تازہ ترین

Marquee xml rss feed

قومی احتساب بیورو میں افسران کی خلاف ضابطہ تقرریوں کا معاملہ، نیب لاہور کے چار سینئر افسران نے استعفیٰ دیدیا-سابق ادوار میں کیشنگی کے نام پر کروڑوں کی کرپشن کی گئی،میر غلام دستگیر بادینی عوام کو مصنوعی طورپر پسماندہ رکھنے والوں کے مکروہ چہرے آشکارہوچکے ہیں،رکن بلوچستان اسمبلی-آئندہ الیکشن میں پیپلزپارٹی بھرپور کامیابی حاصل کرکے حکومت بنائے گی،ڈاکٹرسیدہ نفیسہ شاہ-پیپلزپارٹی کے رہنما سینیٹر عاجز دھامرہ کا شیخوپورہ کے قریب ریلوے حادثے پر اظہار افسوس-ماہ رجب کی رویت کا شرعی فیصلہ کرنے کے لیے مرکزی رویتِ ہلال کمیٹی کا اجلاس کل ہوگا، مفتی منیب الرحمن-مسلم لیگ(ن)آئندہ الیکشن میں مخالف جماعتوں کاصفایاکردے گی،شہبازشریف پیپلزپارٹی پہلے کراچی کاکچراصاف کرے پھرپنجاب کی بات کرے،میٹروکوجنگلابس کہنے والوں نے فوائددیکھے ... مزید-کراچی ،ناظم آباد میں بس پر فائرنگ پولیس اہلکار نے کی ، معمہ حل پولیس اہلکار واقعے کے بعد جائے حادثہ سے غائب ، شک پڑنے پر حراست میں لے لیا گیا ، مقدمہ درج کر کے تفتیش کا ... مزید-اوور لوڈنگ یا چھتوں پر مسافروں کو سوار کرنے والی بسوں، وینز یا کوچز کے خلاف قانونی کارروائی کو یقینی بنایا جائے،آئی جی سندھ-امتحانات کے دوران لوڈشیڈنگ نہ کی جائے،جام مہتاب حسین ڈھر-طلبا ملکی ترقی میں بڑھ چڑھ کر حصہ ڈالیں،بلاول بھٹو

GB News

گلگت بلتستان میں شیروں کی حکومت ہے لاشوں پر سیاست کرنے والے پی پی پی کے مدہوشوں کی حکومت نہیں ،حفیظ الرحمن

goya-with-arsalan-khalid-hafiz-hafeez-ur-rehman-exclusive-interview-9th-august-2015

گلگت(نزاکت علی سے ) وزیر اعلی گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمان نے کہا ہے کہ گلگت بلتستان میں شیروں کی حکومت ہے لاشوں پر سیاست کرنے والے پی پی پی کے مدہوشوں کی حکومت نہیں ہے ۔ ایک جماعت اسلام آباد میں کچھ اور یہاں پر کچھ اور بولتی ہے ۔ نو کر یاں بیچ کر بد نامیوں کا ٹیکہ لگانے اور فرقہ وارانہ بنیاد پر علاقے کو جہنم بنانے والے ہمارے مفادات کا کیسے سوچ سکتے ہیں زر ‘ زن اور زمین پر فساد پھیلانے والوں کو نہیں بخشا جائے گا ۔ گھڑی باغ گلگت میں سیف الرحمان خان کی 14 ویں برسی کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعلی حافظ حفیظ الرحمان نے کہا کہ شہید سیف الرحمان خان کی شہادت اور دیگر قر بانیوں کے بعد بہت کوشش سے اس علاقے کو امن کا گہوارہ بنانے میں کامیاب ہوئے ہیں شہید سیف الرحمان خان کی قر بانیوں کو خراج تحسین پیش کرنے اور امن کوششوں کو تقویت دینے کے لئے رنگ و نسل اور علاقائیت سے بالاتر ہو کر عوام یہاں پر جمع ہیں انہوں نے کہا کہ عوام نے ترقی اور امن کے ایجنڈے والی جماعت کو میرٹ پر ووٹ دیا اور تاریخی کامیابی ملی ۔ ہم نے امن کے قیام کے لئے ریاستی اداروں کو متحرک کرتے ہوئے زیرو ٹالرینس کی پالیسی اپنائی جس کا نتیجہ یہ نکلا کہ گزشتہ ڈیڑھ سالوں سے دہشت گردی کا ایک بھی واقعہ پیش نہیں آیا اور گلوبل پیس انڈکس نے گلگت بلتستان کو ایشیاء کا پرامن خطہ قرار دیا جس کی وجہ سے گزشتہ سال10 لاکھ سے زائد سیاح گلگت بلتستان آئے۔ وزیر اعلی نے کہا کہ ن لیگ کی حکومت سے قبل گلگت بلتستان میں انٹرنل سیکیورٹی کے نام پر سالانہ 22 کروڈ روپے کرایے کے گاڑیوں کے نام پر خرد برد کئے جاتے تھے ن لیگ نے اقتدار میں آتے ہی کابینہ کے پہلے اجلاس میں کرایے کی گاڑیوں پر پابندی لگا دی اور اس بجٹ کو بچا کر سر کار ی سکولوں میں قاعدہ سے میٹر ک تک ایک لاکھ 65 ہزار بچوں کے لئے مفت کتابیں منگوائیں اور بقیہ بجٹ کو ڈاکٹروں کے پے پیکج بڑھانے کے لئے درکار رقم میں ایڈجسٹ کر لیا پے پیکج بڑھنے سے گلگت بلتستان میں ڈاکٹروں کی تعداد 120 سے بڑھ کر 420 ہو گئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سابقہ سالوں میں گریڈ 17 اور اس سے زائد کے آفیسروں اور وزراء کے ٹی اے ڈی اے پر 64 کروڈ روپے بجٹ مختص تھا جبکہ پورے صوبے کے سرکاری ہسپتالوں میں ادویات کی خریداری کے لئے صرف 5 کروڈ روپے رکھا گیا تھا ن لیگ کی حکومت نے سرکاری آفیسروں کے ٹی اے ڈی اے کے لئے مختص رقم آدھی سے بھی کم کر دیا اور ہسپتالوں میں ادویات کی خریداری کا بجٹ پانچ کروڈ سے بڑھا کر 35 کروڈ روپے کر دیا ہے انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان میں کبھی 50 پوسیٹں ایک ساتھ ایڈو ر ٹائز نہیں کی گئی تھیں مگر ن لیگ کی حکومت نے 1285 پوسٹیں ایف پی ایس سی بھجوا دی ہیں جس میں گریڈ 17’ 18 اور 19 پوسٹیں شامل ہیں جون تک بھر تیاں مکمل ہو جائیں گی ۔ انہوں نے کہا کہ الیکشن کے دوران عوام سے کئے گئے 70 فیصد وعدوں پر عملدر آمد کر دیا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ زمینوں کے نام پر عوامی جذبات سے کھیلنے والوں کی جیبوں میں زمینوں کے انتقالات کے کاغذات ہو تے ہیں لاڑکانہ والے گلگت بلتستان کے عوام کے مسائل کیا حل کریں گے زندہ ہے بھٹو زندہ ہے کے نعرے کو کب تک بیچیں گے وہ ۔ میرٹ پر کام کرتے ہو ئے امن و اتحاد کے لئے کردارادا کرتے توآج عوام ان کو یاد کرتے ۔ حافظ حفیظ الرحمان نے کہا کہ منافقین کی جماعت اسلام آبا د میں کچھ اور گلگت بلتستان میں کچھ اور کہتی ہے پانچ سالوں میں کیا کچھ کیاہے سب کو پتہ ہے ۔ نوکر یاں بیچ کر بد نامیوں کا ٹیکہ لگایا اور علاقے کو فرقہ وارانہ جہنم بنانے والے پی پی پی کے مدہوش علاقے کے مفادات کا کیسے سوچ سکتے ہیں انہوں نے کہا کہ ن لیگ کے شیروں کی حکومت ہے جو الیکشن میں زندہ باد یا مردہ باد کے نعرے نہیں لگاتی ہے بلکہ ملک و علاقے کی ترقی کا نعرہ لگاتی ہے اسی جماعت نے ملک کا قیام ممکن بنایا ‘ ملک کو ایٹمی طاقت بنایا اور اب ایشیاء کا ٹائیگر بنانے جا رہے ہیں انہوں نے کہا کہ 13 ارب روپے کی لاگت سے 8 لاکھ کنال زمین کو آباد کیا جارہا ہے بنجر زمینوں کو آباد کرنے کے منصوبے کا آغاز ہو چکا ہے تاکہ علاقائی سطح پر سبزیوں اور پھل فروٹ کی پیدا وار ہو اور کے کے ایچ کے بند ہونے سے یہاں پر کسی قسم کی قحط سالی کا خطرہ نہ ہو سکے انہوں نے کہا کہ زمینوں کے معاملے پر گلگت اور نومل کے عوام آپس میں لڑتے رہے اور تین لاشیں بھی گری مگر کسی نے لینڈ ریفارمز بنانے کی زحمت نہیں کی ن لیگ کی حکومت نے لینڈ ریفارمز کمیشن بنایا ہے جو کہ اگلے 6 ماہ میں زمینوں کے مسائل کے بارے میں فیصلہ کرے گا اگر زمینوں کو کمیونٹی کے حق میں فیصلہ دیا تو حکومت باقاعدہ آباد کر کے عوام کو زمین دے گی انہوں نے کہا کہ خالصہ سرکار کوسرکاری اداروں کو مفت فراہم نہیں کیا جائے گا بلکہ سرکاری اداروں سے زمین کی رقم لی جائے گی یا لیز پر زمین فراہم کریں گے انہوں نے کہا کہ وفاقی پی ایس ڈی پی میں سابقہ ادوار میں صرف 2 ارب کے منصوبے ہوتے تھے جبکہ ن لیگ کی حکومت میں فیڈرل پی ایس ڈی پی کے منصوبوں کی رقم 150 ارب روپے مختص کی گئی ہے ۔ حافظ حفیظ الرحمان نے کہا کہ گلگت پورے صوبے کا دل ہے مگر افسو س سابقہ سالوں میں گلگت کی ترقی کے لئے کچھ بھی نہیں کیا گیا ہے ۔ ہماری حکومت نے گلگت کو ماڈل سٹی بنانے کے لئے اقدامات اٹھائے ہیں یہاں پر سالڈ ویسٹ کمیٹی کا کامیاب منصوبہ شروع کیا گیا ہے ۔ سیف سٹی منصوبہ کے تحت یہاں پر کام ہو رہا ہے ۔سڑکوں کی حالت بہتر بنائی ہے توانائی کے منصوبے مکمل کئے گئے ۔ سردیوں میں لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ آدھا کم ہوا ہے جبکہ اپریل کے مہینے میں لوڈ شیڈنگ ختم ہو جائے گی تعلیمی اداروں ‘ ہسپتالوں میں اصلاحات لائی گئی ہیںائیر مکس منصوبے کے لئے زمین فراہم کر دی گئی ہے بہت جلد گلگت کے عوام کو گھروں میں پائپوں کے زریعے سے ایل پی جی گیس فراہم کیا جائے گا ۔ انہوں نے کہاکہ محکمہ پولیس کو ایک سال میں مثالی ادارہ بنایا گیا ہے 600بلٹ پروف جیکٹس فراہم کی گئی ہیں جدید اسلحہ فراہم کیا گیا ہیجدید ترین سرویلنس وین محکمہ پولیس کو فراہم کر دی گئی ہے جو کہ صوبہ سندھ میں ابھی تک نہیں ہے دوران ڈیوٹی شہید یا وفات پانے والے 70 پولیس ملازمین کے ورثاء کو مستقل ملازمت فراہم کی گئی ہے ۔ محکمہ پولیس مثالی ادارہ بن گیا ہے 300 سے زائد مفروروں کو گرفتا ر کیا گیا ہے ۔ حافظ حفیظ الرحمان نے کہا کہ گلگت بلتستان کے آئینی حقوق کے حوالے سے کام کرنے والی نے اپنا کام مکمل کر لیا ہے وزیر اعظم پاکستان گلگت بلتستان کے عوام کو خو شخبر ی دیں گے انہوں نے کہا کہ ہم زبانی یا سنی سنائی باتوں پر یقین نہیں رکھتے ہیں یا آئینی حقوق کے حوالے سے مقامی اخبارات میں سنی سنائی باتوں پر بیانات نہیں دیتے ہیں بلکہ حقائق کے عین مطابق ہر فورم پر دلائل سے بات کرتے ہیں تاکہ عوامی نمائندے ہو کر عوام کی عزت کا باعث بنیں نہ کہ زلت کا سبب بنیں۔ برسی کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈپٹی سپیکر جعفرا للہ خان نے کہا کہ ہم داعی امن ہیں علاقے میں امن کی خاطر ہم نے سینوں پر گولیاں کھائیں لیکن کبھی بھی بد امنی کا درس نہیں دیا بلکہ اتحاد بین المسلین کے لئے کردار ادا کیا ہے انہوں نے کہاکہ ہم ان جماعتوں کی طرح نہیں ہیں جو ناچ گانے کی محفلیں کرتے ہیں بلکہ ہماری تربیت قائد اعظم ‘ علامہ اقبال ‘ سیف الرحمان اور حفیظ الرحمان جیسی قیادتوں نے کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مائوں ‘ بہنوں اور بیٹوں کی دعائوں سے دو تہائی اکثریت سے کامیاب ہوئے ہیں سابقہ ادوار میں اتحادیوں کی حکومت نے تمام اداروں کا بیڑہ غرق کر دیا تھا تمام نظام کو بگاڑ کر رکھ دیا تھا جعفر اللہ نے کہا کہ چند سازشی لوگ ”را ” کے ہاتھوں میں کھیل رہے ہیں ان کو عوام اپنی صفوں سے نکال باہر کریں تاکہ نشان عبرت بنایا جا سکے انہوں نے کہا کہ سوشل میڈیا اور اخبارات بیانات دیئے جارہے ہیں کہ ڈیڑھ سال میں کیا کچھ ہے ۔ ہم نے ڈیڑ ھ سالوں میں گزشتہ پانچ سالوں کا گند صاف کیا ہے اور بگڑے ہوئے نظام میں بہتری لائی ہے ۔ ڈیڑھ سالوں میں اتنا کام کیا ہے جتنا سابقہ 70 سالوں میں نہیں ہوا تھا ۔ انہوں نے کہا کہ سابقہ حکومت کو سی پیک کا پتہ نہیں تھا کیونکہ وہ نا بالغ تھے ہم نے سی پیک میں نہ صرف نمائندگی حاصل کر لی ہے بلکہ گلگت بلتستان کے 4 میگا منصوبے بھی سی پیک کا حصہ ہیں انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان گورننس آرڈر سابقہ حکومت نے نہیں دیا ہے ان لوگوں نے عوام سے جھوٹ بولا ہے گور ننس آرڈر میثاق جمہوریت میں نتیجے میں ملاہے ۔ سوشل میڈیا اور اخبارات میں جھو ٹے پرو پیگنڈ ے کرنے والے کس منہ سے عوام کا سامنا کرتے ہیں اپنے دور میں تین سے پانچ لاکھ کی بولی لگا کر ملازمتیں فروخت کرتے تھے ۔ دور میں جتنی بھی بھرتیاں ہوئی ہیں سب میرٹ پر ہوئی ہیں کرپشن یا اقرباء پروری کا ایک کیس بھی نہیں ہے انہوں نے کہا کہ کسی نے بھی علاقے کے امن کو للکارنے کی کوشش کی تو آہنی ہاتھ گردن تک پہنچیں گے اور نشان عبرت بنائیں گے وزیر تعمیرات ڈاکٹر محمد اقبال نے کہا کہ پی پی پی جب بھی اقتدار میں آئی ہے تب کرپشن کا بازار گرم ہواہے کرپشن کی وجہ سے ہی پی پی پی دفن ہو چکی ہے اور مردے کبھی بھی زندہ نہیں ہوتے ہیں چند بیانات دینے سے کچھ نہیں ہوتا ہے تیسری پارٹی شور مچارہی ہے وہ ہواکا جھونکا ہے عمران خان کے ساتھ ہی وہ بھی غائب ہوجائے گی انہوں نے کہا کہ ن لیگ کے دور میں کرپشن کنٹرول ہوا ہے جس کی وجہ سے پورے ایشیا ء میں پاکستان کرپشن کنٹرول کرنے والا پہلا ملک بن چکا ہے انہوں نے کہا کہ ہم نے نہ کرپشن کی ہے اور نہ ہی کرپشن کرنے کی اجازت دیں گے اور نہ ہی ہم نے کوئی نوکری فروخت کی ہے اور نہ ٹھیکہ بیچا ہے برسی کے اجتماع سے رکن کونسل اشرف صدا نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کسی بھی علاقے اور قوم کی ترقی میں امن کا مکمل قیام اہمیت کا حامل ہے ہماری حکومت نے امن خراب کرنے والوں کے خلاف زیرو ٹالرینس کی پالیسی اپنائی ہے جس کی وجہ سے خطے میں امن کا بول بالا ہے انہوں نے کہا کہ ن لیگ کے عہدیداروں کو راستے سے ہٹانے کے لئے گولیاں برسائی گئیں مگر ہم نے اتحاد و رواداری کے دامن کو نہیں چھوڑا ۔ الیکشن میں امن کا ایجنڈا لے کر عوام کے سامنے آئے اور عوام نے ہمیں سرخرو کر دیا ۔ انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان ہمارے گھر کی طرح ہے اور ہم اپنے گھر میں اتحاد ‘ اتفاق اور امن قائم و دائم رکھنے کے لئے ہر ممکن اقدامات اٹھائیں گے پارلیمانی سیکریٹری برائے صحت بر کت جمیل نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سابقہ ادوار میں لاشیں اٹھا اٹھا کر تھک گئے تھے نو گوزایریا ز تھے جس کی وجہ سے ہر فرد پریشان تھا انہوں نے کہا کہ امن کے ایجنڈے کے تحت ن لیگ الیکشن میں سرخرو ہوئی اور گلگت بلتستان پر امن ترین علاقہ بن چکا ہے نفرتوں کا خاتمہ ہو گیا ہے اور تمام لوگ خو شحال و پر سکون زندگی گزار رہے ہیں برسی کے اجتماع سے اور نگزیب ایڈو کیٹ نے خطاب کر تے ہوئے کہا کہ عوام کی خدمت کے جذبے سے سر شار ہو کر سیاست میں آئے ہیں اپنی زمہ داری کا احساس کرتے ہوئے عوام کے مسائل کو حل کر نے کے لئے ہر ممکن اقدامات اٹھا رہے ہیں بر سی کے اجتماع سے اسلم پرویز ‘ نوید اکبر ‘ شفیق الدین ‘ سلامت جان ‘ منظور ایڈو کیٹ ‘ مولانا نادر اشرفی ‘ شیخ حسن غفاری و دیگر نے خطاب کیا جبکہ معرف شعراء جمشید خان دکھی ‘ حفیظ شاکر اور غلام نبی ہمراز نے اپنے اپنے کلام بھی سنائے

Share Button