تازہ ترین

Marquee xml rss feed

قومی احتساب بیورو میں افسران کی خلاف ضابطہ تقرریوں کا معاملہ، نیب لاہور کے چار سینئر افسران نے استعفیٰ دیدیا-سابق ادوار میں کیشنگی کے نام پر کروڑوں کی کرپشن کی گئی،میر غلام دستگیر بادینی عوام کو مصنوعی طورپر پسماندہ رکھنے والوں کے مکروہ چہرے آشکارہوچکے ہیں،رکن بلوچستان اسمبلی-آئندہ الیکشن میں پیپلزپارٹی بھرپور کامیابی حاصل کرکے حکومت بنائے گی،ڈاکٹرسیدہ نفیسہ شاہ-پیپلزپارٹی کے رہنما سینیٹر عاجز دھامرہ کا شیخوپورہ کے قریب ریلوے حادثے پر اظہار افسوس-ماہ رجب کی رویت کا شرعی فیصلہ کرنے کے لیے مرکزی رویتِ ہلال کمیٹی کا اجلاس کل ہوگا، مفتی منیب الرحمن-مسلم لیگ(ن)آئندہ الیکشن میں مخالف جماعتوں کاصفایاکردے گی،شہبازشریف پیپلزپارٹی پہلے کراچی کاکچراصاف کرے پھرپنجاب کی بات کرے،میٹروکوجنگلابس کہنے والوں نے فوائددیکھے ... مزید-کراچی ،ناظم آباد میں بس پر فائرنگ پولیس اہلکار نے کی ، معمہ حل پولیس اہلکار واقعے کے بعد جائے حادثہ سے غائب ، شک پڑنے پر حراست میں لے لیا گیا ، مقدمہ درج کر کے تفتیش کا ... مزید-اوور لوڈنگ یا چھتوں پر مسافروں کو سوار کرنے والی بسوں، وینز یا کوچز کے خلاف قانونی کارروائی کو یقینی بنایا جائے،آئی جی سندھ-امتحانات کے دوران لوڈشیڈنگ نہ کی جائے،جام مہتاب حسین ڈھر-طلبا ملکی ترقی میں بڑھ چڑھ کر حصہ ڈالیں،بلاول بھٹو

