تازہ ترین

Marquee xml rss feed

سابق وزیر اعلیٰ پنجاب چوہدری پرویز الہٰی نے انتخابات کے حوالے سے بڑا اعلان کر دیا سابق وزیر اعلیٰ پنجاب چوہدری پرویز الہٰی نے این اے 65 سے الیکشن لڑنے کا اعلان کردیا-وزیراعظم شاہدخاقان عباسی کا جمرودخیبرایجنسی کامختصردورہ ،گرڈ سٹیشن کاافتتاح کیا-سبیکا شیخ پاکستان کی بیٹی ہے جس کے بچھڑے پر ہر آنکھ غم پر نم ہے ، حلیم عادل شیخ رہنماء پی ٹی آئی-ایم کیو ایم کے لیڈرز کبھی الگ صوبے کی بات کرتے ہیں اور کبھی معافی مانگ لیتے ہیں،وزیراعلیٰ سندھ سندھ ٹوڑنے کی بات کرنے والے آج خود ٹوٹ گئے ہیں، عوام ایم کیو ایم کا اصل ... مزید-خود ساختہ جلاوطنی اختیار کیے ہوئے بلوچ علیحدگی پسند براہمداغ بگٹی نے نواز شریف کی حمایت کردی-بلوچستان سی پیک کا مرکز ہے ،پاکستان کا چین سے گہرا تعلق ہے جو وقت کے ساتھ ساتھ مزید مستحکم اور مضبوط ہورہا ہے، میر عبدالقدوس بزنجو سی پیک کی تکمیل ہمارا مقصد ہے جس سے پورے ... مزید-اورنج لائن پیکیج ٹو پر بھی میٹرو ٹرین آزمائشی طور پر کامیابی سے چلا دی گئی ‘خواجہ احمد حسان تعمیر و ترقی کے سفر اور عام شہریوں کو عزت دینے کی کوششوں میں کسی کو رکاوٹ ... مزید-شہبازشریف کی ورکنگ بائونڈری پر بھارتی فوج کی بلااشتعال فائرنگ کی شدید مذمت ،حوالدار شاہد ،شہری محمد اسلم کی شہادت پر اظہار افسوس بھارت کسی غلط فہمی میں نہ رہے،پوری ... مزید-قائم مقام صدر صادق سنجرانی نے سینیٹ کا اجلاس (کل) سہ پہر تین بجے طلب کرلیا-الیکشن کمیشن نے عام انتخابات کیلئے پولنگ سکیم کا مسودہ ویب سائٹ پر جاری کردیا

GB News

سیکورٹی کاقیام ایک مسلسل عمل ہے

Share Button

آئی جی گلگت بلتستان کیپٹن ظفر اقبال اعوان نے کہا ہے کہ گلگت میں سیکیورٹی کا نظام مربوط بنایا گیا ہے سیکیورٹی اداروں کی کوششوں سے خطہ امن کا گہوارہ بن چکا ہے’امن کو برقرار رکھنے کیلئے تمام سٹیک ہولڈرز کو کردار ادا کرنا ہو گا۔یہ درست ہے کہ امن کے قیام کیلئے کوئی دقیقہ فروگزاشت نہیں رکھا جانا چاہیے کیونکہ ہم حالت جنگ میں ہیں۔ہمیںسب سے پہلے اندرونی طور پر ہر اس سرگرمی کو روکنا ہو گا، جس کے ذریعے انسانی رویہ میں تشدد کا امکان ہو۔ چاہے یہ تشدد سیاسی نوعیت کا ہو مذہبی نوعیت کا یا پھر تعلیمی نوعیت کا، سیکیورٹی کا مطلب ہرگز یہ نہیں کہ آپ بندوق اٹھا کر کھڑے ہو جائیں۔ سیکیورٹی کی ابتدا تو انسانی سوچ سے کی جا سکتی ہے۔ ہر قسم کے ایسے لٹریچر پر کڑی پابندی لگا دینی چاہئے، جس میں نظریاتی تشدد کا پرچار کیا گیا ہو چاہے وہ لٹریچر سیاسی ہو یا مذہبی،عسکری تربیت ریاست کا کام اور سرکاری عسکری اداروں کی ذمہ داری ہے، اگر کوئی عسکری طبیعت کا حامل ہے تو اسے چاہیے کہ وہ اپنی صلاحیتوں کو ملک و قوم کیلئے وقف کر دے نجی عسکری تربیت کے مراکز کے خلاف سخت کارروائی کرکے ایسے ادارے قائم کرنے والوں کے خلاف زبردست قانونی چارہ جوئی کی جائے۔ ریاست کی اولین ذمہ داری ہے کہ وہ ایسے تمام افراد کو اپنی حراست میں لے لے جو پرامن اسلامی تشخص کو خونخوار اور مکروہ تعارف میں بدلنے کی کوشش کریں۔ ہر قسم کی غیر سرکاری عسکری تربیت پر پابندی لگا دی جائے مذہبی عسکریت پسندوں کے جلسے جلوسوں پر پابندی لگا دی جائے اور خلاف ورزی پر گرفتار کرلیا جائے یہی امن کے قیام کا واحد حل ہے۔

Facebook Comments
Share Button