تازہ ترین

Marquee xml rss feed

سیاسی محاذ پر پاکستان تحریک انصاف کو بہت بڑی کامیابی مل گئی پاکستان تحریک انصاف کے نواب صلاح الدین عباسی کے ساتھ معاملات طے پا گئے،بہاولپور نیشل پارٹی کا تحریک انصاف ... مزید-میری نااہلی کو ختم کرنا ہے تو دھڑا دھڑ ووٹ دینے ہیں،نوازشریف مسلم لیگ ( ن ) کو ووٹ دینا ہے،عہد کرو کہ ووٹ کو بے عزت نہیں ہونے دو گے میں عوام کی خدمت کر رہاتھا،میری ذات کا ... مزید-آج میاں صاحب نے بتادیا کہ انہیں کس نے اور کیوں نکالا، مریم نواز-پاکستان میں حکومتوں کی تبدیلی سے سرمایہ کاری پالیسی تبدیل نہیں ہو گی، تمام سیاسی جماعتوں کا اس بات پر اتفاق ہے کہ نجی شعبہ اقتصادی ترقی میں انجن کی حیثیت رکھتا ہے، بیرونی ... مزید-متحدہ مجلس عمل جب سے بحال ہوئی ہے تو سیکولراور لادین طبقات پر لرزہ طاری ہے،سینیٹر سراج الحق مجلس عمل کے کامیاب مستقبل کو دیکھ کراب کرپٹ ٹولے کو اپنا انجام دکھائی دینے ... مزید-پانچ سالہ دور حکومت میں پاکستان کو تعلیمی لحاظ سے ترقی کی راہ پر گامزن کردیاہے ، بلیغ الرحمن-لاہور، وزیراعظم ا غزہ میں اسرائیلی بربریت کی شفاف تحقیقات کا مطالبہ پاکستان آزاد فلسطینی ریاست کیلئے حمایت جاری رکھے گا،شاہد خاقان عباسی کا او آئی سی اجلاس سے خطاب-ہر ادارے کو آئین کے مطابق اپنا کردار ادا کرنا ہوگا ،شاہد خاقان عباسی عدالت اور نیب کے کام سے حکومت مفلوج اورملک کے بے پناہ نقصان ہوا ،ماضی کی غلطیوں سے سبق نہیں سیکھا ... مزید-دبائو ڈالتے ڈالتے نواز شریف خود دبائو میں آگئے،مولا بخش چانڈیو نواز شریف نے مجیب الرحمن بننے کی دھمکی دی اپنے بیٹوں سے بھی لاتعلقی اختیار کرلی نواز شریف خود چلے جاتے ... مزید-نواز شریف کے نزدیک ریاست اور اداروں کے بجائے صرف اپنی ذات کی اہمیت ہے،فو ادچوہدری نواز شریف منی ٹریل پر بات کرنے کے بجائے صرف جرنیلوں پر بات کرتے ہیں، کچھ عرصہ پہلے کتاب ... مزید

