تازہ ترین

Marquee xml rss feed

عید کے موقع پر پولیس ش�داء کے ا�لخان� کو یاد رکھا جائے، صوبائی وزیر داخل� سندھ-پاکستانی نوجوان با صلاحیت اور اعلیٰ درج� کی ذ�انت کے حامل �یں، گورنر سندھ-پاسبان لیاری زون کے تحت �زاروں مستحق بچوں میں عید کے لباس تقسیم-لا�ور : اے ایس ای� کی کاروائی مسا�ر کے استقبال کے لئے آنے والے ش�ری کے قبضے سے ایک پسٹل، 2 میگزین اور 5 گولیاں برآمد-لا�ور :ایس پی سول لائن علی رضا کی سربرا�ی میں سکیورٹی خدشات کے باعث پی سی �وٹل میں �نگامی مشقیں کی گئی-لا�ور :عید ال�طر کے قریب آتے �ی گوشت، پھلوں اور شبزیوں کی قیمتوں میںاضا�� �و گیا-لا�ور : صوبائی دارلحکومت میں لگائے گئے رمضان بازار ایک روز قبل �ی ختم کر دئیے گئے جس کے باعث ش�ری م�نگے داموں اشیاء ضروریات خریدنے پر مجبور �و گئے �یں، مختل� علاقوں میں ... مزید-لا�ور : تھان� �یکٹری ایریا کی حدود میں موٹر سائیکل سوار شخص کی �ائرنگ 2 لڑکیوں پلوش� اور مشعل کر زخمی کر دیا-لا�ور : پولیس کی کاروائی منشیات �روش گر�تار ، اس کے قبضے سے 200 لٹر شراب برآمد-لا�ور :صوبائی دارلحکومت لا�ور میں علاق� غیر سے آنے والی گاڑی سے بڑی تعداد میں بارودی مواد برآمد کر کے 2 ملزمان کو گر�تار

GB News

وزیراعظم کے پاس مینڈیٹ عوام کی امانت ہے، استعفیٰ کیوں دیں، مریم اورنگزیب، سعد رفیق

