ایوان ہیں لیکن اس ایوان کی اپنی روایات ہیں۔ موجودہ چیئرمین نے سینٹ کے مقصد کو صحیح کرنے میں بہت بڑا کردار ادا کیا ہے۔ اگرچہ اب بھی بہت بڑی گنجائش ہے۔ جس قومی اسمبلی کے سپیکر یا چیئرمین سینٹ کو اپوزیشن داد دے وہ قابل ستائش ہیں اور اس عہدے کے لئے زیادہ موزوں ہے۔ انہوں نے بتایا کہ گزشتہ دنوں اغواء کے جو واقعات ہوئے ان میں ایک واقعہ اسلام آباد میں پیش آیا جس میں ایک شخص کو اغواء کیا گیا جبکہ دو واقعات پنجاب میں ہوئے جن میں تین افراد کو اغواء کیا گیا۔ پنجاب حکومت سے بھی رابطہ کرکے معلومات حاصل کی ہیں۔

Facebook Comments
Share Button