GB News

نواز شریف کو کہتا ہوں کہ وہ فوری طور پر استعفی دیں،عمران خان

Share Button

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان نے سپریم کورٹ کی جانب سے پاناما کیس کے فیصلے کے بعد وزیراعظم نواز شریف سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ میں عدالت کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں ایسی ججمنٹ کبھی نہیں آئی،میں پاکستانی قوم کی طر ح نواز شریف کو کہتا ہوں کہ وہ فوری طور پر استعفی دیں کیونکہ ان کے پاس وزیر اعظم رہنے کا کون سا اخلاقی جواز رہ گیا ہے،وزیر اعظم کرسی پر رہے تو تحقیقات پر اثر انداز ہو سکتے ہیں ‘ جو ادارے وزیر اعظم کے ماتحت رہیں گے وہ تحقیقات کیسے کریں گے، اگر نواز شریف60 دن میں کلیئر ہو جاتے ہیں تو دوبارہ آ جائیں ‘ سپریم کورٹ نے آج تاریخی فیصلہ دیا ہے ‘ ملکی تاریخ میں ایسا فیصلہ نہیں آیا ‘ قطری خط تو مسترد ہو گیا ہے ‘ اس طرح دوسرے معاملات بھی کھلیں گے ‘ اب وزیر اعظم کی اور تلاشی لی جائے گی ‘ وزیر اعظم کو جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہونان پڑے گا ‘ اگر عوام سڑکوں پر نہ آتی تو یہ کبھی بھی نہ ہوتا۔ جمعرات کو اسلام آباد میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے تحریک انصاف کے چیئرمین نے کہا کہ سپریم کورٹ کے ججز کو قوم کی طرف سے خراج تحسین پیش کرتا ہوں ‘ سپریم کورٹ نے آج تاریخی فیصلہ دیا ہے۔ ملکی تاریخ میں ایسا فیصلہ نہیں آیا۔ جو فیصلہ آیا ہے اس کا مطلب ہے جو بھی انہوں نے منی ٹریل کی وضاحت کی تھی وہ مسترد ہو چکی ہے۔ 2 ججوں نے کہا کہ نواز شریف کو نااہل کیا جائے۔ انہوں نے کہاکہ نواز شریف فوری طور پر استعفیٰ دیں۔ ان کے پاس کیا اخلاقی جواز رہ گیا ہے۔ سپریم کورٹ نے کہاکہ نیب فیل ہو گئی ہے وہ ادارے پھر بھی وزیر اعظم کے ماتحت رہیں گے کیسے وہ تحقیقات کر سکتے ہیں۔ بجلی کا اتنا بڑا مسئلہ بن چکا ہے۔ لوڈ شیڈنگ ہو رہی ہے۔ نواز شریف 60 دن میں کلیئر ہو جاتے ہیں تو دوبارہ آ جائیں۔ عمران خان نے کہا کہ قطری خط تو مسترد ہو گیا ہے اس طرح دوسرے معاملات بھی کھلیں گے۔ اگر عوام سڑکوں پر نہ آتی تو یہ کبھی بھی نہ ہوتا ۔ اب وزیر اعظم کی اور تلاشی لی جائے گی۔ وزیر اعظم کو جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہونا پڑے گا۔ اگر استعفیٰ نہیں دیتے تو ان کی اتنی توہین ہو گی۔ یہ مٹھائی کس چیز کی بانٹی جا رہی ہیں۔ پانچوں ججز نے نواز شریف کے شواہدکو مسترد کر دیا ہے۔ ادھر جماعت اسلامی کے امیر سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ آج کے پانامہ لیکس کے فیصلے سے حکومت کی ساکھ ختم ہو گئی ہے اور حکومت پر اخلاقی دبائو میں اضافہ ہوا ہے۔ فیصلہ عوام کی فتح ہے ‘ جماعت اسلامی سب کا احتساب چاہتی ہے ‘ کرپشن کی وجہ سے قوم قرض کی زنجیر میں جکڑتی جا رہی ہے ‘ جمعرات کو پانامہ کیس کا فیصلہ سننے کے بعد سپریم کورٹ کے باہر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ آج 2 ججز نے وزیر اعظم کو نااہل کرنے کے لئے فیصلہ دیا جبکہ 3 ججز نے مشترکہ تحقیقاتی ٹیم بنانے کا کیا ہے۔ فیصلہ کے بعد حکومت کی ساکھ ختم ہو گئی ہے۔ حکومت پر اخلاقی بوجھ بڑھ گیا ہے۔ آج کے فیصلے سے عوام کی فتح ہوئی ہے۔ جماعت اسلامی کرپشن کے خلاف اپنی کوششیں جاری رکھے گی۔ کرپشن کے خلاف جماعت اسلامی 1996ء سے کوشش کر رہی ہے۔ ہم چاہتے ہیں سب کا کھلا احتساب ہو۔ کرپشن کی وجہ سے قوم قرض کی زنجیر میں جکڑی ہوئی ہے۔

Facebook Comments
Share Button