تازہ ترین

Marquee xml rss feed

بلاول، بختاور اور آصفہ کی یادگارِ شہدائے کارساز پر حاضری جائے حادثہ پر دن بھر رہنماں اور کارکنوں کی آمد جاری رہی، سکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے-سپیکر اور ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی کی دیوالی کے تہوار پر ہندو برادری کو مبارک باد-پاکستان میں بلیو وہیل جیسی ایک اور خطرناک گیم تیار کر لی گئی، کئی نوجوانوں کو نشانہ بنا دیے جانے کا انکشاف, امریکی ایجنسی کی اطلاع پر ایف آئی اے نے جوہر ٹاون سے نوجونواں ... مزید-وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ سے پی سی بی کے چیئرمین نجم سیٹھی کی ملاقات آئندہ فروری میں کراچی میں پی ایس ایل کے 4 میچ کرانے پر اتفاق-ناگہانی صورتحال پر قابو پانے کیلئے بروقت ردعمل فیصلہ کن ہوتا ہے، شیخ انصر عزیز-اسلامی جمعیت طلبہ پاکستان کے تحت آؤبدلیں پاکستان مہم کے دوسرے مرحلے تعلیم سے تعمیر پاکستان کے سلسلے میں (کل) تعلیمی ریفرنڈم ہوگا-امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق ہفتہ 26اکتوبر کو صوابی گرائونڈ میں شمولیتی اجتماع سے خطاب کریں-مشال خان قتل کیس کا مرکزی گواہ اپنے بیان سے منحرف ہو گیا اگلی سماعت 25اکتوبر تک ملتوی گواہوں پر دبائو ڈالا جا رہا ہے وکیل کا الزام،معاملہ جلد ہائی کورٹ میں لے کر جائیں ... مزید-محنت کشوں کیلئے پاکستان پیپلز پارٹی کے منشور کے مطابق اقدامات کررہے ہیں، صوبائی وزیر محنت سید ناصر حسین شاہ-پاکستان پیپلز پارٹی نے میڈیا کو ہمیشہ اہمیت دی اور صحافیوں کے مسائل حل کئے ہیں،وزیر اطلاعات سید ناصر حسین شاہ

GB News

انصاف کی فراہمی کے لئے بنچ اور بار کے درمیان مضبوط تعلق ضروری ہے، جسٹس رانا شمیم

Share Button

سپریم اپیلٹ کورٹ گلگت بلتستان کے چیف جج جسٹس رانا محمد شمیم خان نے کہا ہے کہ انصاف اور اچھائی کے لئے بنچ اور بار کا مضبوط تعلق ضرورت ہے ۔ ملک کے دوسرے حصوں کی نسبت گلگت بلتستان کے وکلاء محنت اور تیاری کے ساتھ عدالتوں میں پیش ہوتے ہیں جو کہ مثبت رجحان ہے ۔ نئے وکلاء سپریم اپیلٹ کورٹ کے رولز کا مطالعہ کریں ۔ عدالت عظمی میں نئے وکلاء کو لائسنس تقسیم کرنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہو ئے معززچیف جج نے کہا کہ گلگت بلتستان کی 15 لاکھ آبادی میں 60 وکلاء کو یہ اعزاز حاصل ہے کہ آپ سپریم اپیلٹ کورٹ کے وکیل ہیں آپ اچھی وکالت کرتے ہوئے اپنی سالمیت اور وقار کو قائم رکھیں تاکہ اچھے وکلاء کے طور پر آپ کا نام لیا جا سکے انہوں نے کہا کہ وکلا ء کا کام فیصلے کرنا نہیں ہے بلکہ انصاف کے لئے ججوں کی مدد کرنا ہے ۔ وکلا صاحبان اپنے سائلوں کو صحیح مشورے دیں غلط مشورہ دے کر کوئی بھی وعدہ نہ کریںتاکہ شرمندگی کا سامنا نہ ہو ۔ انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان کے وکلاء زیادہ محنت اور تیاری کے ساتھ عدالتوں میں پیش ہوتے ہیں جو کہ یہاں کے وکلاء میں مثبت رجحان ہے جسٹس رانامحمد شمیم نے کہا کہ وکلاء کے مسائل سے آگاہ ہیں مختلف عدالتوں میں ایک ساتھ کیسز کی وجہ سے وکلا کو زیادہ بھاگ دوڈ کرنی پڑتی ہے ۔ ایسے میں ہماری کوشش ہے کہ وکلا ء کو ان کے کیسز کے بارے میں ایک ماہ قبل ہی پتہ چلے ایک ہفتہ قبل ان کے دفاتر اور گھروں کے پتہ پر لیٹرز بھجوا دیں اور ایک دن پہلے انہیں موبائل پیغام کے زریعے سے مطلع کیا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ سپریم اپیلٹ کورٹ کے وکلاء تنظیموں اور ایڈو کیٹ جنرل کے لئے جگہ فراہم کر دی گئی ہے جبکہ گلگت اور سکردو میں وکلا ء کے لئے پلاٹس کی کوشش کر رہے ہیں ایسی زمینیں وکلاء کو الاٹ کی جائیں جو کہ کہ متنازعہ نہ ہو اس سلسلے میں حکومت نے یقین دہانی بھی کرائی ہے ۔ اس سے قبل سپریم اپیلٹ کورٹ کے جج جسٹس جاوید اقبال اور بار کونسل کے نائب چیئر مین منظور ایڈو کیٹ نے بھی خطاب کرتے ہوئے لائسنس حاصل کرنے والے وکلاء کو مبار کباد دی انہوں نے کہا کہ بار اور بنچ کا چولی دامن کا ساتھ ہے ۔ وکلاء محنت و لگن کے ساتھ کام کریں تقریب کے دوران سپریم اپیلٹ کورٹ کے چیف جج جسٹس رانا محمد شمیم نے 24 وکلاء میں لائسنس تقسیم کئے ۔جس سے سپریم اپیلٹ کورٹ کے لائسنس یافتہ وکلاء کی تعداد 58 ہو گئی ہے تقریب کے دوران سیکریٹری قانون رحیم گل سمیت وکلاء کی کثیر تعداد شریک تھی

Facebook Comments
Share Button