تازہ ترین

Marquee xml rss feed

سابق وزیراعظم نوازشریف کل نیب میں تفتیش کے لیے پیش ہونگے، سینئر تجزیہ کار کادعویٰ-حکومت کے گزشتہ چار سال کے دوران موثر اقدامات کے تحت ریلوے کی آمدنی میں نمایاں اضافہ ہوا ہی,ریلوے اراضی کی 95 فیصد ڈیجیٹلائزیشن مکمل کرلی ہے‘ قبضہ مافیا کے خلاف کارروائی ... مزید-ایف آئی اے اور پی ٹی اے نے عائشہ گلالئی کے عمران خان پر الزامات کی فرانزک تحقیقات کو ناممکن قرار دے دیا-بدعنوانی کی روک تھام اور لوٹی گئی رقم کی وصولی نیب کی اولین ترجیح ہے، چیئرمین نیب قمر زمان چوہدری-معیشت مضبوط نہ ہو تو ایٹم بم بھی آزادی کی حفاظت نہیں کر سکتے، سیاسی استحکام معیشت کی مضبوطی کا واحد راستہ ہے دوسروں کی جنگیں لڑتے لڑتے ہم نے اپنے معاشرہ کو کھوکھلا ... مزید-مولانا فضل الرحمان کا آرٹیکل 62,63کو آئین سے نکالنے کی حمایت سے انکار صادق اور امین کی بنیادی شقوں کو نکالنا آئین سے مذاق ہے-احتساب عدالت ، سابق وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف کے خلاف رینٹل پاور کرپشن کیس میں دلائل مکمل ، فیصلہ محفوظ-عمران خان کا خیبرپختونخواہ کے خوبصورت علاقے کوہستان کا دورہ تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل، تحریک انصاف کے سربراہ نے دنیا بھر کے سیاحوں کو پاکستان آنے کی دعوت دے دی-میاں صاحب اپنی عقلمندی کی وجہ سے آج یہ دن دیکھ رہے ہیں، خورشید شاہ ملک میں کوئی سیاسی بحران نہیں صرف ایک جماعت میں بحران ہے، چیئرمین نیب کی تقرری کیلئے بطور اپوزیشن لیڈر ... مزید-تاثردرست نہیں کہ فوج کے تمام سربراہوں کے ساتھ مخالفت رہی، محمد نوازشریف قانون کی حکمرانی پریقین رکھتاہوں،کبھی بھی اداروں کے ساتھ ٹکراؤ کی پالیسی نہیں اپنائی،سپریم ... مزید

