GB News

بعض بے شرم لوگوں نے سڑکوں کو پلستر کیا، وہ پہلے اپنے گھروں کوپلستر کریں، اکبر تابان

Share Button

سینئر وزیر حاجی اکبر تابان نے کہاہے کہ سکردو روڈ کی تعمیر 36ارب روپے کی لاگت سے جون سے پہلے ہو گی پانچ پلوں پر پہلے ہی کام شروع ہو گیا ہم بھی نوکریاں بیچیں گے اور کلوٹ تک نہیں بنائیں گے تو ہمارا حشر بھی سابق حکومت جیسا ہوگا بعض بے شرم لوگوں نے سکردو کی ٹوٹی پھوٹی سڑکوں کو پلستر کیا ہے جن لوگوں نے سڑکوں کو پلستر کیا ہے وہ پہلے اپنے گھروں کو پلستر کریں سکردو پریس کلب کے باہر وزیر اعظم کے حق میں ہونے والے مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ سکردو شہر کی ٹوٹی پھوٹی سڑکوں کی مرمت اور ری کارپیٹنگ کیلئے 22کروڑ روپے کی رقم مختص کی گئی ہے ایئر پورٹ سے ریڈیو پاکستان چوک تک سڑک کو ایکسپریس وے بنایا جارہا ہے انہوں نے کہاکہ ہر پوہ ،غواڑی ،شغر تھنگ اور سدپارہ میں نئے بجلی گھر بنائے جارہے ہیں ایک وقت آئے گا یہ یہاں بجلی کی ریل پیل ہو گی اور کہیں بجلی کا کوئی مسئلہ نہیں ہوگا انہوں نے کہاکہ ہمارا کوئی بندہ گاڑی پر جھنڈا لگا کر سبزی منڈی میں نہیں آتا اگر کوئی حکومتی عہدیدار سبزی منڈی آتا ہے تو وہ غلام مہدی اجنگ پہ کے ساتھ آتا ہے ہم عوام کے ساتھ بڑے مخلص ہیں ان کے خاطر اسمبلی کے دو سیشن ضائع سرکاری آفیسر چاہئے جتنا ہی بڑا کیوں نہ ہو وہ ہمارے سامنے جوابدہ ہے انہوں نے کہاکہ ہمیں عوام کے مسائل کا ادراک ہے ان کے حل کیلئے وسیع بنیادوں پر کام کر رہے ہیں انہوں نے کہاکہ بعض لوگوں نے نئے اضلاع کا شوشا چھوڑا اور کام نہیں کیا جس کے باعث بعض لوگوں نے اضلاع کے تابوت بنائے لیکن ہم نے نئے اضلاع بناکر دکھایا اور ثابت کیا کہ ہم ہی اس خطے کے وفادار لوگ ہیں پانامہ کیس میں فیصلہ وزیر اعظم کے خلاف آتا تو گلگت بلتستان متاثر ہوتا خدا کا شکر ہے کہ فیصلہ وزیر اعظم کے حق میں آگیا ۔ انہوں نے کہا عمران خان سمجھتے ہیں کہ وہ عقل کل ہیں حالانکہ ایسا نہیں ہے اگر پانامہ کیس کا فیصلہ اور ہوتا تو گلگت بلتستان کا پورا بجٹ متاثر ہو جاتا انہوں نے کہا کہ دو پارٹیوں نے منوں کے حساب سے مٹھائیاں تیار کی ہوئی تھیں لیکن سپریم کورٹ کا فیصلہ آنے کے بعد ان جماعتوں کے لوگ یہ مٹھائیاں قبروں پر لے جاکر تقسیم کر رہے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ پارٹی کے قائد میاں نوازشریف کی ہمت ، جرأت اور بہادروی کو سلام پیش کرتے ہیں اور امید کرتے ہیں کہ وہ جی آئی ٹی کے سامنے سے بھی سرخر و ہو کر نکلیں گے ۔

Facebook Comments
Share Button