GB News

صحت کے شعبے میں انقلابی اقدامات اٹھائے ہیں،وزیر اعلی

hafeez-ur-rehman

گلگت(سٹاف رپورٹر )وزیر اعلی گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمان نے کہا ہے کہ صحت کے شعبے میں انقلابی اقدامات اٹھائے ہیں 30 فیصد نتائج حاصل کر لئے ہیں 70 فیصد اصلاحات پر کام ہو رہا ہے ۔ 15 اپریل کے دن شہباز شریف ایم آر آئی سنٹر کا افتتاح کریں گے اور سکردو میں جرمن حکومت کے تعاون سے جدید ریجنل بلڈ سنٹر قائم کر یں گے ۔ریجنل بلڈ سنٹر جوٹیال میں شہید امن پیس فائونڈیشن کی طرف سے خون کے عطیات دینے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعلی نے کہا کہ ایک جماعت گلگت بلتستان سمیت ملک بھر میں شہیدوں کے نام پر اقتدار میں آتی ہے اور ویژن اور ایجنڈے کی بجائے اپنے زاتی مفادات کے لئے عوام کا مینڈیٹ استعمال کرتی ہے مگر ہم نے اپنے شہیدوں کے ویژن اور ایجنڈے کی تکمیل پر عمل پیرا ہیں جس کی واضح مثال ہے سفیر امن کی ویژن کے مطابق گلگت بلتستان کو امن کا گہوارہ بنا کر ثابت کر دیا ہے کہ ہم اپنے شہیدوں کے ایجنڈے اور ویژن کے مطابق کام کر رہے ہیں انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان ترقی کی راہ پر گامزن ہے ۔جس کی وجہ سے ہماری حکومت پر تنقید کی جارہی ہے ۔ انہوں نے مثال دیتے ہوئے کہا کہ پتھر اس درخت کو مارا جاتا ہے جہاں پر پھل لگتے ہیں اگر کوئی کام ہی نہیں کرتا ہے تو تنقید کس بات کی ہوگی ۔ ہم کام کرتے ہیں تو تنقید بھی ہوتی ہے جس کو ہم اپنی اصلاح کے طور پر استعمال کر تے ہیں انہوں نے کہا کہ ہماری خواہش تھی کہ گلگت بلتستان میں بلڈ بنک کا قیام عمل میں لایا جائے ۔اس خواہش پر محکمہ صحت نے جر من حکومت کے تعاون سے بلڈ بنک کا قیام وقت سے قبل مکمل کر کے عوام کے لئے کھول دیا ہے جہاں پر جدید مشینری سے مذین صاف و شفاف خون مستحق مریضوں کو فراہم کیا جاتا ہے ہمارے عوام میں لوگوں میں ہمدر دی اور جذبہ زیادہ ہے جس کے مطابق بلڈ بنک میں لوگ خون کے عطیات دینے اور انسانی جانوں کو بچانے کے لئے کر دار ادا کرتے ہیں انہوں نے کہا کہ اگلے سال سکردو میں سٹیٹ آف دی آرٹ بلڈنگ تعمیر کی جائے گی اور جدید مشینری سے مذید بلڈ بنک کا قیام عمل میں لائیں گے جس میں جرمن حکومت نے تعاون کی یقین دہانی کرائی ہے ۔بعد ازاں وزیر اعلی حافظ حفیظ الر حمان ‘ گلگت بلتستان کونسل کے ممبر اشرف صدا سمیت دیگر لیگی کارکنوں نے خون کے عطیات بھی دیئے ۔ادھر پارٹی عہدیداروں اور کارکنوں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہم نے امن کو یقینی بناکر ثابت کردیا کہ مسلم لیگ ن ہی گلگت بلتستان میں مستحکم امن قائم کرنے میں سنجیدہ ہے مسلم لیگ ن کی حکومت نے ڈیڑھ سالوں میں امن کے ایجنڈے کو مضبوط کرنے کیلئے اقدامات کئے ہیں امن کے ایجنڈے کو عملی جامعہ پہنایا ہے جس کی وجہ سے گلگت بلتستان دنیا میں پرامن خطہ قرار پایا ہے ترقی کے ایجنڈے پر کام کررہے ہیں کئی میگا منصوبوں کا آغاز کیا جاچکا ہے پی ایس ڈی پی سے ایک کھرب سے زیادہ کے منصوبے گلگت بلتستان کیلئے منظور ہوچکے ہیںجن کے ثمرات جلد عوام کو ملیں گے مسلم لیگ ن کی کارکردگی سے خائف ہوکر مخالفین صرف الزامات کی حد تک رہ گئے ہیں شہید امن کا جلسہ عوام کا جلسہ ہے اس جلسے کا مقصد اتحاد بین المسلمین اور امن کو فروغ دینا ہے۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہاکہ شہید امن نے گلگت بلتستان سے نوگو ایریاز کو ختم کرنے اور مستقل قیام امن کیلئے اپنی ساری زندگی جدوجہد کی اور جان کا نزرانہ پیش کیاحکومتی اقدامات اور کارکنوں کی کوششوں کی وجہ سے شہید امن کا خواب پورا ہوا ہے اور اب گلگت بلتستان میں کوئی جگہ نوگو ایریا نہیں ہے۔ گلگت کی رونقیں بحال ہوئی ہیںجزاء و سزاء کا نظام قائم ہواہے امن اور بھائی چارگی کے اس ماحول کو قائم و دائم رکھنے کیلئے معاشرے کے ہر فرد کو اپنا کردار ادا ہوگا۔

Share Button