تازہ ترین

Marquee xml rss feed

سابق وزیراعظم نوازشریف کل نیب میں تفتیش کے لیے پیش ہونگے، سینئر تجزیہ کار کادعویٰ-حکومت کے گزشتہ چار سال کے دوران موثر اقدامات کے تحت ریلوے کی آمدنی میں نمایاں اضافہ ہوا ہی,ریلوے اراضی کی 95 فیصد ڈیجیٹلائزیشن مکمل کرلی ہے‘ قبضہ مافیا کے خلاف کارروائی ... مزید-ایف آئی اے اور پی ٹی اے نے عائشہ گلالئی کے عمران خان پر الزامات کی فرانزک تحقیقات کو ناممکن قرار دے دیا-بدعنوانی کی روک تھام اور لوٹی گئی رقم کی وصولی نیب کی اولین ترجیح ہے، چیئرمین نیب قمر زمان چوہدری-معیشت مضبوط نہ ہو تو ایٹم بم بھی آزادی کی حفاظت نہیں کر سکتے، سیاسی استحکام معیشت کی مضبوطی کا واحد راستہ ہے دوسروں کی جنگیں لڑتے لڑتے ہم نے اپنے معاشرہ کو کھوکھلا ... مزید-مولانا فضل الرحمان کا آرٹیکل 62,63کو آئین سے نکالنے کی حمایت سے انکار صادق اور امین کی بنیادی شقوں کو نکالنا آئین سے مذاق ہے-احتساب عدالت ، سابق وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف کے خلاف رینٹل پاور کرپشن کیس میں دلائل مکمل ، فیصلہ محفوظ-عمران خان کا خیبرپختونخواہ کے خوبصورت علاقے کوہستان کا دورہ تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل، تحریک انصاف کے سربراہ نے دنیا بھر کے سیاحوں کو پاکستان آنے کی دعوت دے دی-میاں صاحب اپنی عقلمندی کی وجہ سے آج یہ دن دیکھ رہے ہیں، خورشید شاہ ملک میں کوئی سیاسی بحران نہیں صرف ایک جماعت میں بحران ہے، چیئرمین نیب کی تقرری کیلئے بطور اپوزیشن لیڈر ... مزید-تاثردرست نہیں کہ فوج کے تمام سربراہوں کے ساتھ مخالفت رہی، محمد نوازشریف قانون کی حکمرانی پریقین رکھتاہوں،کبھی بھی اداروں کے ساتھ ٹکراؤ کی پالیسی نہیں اپنائی،سپریم ... مزید

GB News

پانامہ کیس کا فیصلہ اخلاقی طور پر نواز شریف کے خلاف آیا، خورشید شاہ

Share Button

قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف سید خورشید احمد شاہ نے کہا ہے کہ پانامہ کیس کا فیصلہ اخلاقی طور پر نواز شریف کے خلاف ہی آیا ہے،تین ججز اپنے دو سینئر ساتھیوں سے سے انکاری نہیں ہوئے بس جے آئی ٹی کا کہا،(آج) جمعہ کو قومی اسمبلی و سینیٹ کی اپوزیشن جماعتوں کا مشترکہ اجلاس بلایا ہے جس میں پانامہ کیس فیصلے کا جائزہ لے کر پارلیمنٹ میں مشترکہ حکمت عملی پر غور کریں گے۔وہ جمعرات کو یہاں میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ میری نظر میں فیصلہ بڑا واضح ہے، دو ججز نے واضح کہا کہ نواز شریف کو ڈس کوالیفائی کیا جائے، تین ججز اپنے دو سینئر ساتھیوں سے سے انکاری نہیں ہوئے بس جے آئی ٹی کا کہا۔ خورشید شاہ نے کہا کہ ججز اس جے آئی ٹی کی بات کر رہے جن میں شامل ایف آئی اے نیب کو دوران سماعت خود برا بھلا، نا اہل کہا، جے آئی ٹی کے وزارت داخلہ یا خزانہ کے ماتحت افراد کیا تحقیقات کریں گے،نواز شریف کو اخلاقی طور پر اسٹیپ ڈائون ہو جانا چاہیئے۔تحریک انصاف کے ساتھ ہاتھ ملانے کے سوال پر انہوں نے کہا کہ سیاست میں کوئی آخری دوست یا آخری دشمن نہیں ہوتا،(آج) جمعہ کو قومی اسمبلی و سینیٹ کی اپوزیشن جماعتوں کا مشترکہ اجلاس بلایا ہے، پانامہ کیس فیصلے کا جائزہ لے کر پارلیمنٹ میں مشترکہ حکمت عملی پر غور کریں گے۔

Share Button