تازہ ترین

Marquee xml rss feed

عید کے موقع پر پولیس ش�داء کے ا�لخان� کو یاد رکھا جائے، صوبائی وزیر داخل� سندھ-پاکستانی نوجوان با صلاحیت اور اعلیٰ درج� کی ذ�انت کے حامل �یں، گورنر سندھ-پاسبان لیاری زون کے تحت �زاروں مستحق بچوں میں عید کے لباس تقسیم-لا�ور : اے ایس ای� کی کاروائی مسا�ر کے استقبال کے لئے آنے والے ش�ری کے قبضے سے ایک پسٹل، 2 میگزین اور 5 گولیاں برآمد-لا�ور :ایس پی سول لائن علی رضا کی سربرا�ی میں سکیورٹی خدشات کے باعث پی سی �وٹل میں �نگامی مشقیں کی گئی-لا�ور :عید ال�طر کے قریب آتے �ی گوشت، پھلوں اور شبزیوں کی قیمتوں میںاضا�� �و گیا-لا�ور : صوبائی دارلحکومت میں لگائے گئے رمضان بازار ایک روز قبل �ی ختم کر دئیے گئے جس کے باعث ش�ری م�نگے داموں اشیاء ضروریات خریدنے پر مجبور �و گئے �یں، مختل� علاقوں میں ... مزید-لا�ور : تھان� �یکٹری ایریا کی حدود میں موٹر سائیکل سوار شخص کی �ائرنگ 2 لڑکیوں پلوش� اور مشعل کر زخمی کر دیا-لا�ور : پولیس کی کاروائی منشیات �روش گر�تار ، اس کے قبضے سے 200 لٹر شراب برآمد-لا�ور :صوبائی دارلحکومت لا�ور میں علاق� غیر سے آنے والی گاڑی سے بڑی تعداد میں بارودی مواد برآمد کر کے 2 ملزمان کو گر�تار

GB News

نئے کھلاڑیوں کے ٹیلنٹ کا درست انداز میں فائدہ اٹھانا چاہیے،جاوید میانداد

سابق کپتان جاوید میاندادنے ویسٹ انڈیز کیخلاف ٹوئنٹی20اور ون ڈے سیریز میں نوجوان کھلاڑیوں کی کارکردگی کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ نئے کھلاڑیوں کے ٹیلنٹ کا درست انداز میں فائدہ اٹھانا چاہیے، سرفراز احمد کو ٹیسٹ ٹیم کی قیادت بھی سونپ دی جائے۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ نوجوان کھلاڑیوں میں بڑا ٹیلنٹ موجود ہے لیکن اسے مناسب طریقے سے کار آمد بنانے کی ضرورت ہے، کیریبیئن ٹیم ماضی جیسی مضبوط نہیں،اس میں کئی نئے کھلاڑی اپنی جگہ بنانے کیلیے فکر مند ہیں، پاکستان سیریز ہار جاتا تو بڑی مایوسی کی بات ہوتی۔جاوید میانداد کا کہنا تھا کہ سرفراز احمد نے اچھی قیادت کرتے ہوئے بطور کپتان پہلا معرکہ سر کرلیا،وہ ایک قابل بھروسہ کرکٹرہیں، تینوں فارمیٹ میں اپنی جگہ بھی بنا چکے، ون ڈے اور ٹوئنٹی 20میں قائدانہ صلاحیتیں ثابت کر دیں، مصباح الحق کی رخصتی کے بعد ٹیسٹ ٹیم کی قیادت کیلیے بھی سرفراز سے زیادہ موزوں امیدوار کوئی نہیں ہے۔دوسری جانب سابق ٹیسٹ کرکٹر عبدالقادر نے کہا کہ سرفراز احمد ایک فائٹر کھلاڑی ہیں، تمام کھلاڑی ان کی قیادت میں متحد نظر آتے ہیں،وکٹ کیپر بیٹسمین کو ٹیسٹ ٹیم کا کپتان بھی بنا دینا چاہیے،ان کو تینوں فارمیٹ کی قیادت سپرد کرنے سے ٹیم میں گروپ بندی کے خدشات بھی کم کرنے میں مدد ملے گی۔یاد رہے کہ اس سے قبل بھی کئی سابق اسٹارز سرفراز احمد کو ٹیسٹ کپتان بنانے کی حمایت کرچکے جبکہ بعض کا کہنا ہے کہ اضافی بوجھ سے ان کی کارکردگی متاثر ہوسکتی ہے۔

Share Button