GB News

دہشت گردوں اور ان کے سہولت کاروں کے خلاف حکومت کی پالیسی زیروٹالرنس ہے، وزیراعلیٰ

Share Button

وزیراعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا ہے کہ گلگت بلتستان میں پہلی مرتبہ سرکاری سکولوں میں پڑھنے والے طالب علموں کو بلاتفریق پہلی کلاس تا دہم تک مفت کتابیں فراہم کی جارہی ہیں محکمہ تعلیم بہتری کی جانب گامزن ہے جس کی وجہ سے عوام کا محکمہ تعلیم پر اعتماد بحال ہوا ہے گزشتہ حکومت کے دور میں محکمہ تعلیم تنزلی کا شکار تھا ۔ تعلیم کی اہمیت کے حوالے سے گلگت بلتستان میں آگاہی موجود ہے ہماری ترجیح معیاری تعلیم کی فراہمی کو یقینی بنانا ہے جو بچے مالی وسائل نہ ہونے کی وجہ سے سکول نہیں جاسکتے ان کو مفت تعلیم کی فراہمی یقینی بنائیں گے ۔معیاری تعلیم کو یقینی بنانے کیلئے جو اقدامات لازمی ہے ان پر کام کررہے ہیں حکومت نے 2سال کی مدت میں محکمہ تعلیم میں اصلاحات متعارف کرائے جس کی وجہ سے ادارے کی کارکردگی بہتر ہوئی ہے اور عوام کا اعتماد بحال ہوا ہے جس کی بہتری کیلئے مزید اقدامات کئے جارہے ہیں۔ وزیراعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہاکہ گلگت میں قتل و غارت اور کرپشن کی مثالیں ہوتی تھی 2015 ء کے الیکشن میں گلگت بلتستان کے عوام نے امن اور ترقی کے ایجنڈے کو سپورٹ کیا تمام تعصبات سے بالات ہوکر مسلم لیگ ن کو مینڈیٹ دیا جس کی وجہ سے گلگت بلتستان میں مثالی امن قائم ہوا ہے سکولوں میں مزید بہتری لانے کیلئے ہم سب کو اپنا کردار ادا کرنا ہے خواتین کی تعلیم پر حکومت خصوصی توجہ دی جارہی ہے اس حوالے سے بڑے ہوٹلوں میں سیمینارز کرنے کے بجائے عملی اقدامات کئے جارہے ہیں ہماری کوشش ہے کہ ہر سب ڈویژن کی سطح پر خواتین کیلئے کالج بنایا جائے ۔ گلگت بلتستان کا بچہ سکول میں اچھا اس نعرے کے تحت گلگت بلتستان کے تمام بچوں کو تعلیم کا حق فراہم کرنے کیلئے اقدامات کئے جارہے ہیں۔ جو بچہ سکول نہیں جاتا اور چائلڈ لیبر کرتا ہے اس کی نشاندہی کریں حکومت گلگت بلتستان کی ذمہ داری ہے کہ اس کے مسائل حل کرے اور مفت تعلیم کی فراہمی کو یقینی بنائیں۔پنجاب میں تعلیمی سال اپریل سے شروع ہوتا جس کی وجہ سے کتابوں کی اشاعت میں تاخیر ہوئی ہے آئندہ تعلیمی سال کے شروع میں ہی سرکاری سکولوں کے تمام طالب علموں کو مفت کتابیں فراہم کی جائیں گی۔ ٹیکنیکل ایجوکیشن کا بورڈ بنایا گیا ہے تاکہ گلگت بلتستان میں ہنر مند افراد پیدا کئے جاسکے ہمارا اور دیگر سیاسی جماعتوں کا موازنہ نہیں کیا جاسکتا کیوں کہ سندھ جس کی وجہ سے پاکستان پیپلز پارٹی کو ہر دفعہ اقتدار ملا وہاں پر ایک سڑک تک پکی نہیں ہے عوام کو صاف پینے کا پانی میسر نہیں ہم نے ہمیشہ کارکردگی کی بنیاد پر الیکشن لڑا ہے ملک میں تمام میگا منصوبوں وزیر اعظم پاکستان محمد نواز شریف کے دور میں شروع ہوئے۔ گلگت کو 25 سال لاشوں کا ڈھیر بنایا گیا کسی کو خیال نہیں آیا اب گلگت کی تعمیر و ترقی پر توجہ دے رہے ہیں لیکن افسوس کی بات ہے کہ چند لوگ اپنے سیاسی مقاصد کیلئے اس بات کو ہوا دے رہے ہیں کہ صرف گلگت میں ترقیاتی کام ہورہاہے جبکہ صوبائی حکومت نے بلاتفریق تمام اضلاع بشمول ان اضلاع جن سے مسلم لیگ ن کو مینڈیٹ نہیں ملا ان اضلاع میں بھی میگا ترقیاتی پروجیکٹس کا آغاز کیا ہے کئی سالوں سے مردہ منصوبوں کو مکمل کرایا ہے۔ ان خیالات کا اظہار وزیراعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے گلگت بلتستان کے طالب علموں میں مفت کتابوں کی فراہمی کے حوالے سے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ وزیراعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا کہ آئندہ ڈیڑھ سال کے عرصے میں شہریوں کو بہتر ٹرانسپورٹ کی سہولت فراہم کرنے کیلئے اربن ٹرانسپورٹ کا نظام متعارف کرائیں گے۔گلگت بلتستان کی صوبائی حکومت اور اے کے آر ایس پی کے مابین خواتین کیلئے خودروزگار سکیم کے منصوبے کے معاہدے پر دستخط کئے گئے جس کے تحت صوبائی حکومت 36ملین اور اے کے آر ایس پی 30ملین روپے فراہم کرے گی اس منصوبے کے تحت گلگت بلتستان کے خواتین کو خود روزگار بنانے کیلئے سیبکتھان، اون اور لکڑی کی کشادہ کاری کی خصوصی تربیت دی جائے گی۔وزیراعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے حق حقدار تک کے موضوع پر منعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ سابق حکومتوں کی غلط پالیسیوں کی وجہ سے ملک دہشتگردی کا شکار رہا این جی اوز اور مذہب کے نام پر ملک کو تباہ کرنے والوں نے قوم کے مستقبل پر توجہ نہیں دی۔ قائد عوام اور وزیر اعظم پاکستان محمد نواز شریف کی مدبرانہ قیادت کی وجہ سے ملک سے 70 فیصد سے زیادہ دہشتگردی کا خاتمہ ممکن ہوا جب مسلم لیگ ن کی وفاق میں حکومت بنی تو اس وقت 12 کروڑ سے زائد غیر رجسٹرڈ سم استعمال ہورہے تھے جس کی وجہ سے دہشتگردی کے واقعات رونماہورہے تھے مسلم لیگ ن کے دور حکومت میں سموں کو ریگولیٹ کیا گیا غیر ملکیوں کو 10 ہزار سے زیادہ ڈپلومیٹک پاسپورٹ دیئے گئے دہشتگردی کیلئے رقوم کی فراہمی کو روکنے کیلئے کوئی منصوبہ نہیں بنایا گیا وزیر اعظم پاکستان محمد نواز شریف اور افواج پاکستان نے مل کر دہشتگردی کے اس لعنت کو ملک سے مکمل ختم کرنے کیلئے منصوبے بنائے جس کی وجہ سے دہشتگردی کا خاتمہ ہورہاہے۔وزیراعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہاکہ حکومت کی دہشتگردوی اور ان کے سہولت کاروں کیخلاف زیرو ٹالرنس کی پالیسی ہے صوبے میں فورتھ شیڈول کے نفاذ سے قبل آگاہی مہم چلائی گئی تاکہ ہر ایک کو فورتھ شیڈول کے حوالے سے معلومات ہو جس کی وجہ سے بہت سے لوگ راہ راست پر آئے ۔ تمام اضلاع میں فورتھ شیڈول میں شامل افراد کی کونسلنگ کیلئے اقدامات کئے گئے ہیں حکومتی پالیسیوں کی وجہ سے صوبے میں امن قائم ہواہے اسے برقرار رکھنا ہم سب کی ذمہ داری ہے تمام مذاہب میں صدقات دینے اور صدقات کو حقداروں تک پہنچانے کی تاکید کی گئی ہے ہمارے قائدین نے صرف زبانی دعوے او ربیانات نہیں دیئے بلکہ عملی اقدامات کئے ہیں جس کی وجہ سے امن وامان کی صورتحال میں خاطر خواہ بہتری آئی ہے۔

Facebook Comments
Share Button