تازہ ترین

Marquee xml rss feed

بجٹ2017-18ء:4800ارب روپے کا وفاقی بجٹ قومی اسمبلی میں پیش کردیاگیا ترقیاتی بجٹ کاحجم 1001ارب ،آئندہ مالی سال کیلئے ترقی کاہدف 6فیصداور محصولات کاتخمینہ 5310ارب روپے لگایاگیاہے،جبکہ ... مزید-سپارکو کے جاری اور نئے ترقیاتی منصوبوں کیلئے ایک ارب روپے کی غیرملکی امداد سمیت 3 ارب 50 کروڑ روپے مختص-کسانوں پرتشددہوا،واقعے پرایوان سے واک آؤٹ کرینگے،اپوزیشن لیڈرخورشیدشاہ-وفاقی کابینہ نے آئندہ مالی سال 2017-18ء کی بجٹ اور ٹیکسیشن تجاویز کی منظوری دیدی-وزیر داخلہ سندھ نے گلشن معمار تھانے میں چار بھائیوں کے خلاف درج مقدمے کا نوٹس لے لیا-نیب ہیڈکوارٹرز اور تمام علاقائی بیوروز کی کارکردگی میں نمایاں بہتری آئی ہے گذشتہ تین ماہ کے دوران نیب کے پراسیکیوشن کی مجموعی کارکردگی 79 فیصد رہی چیئرمین نیب قمر زمان ... مزید-کراچی ،نقل کرانے کا الزام، سپلا نے انٹر کے امتحانات کا بائیکاٹ کردیا سپلا کی جانب سے امتحانا ت کا بائیکاٹ کرنے پر انٹر کے پیپرز پر غیر یقینی کی صورتحال پیدا ہوگئی،طلبہ ... مزید-سند ھ ہائیکورٹ،ڈاکٹرعاصم کی جائیداد اور کاروبار سنبھالنے کے لئے پاور آف اٹارنی ان کے بیٹے کو دینے کی درخواست مسترد-یونان سے 33 پاکستانیوں کو ڈی پورٹ ، امیگریشن حکام نے گرفتار کر کے جیل بھجوا دیا ْ33پاکستانی غیر قانونی راستے سے یونان پہنچے تھے ،یورپ جانے کی کوشش میں گرفتار کیا گیا تھا ... مزید-کراچی، مختلف کارروائیوں میں 5ملزمان گرفتار، آوان بم برآمد ڈکیتی مزاحمت پر ایک شخص زخمی ہو گیا ،سرجانی اور بلدیہ سے دو افراد کی لاشیں ملیں