GB News

مقبوضہ کشمیر میں جعلی انتخابات مسترد کرکے عوام نے فیصلہ دے دیا، پاکستان

Share Button

ترجمان دفتر خارجہ نفیس زکریا نے کہاکہ کشمیری عوام کی تحریک آ زادی کی سیاسی ،اخلاقی اور سفارتی حمایت جاری رکھیں گے، بھارت مقبوضہ کشمیر میں معصوم لو گوں کے خلاف اندھی طاقت استعمال کر کے اقوام متحدہ کے چارٹر کی خلاف ورزی کر رہا ہے ۔ مقبوضہ کشمیر میں جعلی انتخابات کو مسترد کرنے ِ بارے کشمیریوں نے مرضی ظاہر کردی ،مقبوضہ کشمیر سے لیک شدہ ویڈیو بھارت کے کشمیریوں کو انسانی ڈھال کے طور پر استعمال کرنے کا ثبوت ہیں ۔عالمی برادری سے مقبوضہ کشمیر میں کشمیری عوام کی نسل کشی رکوانے کامطالبہ کرتے ہیں،امریکہ میں نئی انتظامیہ ہے جس کے ساتھ باہمی تعلقات کے تناظر میں مل کر کام کرنے کے خواہشمند ہیں۔جمعرات کو ترجمان دفتر خارجہ نفیس زکریا نے ہفتہ وار میڈیا بریفنگ دیتے ہوئے کہاکہ ہم نے سمجھوتہ ایکسپریس دہشتگردی کا معاملہ مختلف مواقع پر بھارتی قیادت سے اٹھایا ہے۔سوامی آسیم آنندنے عوامی مقامات پر اعتراف کیا کہ وہ سمجھوتہ ایکسپریس دہشت گردی کا ماسٹر مائنڈ ہے۔ کرنل پروہت کے سسمجھوتہ ایکسپریس دہشت گردی میں ملوث ہونے کا بیان دیا۔کل بھوشن یادیو ایک بھارتی جاسوس تھا ۔ مقبوضہ کشمیر میں جعلی انتخابات کو مسترد کرنے ِ کشمیریوں کی مرضی کی عکاسی ہوتی ہے۔بھارتی افواج نے مقبوضہ کشمیر میں طلبا کے خلاف مکمل جنگ شروع کر دی ہے۔بھارت اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے چارٹر کی بھرپور خلاف ورزی کر رہا ہے۔مقبوضہ کشمیر سے لیک شدہ ویڈیو بھارت کے کشمیریوں کو انسانی ڈھال کے طور پر استعمال کرنے کا ثبوت ہیں۔ہم کشمیریوں کی بھرپور سیاسی, اخلاقی حمایت جاری رکھنے کا اعادہ کرتے ہیں۔ پاکستان کی سیاحت کے فروغ پر باقاعدہ پالیسی موجود ہے۔سیاحت کے فروغ کے لئے یہاں مخصوص ٹور ایجنسیاں کام کر رہی ہیں۔بھارت کل بھوشن یادیو کے سزاے کے بعد تمام بات چیت کو روک رہا ہے۔بھارت کی جانب سے بھارت میں اپنی سزا مکمل کرنے والے پاکستانی قیدیوں کو روک لینا مایوس کن ہے ۔کل بھوشن یادیو نے بیشمار پاکستانیوں کے قتل کا ذمہ دار ہے۔بھارت کے ساتھ قیدیوں تک رسائی کا معاہدہ موجود ہے۔تاہم اس معاہدہ کے مخصوص شق کے تحت تخریب کاروں کا کیس ٹو کیس فیصلہ کیا جاتا ہے۔او آئی سی نے ہمیشہ کشمیر کاز کی بھرپور حمایت کی ہے۔او آئی سی کا کشمیر پر ایک 5 رکنی کانٹکٹ گروپ ہے۔او آئی سی نے بھارت سے مقبوضہ کشمیر میں فیکٹ فاینڈنگ مشن بھیجنے کا دوبارہ مطالبہ کیا ہے۔او آئی سی کے سیکریٹری جنرل نے اپنے دورے میں بھی مقبوضہ کشمیر میں مظالم کا زکر کیا۔پاکستان بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں مظالم کا معاملہ تمام فورمز پر اجاگر کرے گا۔عالمی برادری سے مقبوضہ کشمیر میں کشمیری عوام کی نسل کشی رکوانے کامطالبہ کرتے ہیں۔بھارت قابض افواج کے ہاتھوں 8 جولائی کے بعد سے 2 سو کشمیری شہید ہوے۔8 ہزار سے زائد. کشمیری ان مظالم کے نتیجہ میں زخمی ہوے۔بھارت افواج جان بوجھ کر کشمیریوں کی بینائی ختم کر رہی ہیں۔امریکہ میں نئی انتظامیہ ہے جس کے ساتھ باہمی تعلقات کے تناظر میں مل کر کام کرنے کے خواہشمند ہیں۔نئی امریکی انتظامیہ کا یہ پہلا اعلی سطح کا دورہ تھا۔امریکی قومی سلامتی کے مشیر میک ماسٹر کے دورہ پاکستان کے دوران ملاقاتوں میں زیادہ تر علاقائی سلامتی پر بات چیت ہوئی۔اس بات پر غور کیا گیا کہ کس طرح پاکستان اور امریکہ مل کر افغانستان میں قیام امن کی کوشیش کر سکتے ہیں۔ملاقاتوں میں مسلہ کشمیر کو بھی اجاگر کیا گیا۔ان ملاقاتوں کے دوران امریکی حکومت نے انسداد دہشت گردی میں پاکستان کی قربانیوں کا اعتراف کیا۔ نئی امریکی انتظامیہ افغانستان میں اپنی پالیسی پر نظرثانی کر رہی ہے۔شنگھائی تعاون تنظیم اجلاس کے حوالے سے ابھی کوئی چیز حتمی طور پر طے نہیں کی گئی۔داعش کا پاکستان میں کوئی منظم وجود نہیں۔ پکڑے جانے والے دہشت گردوں نے رضاکارانہ داعش کا نام استعمال کیا۔

Share Button