تازہ ترین

Marquee xml rss feed

قومی احتساب بیورو میں افسران کی خلاف ضابطہ تقرریوں کا معاملہ، نیب لاہور کے چار سینئر افسران نے استعفیٰ دیدیا-سابق ادوار میں کیشنگی کے نام پر کروڑوں کی کرپشن کی گئی،میر غلام دستگیر بادینی عوام کو مصنوعی طورپر پسماندہ رکھنے والوں کے مکروہ چہرے آشکارہوچکے ہیں،رکن بلوچستان اسمبلی-آئندہ الیکشن میں پیپلزپارٹی بھرپور کامیابی حاصل کرکے حکومت بنائے گی،ڈاکٹرسیدہ نفیسہ شاہ-پیپلزپارٹی کے رہنما سینیٹر عاجز دھامرہ کا شیخوپورہ کے قریب ریلوے حادثے پر اظہار افسوس-ماہ رجب کی رویت کا شرعی فیصلہ کرنے کے لیے مرکزی رویتِ ہلال کمیٹی کا اجلاس کل ہوگا، مفتی منیب الرحمن-مسلم لیگ(ن)آئندہ الیکشن میں مخالف جماعتوں کاصفایاکردے گی،شہبازشریف پیپلزپارٹی پہلے کراچی کاکچراصاف کرے پھرپنجاب کی بات کرے،میٹروکوجنگلابس کہنے والوں نے فوائددیکھے ... مزید-کراچی ،ناظم آباد میں بس پر فائرنگ پولیس اہلکار نے کی ، معمہ حل پولیس اہلکار واقعے کے بعد جائے حادثہ سے غائب ، شک پڑنے پر حراست میں لے لیا گیا ، مقدمہ درج کر کے تفتیش کا ... مزید-اوور لوڈنگ یا چھتوں پر مسافروں کو سوار کرنے والی بسوں، وینز یا کوچز کے خلاف قانونی کارروائی کو یقینی بنایا جائے،آئی جی سندھ-امتحانات کے دوران لوڈشیڈنگ نہ کی جائے،جام مہتاب حسین ڈھر-طلبا ملکی ترقی میں بڑھ چڑھ کر حصہ ڈالیں،بلاول بھٹو

GB News

بجلی دینے کادعویٰ کرنیوالوں نے بجلی ہی غائب کردی،راجہ جلال

raja-jalal

سکردو (چیف رپورٹر ) تحریک انصاف کے چیف آرگنائزر اجہ جلال حسین مقپون اور سکردو کے ڈپٹی آرگنائزر غلام حیدر نے کہاہے کہ سکردو میں 72,72گھنٹے بجلی غائب رہتی ہے لیکن صوبائی وزیر پانی وبجلی جھوٹ پر جھوٹ بول رہے ہیں ہمیں پانی وبجلی کے وزیر کے اوپر بہت ترس آتا ہے کیونکہ وزیر اعلیٰ انہیں لفٹ ہی نہیں دے رہے ہیں حفیط الرحمن کو چاہئے کہ وہ وزیر پانی وبجلی کی بات سنیں اور سکردو میں بجلی کے مسئلے کو حل کرائیں حکومت نے سو دنوں میں بجلی کی لود شیدنگ ختم کرنے کاوعدہ کیا تھا مگر ڈیڑھ سال کے عرصے میں بجلی ہی غائب کر دی صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ سکردو شہر کو لاوارث چھوڑدیا گیاہے واپڈا کے تمام بجلی گھر خراب ہو چکے ہیں لیکن بجلی گھروں کی مرمت کیلئے حکومت ایک پیسہ فراہم نہیں کر رہی ہے اور جھوٹ کا سہارا لے رہی ہے بجلی کے طویل ترین بریک ڈاؤن کے باعث تجارتی مراکز بند ہو رہے ہیں تاجر دیوالیہ ہو رہے ہیں گھریلو مشکلات خطرناک حد تک بڑھ گئی ہیں ایسا لگتا ہے کہ صوبائی حکومت نے سکردو شہر اور مضافاتی علاقوں کو لاوارث چھوڑ دیا ہے انہوں نے کہاکہ سی پیک میں گلگت بلتستان کو نظرانداز کیا جارہاہے ان باتوں میں کوئی حقیقت نہیں ہے کہ ہمارے چار منصوبوں کو سی پیک میں شامل کیا گیا ہے وزیر اعلیٰ بتائیں کہ انہیں چین جا کر سکردو روڈ اور شغرتھنگ پاور پراجیکٹ کو سی پیک میں شامل کرنے کا خیال کیوں نہیںآیا ؟انہوں نے کہاکہ منظم سازش کے تحت بلتستان کو ترقیاتی میدان میں پیچھے دھکیلا جارہاہے منتخب نمائندے پر کشش تنخواہیں اور ٹی اے ڈی اے لے کر مزے کر رہے ہیں ان کے اندر وزیر اعلیٰ حفیظ الرحمن کے سامنے احتجاج کرنے کی کوئی جرأت اور ہمت نہیں ہے بلتستان کے اراکین اسمبلی اور کونسل کی مجرمانہ خاموشی اور بے غیرتی کی وجہ سے ہمارے مسائل سنگین ہو رہے ہیں وفاق میں ایک سال بعد مسلم لیگ ن کی حکومت ختم ہو رہی ہے وفاقی حکومت کے خاتمے کے بعد صوبائی حکومت کو گھاس ڈالنے والا کوئی نہیں ہوگا بلتستان کے منتخب نمائندے وفاق میں مسلم لیگ ن کی حکومت کے خاتمے سے قبل سکردو روڈ کی تعمیر کیلئے حکومت پر دباؤ بڑھائیں ورنہ وفاقی حکومت کے خاتمے کے بعد کچھ نہیں ہوگا پھر افسوس کرنے کا کوئی فائدہ نہیں ہے روڈ کی تعمیر ایک سال کے اندر شروع نہ ہوئی تو سمجھو کہ بلتستان کے عوام کیلئے روڈ خواب بن جائے گا انہوں نے کہاکہ آئینی حیثیت کے تعین کیلئے لیت ولعل سے کام لیا جارہاہے اس مقصد کیلئے جو کمیٹی بنائی گئی تھی وہ کمیٹی غیر فعال ہو گئی ہے عوام آئینی حیثیت کے بارے میں بالکل ناامید ہو گئے ہیں انہوں نے کہاکہ ہر طرف مسائل ہی مسائل ہیں ان کے حل کیلئے حکومت کچھ نہیں کر رہی ہیتحریک انصاف آئینی حقوق کے حصول سکردو روڈ کی تعمیر اور بجلی کے مسئلے کے حل کیلئے بھر پور احتجاجی تحریک شروع کرے گی عوام شرکت کو یقینی بنائیں۔

Share Button