GB News

صحت کے شعبے میں انقلابی اقدامات اٹھائے ہیں،وزیر اعلی

گلگت(سٹاف رپورٹر )وزیر اعلی گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمان نے کہا ہے کہ صحت کے شعبے میں انقلابی اقدامات اٹھائے ہیں 30 فیصد نتائج حاصل کر لئے ہیں 70 فیصد اصلاحات پر کام ہو رہا ہے ۔ 15 اپریل کے دن شہباز شریف ایم آر آئی سنٹر کا افتتاح کریں گے اور سکردو میں جرمن حکومت کے تعاون سے جدید ریجنل بلڈ سنٹر قائم کر یں گے ۔ریجنل بلڈ سنٹر جوٹیال میں شہید امن پیس فائونڈیشن کی طرف سے خون کے عطیات دینے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعلی نے کہا کہ ایک جماعت گلگت بلتستان سمیت ملک بھر میں شہیدوں کے نام پر اقتدار میں آتی ہے اور ویژن اور ایجنڈے کی بجائے اپنے زاتی مفادات کے لئے عوام کا مینڈیٹ استعمال کرتی ہے مگر ہم نے اپنے شہیدوں کے ویژن اور ایجنڈے کی تکمیل پر عمل پیرا ہیں جس کی واضح مثال ہے سفیر امن کی ویژن کے مطابق گلگت بلتستان کو امن کا گہوارہ بنا کر ثابت کر دیا ہے کہ ہم اپنے شہیدوں کے ایجنڈے اور ویژن کے مطابق کام کر رہے ہیں انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان ترقی کی راہ پر گامزن ہے ۔جس کی وجہ سے ہماری حکومت پر تنقید کی جارہی ہے ۔ انہوں نے مثال دیتے ہوئے کہا کہ پتھر اس درخت کو مارا جاتا ہے جہاں پر پھل لگتے ہیں اگر کوئی کام ہی نہیں کرتا ہے تو تنقید کس بات کی ہوگی ۔ ہم کام کرتے ہیں تو تنقید بھی ہوتی ہے جس کو ہم اپنی اصلاح کے طور پر استعمال کر تے ہیں انہوں نے کہا کہ ہماری خواہش تھی کہ گلگت بلتستان میں بلڈ بنک کا قیام عمل میں لایا جائے ۔اس خواہش پر محکمہ صحت نے جر من حکومت کے تعاون سے بلڈ بنک کا قیام وقت سے قبل مکمل کر کے عوام کے لئے کھول دیا ہے جہاں پر جدید مشینری سے مذین صاف و شفاف خون مستحق مریضوں کو فراہم کیا جاتا ہے ہمارے عوام میں لوگوں میں ہمدر دی اور جذبہ زیادہ ہے جس کے مطابق بلڈ بنک میں لوگ خون کے عطیات دینے اور انسانی جانوں کو بچانے کے لئے کر دار ادا کرتے ہیں انہوں نے کہا کہ اگلے سال سکردو میں سٹیٹ آف دی آرٹ بلڈنگ تعمیر کی جائے گی اور جدید مشینری سے مذید بلڈ بنک کا قیام عمل میں لائیں گے جس میں جرمن حکومت نے تعاون کی یقین دہانی کرائی ہے ۔بعد ازاں وزیر اعلی حافظ حفیظ الر حمان ‘ گلگت بلتستان کونسل کے ممبر اشرف صدا سمیت دیگر لیگی کارکنوں نے خون کے عطیات بھی دیئے ۔ادھر پارٹی عہدیداروں اور کارکنوں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہم نے امن کو یقینی بناکر ثابت کردیا کہ مسلم لیگ ن ہی گلگت بلتستان میں مستحکم امن قائم کرنے میں سنجیدہ ہے مسلم لیگ ن کی حکومت نے ڈیڑھ سالوں میں امن کے ایجنڈے کو مضبوط کرنے کیلئے اقدامات کئے ہیں امن کے ایجنڈے کو عملی جامعہ پہنایا ہے جس کی وجہ سے گلگت بلتستان دنیا میں پرامن خطہ قرار پایا ہے ترقی کے ایجنڈے پر کام کررہے ہیں کئی میگا منصوبوں کا آغاز کیا جاچکا ہے پی ایس ڈی پی سے ایک کھرب سے زیادہ کے منصوبے گلگت بلتستان کیلئے منظور ہوچکے ہیںجن کے ثمرات جلد عوام کو ملیں گے مسلم لیگ ن کی کارکردگی سے خائف ہوکر مخالفین صرف الزامات کی حد تک رہ گئے ہیں شہید امن کا جلسہ عوام کا جلسہ ہے اس جلسے کا مقصد اتحاد بین المسلمین اور امن کو فروغ دینا ہے۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہاکہ شہید امن نے گلگت بلتستان سے نوگو ایریاز کو ختم کرنے اور مستقل قیام امن کیلئے اپنی ساری زندگی جدوجہد کی اور جان کا نزرانہ پیش کیاحکومتی اقدامات اور کارکنوں کی کوششوں کی وجہ سے شہید امن کا خواب پورا ہوا ہے اور اب گلگت بلتستان میں کوئی جگہ نوگو ایریا نہیں ہے۔ گلگت کی رونقیں بحال ہوئی ہیںجزاء و سزاء کا نظام قائم ہواہے امن اور بھائی چارگی کے اس ماحول کو قائم و دائم رکھنے کیلئے معاشرے کے ہر فرد کو اپنا کردار ادا ہوگا۔

Share Button