تازہ ترین

Marquee xml rss feed

قومی احتساب بیورو میں افسران کی خلاف ضابطہ تقرریوں کا معاملہ، نیب لاہور کے چار سینئر افسران نے استعفیٰ دیدیا-سابق ادوار میں کیشنگی کے نام پر کروڑوں کی کرپشن کی گئی،میر غلام دستگیر بادینی عوام کو مصنوعی طورپر پسماندہ رکھنے والوں کے مکروہ چہرے آشکارہوچکے ہیں،رکن بلوچستان اسمبلی-آئندہ الیکشن میں پیپلزپارٹی بھرپور کامیابی حاصل کرکے حکومت بنائے گی،ڈاکٹرسیدہ نفیسہ شاہ-پیپلزپارٹی کے رہنما سینیٹر عاجز دھامرہ کا شیخوپورہ کے قریب ریلوے حادثے پر اظہار افسوس-ماہ رجب کی رویت کا شرعی فیصلہ کرنے کے لیے مرکزی رویتِ ہلال کمیٹی کا اجلاس کل ہوگا، مفتی منیب الرحمن-مسلم لیگ(ن)آئندہ الیکشن میں مخالف جماعتوں کاصفایاکردے گی،شہبازشریف پیپلزپارٹی پہلے کراچی کاکچراصاف کرے پھرپنجاب کی بات کرے،میٹروکوجنگلابس کہنے والوں نے فوائددیکھے ... مزید-کراچی ،ناظم آباد میں بس پر فائرنگ پولیس اہلکار نے کی ، معمہ حل پولیس اہلکار واقعے کے بعد جائے حادثہ سے غائب ، شک پڑنے پر حراست میں لے لیا گیا ، مقدمہ درج کر کے تفتیش کا ... مزید-اوور لوڈنگ یا چھتوں پر مسافروں کو سوار کرنے والی بسوں، وینز یا کوچز کے خلاف قانونی کارروائی کو یقینی بنایا جائے،آئی جی سندھ-امتحانات کے دوران لوڈشیڈنگ نہ کی جائے،جام مہتاب حسین ڈھر-طلبا ملکی ترقی میں بڑھ چڑھ کر حصہ ڈالیں،بلاول بھٹو

GB News

شو گر سے بچنا چا ہتے ہیں تو فوراً اپنی یہ ایک عادت تبد یل کر دیں

news-1486093193-4581

اسلام آباد: ذیابیطس ایک ایسا مرض ہے جو متعدد بیماریوں کی جڑ ثابت ہوتا ہے اور آپ کی ایک عادت اس کا خطرہ 50 فیصد تک کم یا بڑھا سکتی ہے۔یہ بات امریکا میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آئی۔اگر تو آپ رات گئے تک جاگنے اور صبح جلد اٹھنے کے عادی ہیں تو اس کو فوری ترک کردیں کیونکہ یہ چیز ذیابیطس ٹائپ ٹو کا خطرہ 45 فیصد تک بڑھا دیتی ہے۔

ویسے تو نیند کی کمی کئی دیگر امراض کا باعث بھی بنتی ہے مگر اس کی وجہ سے ذیابیطس کا خطرہ بہت زیادہ ہوجاتا ہے۔ہاورڈ یونیورسٹی کے ٹی ایچ چن اسکول آف پبلک ہیلتھ کی تحقیق کے دوران ایک لاکھ سے زائد خواتین کی نیند کے اوقات کا جائزہ 2000 سے 2011 تک لیا گیا۔نتائج سے معلوم ہوا کہ سونے میں مشکل یا کم نیند کے جسمانی طور پر اثرات مرتب ہوتے ہیں جیسے تناؤ کا باعث بننے والے ہارمون کی سطح بڑھ جاتی ہے جو کہ انسولین کی حساسیت کا بڑھاتا ہے۔

اسی طرح نیند کی کمی ذہنی تناؤ کا بھی خطرہ بڑھاتی ہے جو کہ بڑھ کر ذیابیطس کی شکل اختیار کرلیتا ہے۔تحقیق میں بتایا گیا کہ چھ گھنٹے یا اس سے کم نیند لینے والے افراد جو خراٹے لینے کے عادی بھی ہو، میں ذیابیطس کا خطرہ 400 فیصد تک بڑھ جاتا ہے یا یوں کہا جائے کہ اس مرض کا شکار ہونا یقینی ہوجاتا ہے۔محققین کا کہنا تھا کہ نیند کا معیار اور وقت ذیابیطس کی روک تھام کے لیے بہت اہمیت رکھتا ہے۔

Share Button