مسلم لیگ (ن) کے رہنمائوں خواجہ سعد رفیق ، مریم اورنگزیب اور دانیال عزیز نے کہا ہے کہ پوری قوم کو کئی ماہ سے ہیجان میں مبتلا کیا گیا ‘ سوچی سمجھی سازش کے تحت دھرنوں اور الزام تراشیوں کے بعد پانامہ کا سہارا لیا گیا ‘ ہمارے کروڑوں ووٹرز سازش کی ناکامی پر خدا کے حضور سربسجود ہیں’ مسلم لیگ (ن) کے کارکن (آج) شکرانے کے نوافل ادا کریں گے ‘ عمران خان خوابوں میں وزیر اعظم بن چکے تھے ‘ وزیر اعظم بننے کا خواب دیکھنے میں کوئی حرج نہیں مگر دیوانوں جیسی حرکتیں کرنا مناسب نہیںہے ‘ عمران خان نے ایک لمحے کے لئے بھی شفاف الیکشن کے عدالتی فیصلے کو تسلیم نہیں کیا۔ وہ جمعرات کو پانامہ کیس کا فیصلہ آنے کے بعد پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے۔ وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ پاکستان مسلم لیگ(ن) کی قیادت کارکن اور سپورٹرز خدا کے شکر گزار ہیں۔ مسلم لیگ (ن) عدالت سے سرخرو ہو کر عوام کے سامنے آئی ہے۔ سازش کرنے والوں کو ایک بارپھر منہ کی کھانی پڑی۔ انہوں نے کہا کہ (آج) جمعہ کے دن کارکن شکرانے کے نوافل ادا کریں گے۔ وزیر اعظم کی مزید کامرانی کیلئے بھی خصوصی دعا ئیں ہوں گی۔ 2013ء کے انتخابات کے بعد عمران خان خوابوں میں و زیر اعظم بن چکے تھے۔ دھرنے کے دوران و زیر اعظم اور ان کی ٹیم نے انتہائی صبر کا مظاہرہ کیا تھا۔ انہوں نے کہاکہ اسلام آباد کا گھیرائو کرنے والے ناکام اور نامراد لوٹے۔ عمران خان دھرنے کے دوران ایمپائر کو آواز یں دیتے رہے مگر ان کی دال نہیں گلی۔ پاکستان کو لاک ڈائون کرنے کی خواہش صرف دشمنوں کی ہی ہو سکتی ہے۔ خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ کارکن سڑکوں پر تھے اور لیڈر بنی گالہ میں ورزش کرتے رہے اور درختوں پر چھلانگیں لگاتے رہے۔ وزیرریلوے نے کہا کہ پی ٹی آئی کی طرف سے منی لانڈرنگ کا کوئی بھی ثبوت عدالت عظمیٰ میں پیش نہیں کیا جا سکا ،عدالت عظمیٰ سے عمران خان کی ساتوں خواہشات یکسر مسترد ہوگئیں ، جے آئی ٹی بنانے کا حکم مسلم لیگ (ن) کے موقف کی تائید ہے ۔انہوں نے کہا کہ مہذب ملکوں میں وزیراعظم اپنے اداروں کے سامنے پیش ہوتے ہیں ،ہمارے لئے یہ کوئی انا کا مسئلہ نہیں ہے ۔خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ آصف زرداری توہین عدالت کے مرتکب ہوئے ہیں ،ان کا کھا کھا کر پیٹ نہیں بھرتا ،وہ خود عزیر بلوچ کے سوالوں کے جواب ہی دے دیں تو بڑی بات ہے اور کچھ نہیں چاہیے ۔انہوں نے کہا کہ آصف زرداری کی شوگر ملیں روزبروز بڑھ رہی ہیں ،اتنا پیسہ کہاں سے آرہا ہے ،انہوں نے کراچی کو کچرے کا ڈھیر اور سندھ کے شہروں کو کھنڈر بنا دیا ہے ،کراچی کے اربوں روپے کے فنڈز ان کے محلوں پر خرچ ہوگئے ،وزیراعظم کے سندھ کے دوروں سے پیپلزپارٹی کو کیوں تکلیف ہو رہی ہے ۔وزیر مملکت برائے اطلاعات ونشریات مریم اورنگزیب نے کہا کہ محمد نوازشریف واحد سیاستدان ہیںجنہوں نے تین نسلوں کا حساب دیا ،عمران خان نے ہمیشہ بہتان تراشی ، گالی اور الزامات کی سیاست کی جبکہ وزیراعظم نے جھوٹے الزامات کا بردباری سے مقابلہ کیا ،عمران خان نے متعدد بار مریم نواز پر جھوٹے الزامات لگائے ،اوئے اور بدتمیزی کی سیاست شروع کی ،خدا کے فضل سے سپریم کورٹ نے تمام جھوٹے الزامات کو مسترد کردیا ۔انہوں نے کہا کہ عدالت عظمیٰ کا فیصلہ وزیراعظم کے موقف کی تائیدہے ، عمران خان نے خیبرپختونخوا کے احتساب کمیشن کو تالا لگا دیا ، عمران کا طرز سیاست مسلم لیگ (ن) کا وطیرہ نہیں ہے ، انہوں نے اقتدار کی حسد میں منتخب وزیراعظم پر الزامات لگائے اور خود خیبرپختونخوا میں ایک بھی قابل ذکر کارنامہ سرانجام نہیں دیا ،انہوں نے اداروں کی تضحیک کی ،انکو اقتدار کے چار سال بعد کے پی میں پنجاب کے بڑے منصوبوں کی نقل کرنے پر مبارکباد دیتے ہیں ۔وزیرمملکت نے کہا کہ ملک میں انتشار، فساد اور بدامنی کا کریڈیٹ عمران خان کے حصے میں آتا ہے ، فساد ،افراتفری اور الزام تراشی عمران خان کی چار سالہ کارکردگی ہے ،کچھ ٹی وی چینلز دوربینیں لیکر عدالتی فیصلے کو پڑھ رہے ہیں ،وزیراعظم کے پاس مینڈیٹ عوام کی امانت ہے ،وہ استعفیٰ کیوں دیں ،حکومت عوام سے کئے ترقیاتی وعدے پورے کرے گی ۔

Share Button