تازہ ترین

Marquee xml rss feed

مشیرِوزیراعظم کا اختیارات سے تجاوز؛ اہل خانہ کا رعایتی ٹکٹوں پرمختلف ممالک کا مفت سفر-ہیواوے نے نیا چار کیمروں والا انتہائی سستا اسمارٹ فون متعارف کرا دیا-دوسری شادی کرنیوالے شوہر کو6ماہ قید و ایک لاکھ جرمانے کی سزا-گوجرخان، وارڈ نمبر 14صندل روڈ پر قتل کی واردات ، 36سالہ شخص کی لاش گھر سے بر آمد-گوجرخان، ہونہار طالب علم حسیب بٹ کا اعزاز-گوجرخان، گورنمنٹ امجد عنایت جنجوعہ شہید ہائی سکول بھاٹہ کا اعزاز-گورنمنٹ بوائز ہا ئی سکول زرعی فارم راولپنڈی کے ہونہار طالب علم حیان علی خان کی مقابلہ حسن قرائت میں راولپنڈی ڈویژن میں پہلی پوزیشن-مرکزی قبرستان کی سڑک کی تعمیر کیلئے فنڈزفراہم کرنے پر آزاد کشمیر قانون ساز اسمبلی کے ممبر حافظ احمد رضا قادری ایڈووکیٹ کا شکریہ-ْلاہور کے احتجاجی جلسے میں عمران خان او رشیخ رشید نے جو پارلیمنٹ کیخلاف بازاری اور گھٹیا زبان استعمال کی،شدید مذمت کرتے ہیں،پارلیمنٹ پر لعنت بھیجنے وا لے اسی پارلیمنٹ ... مزید-سپریم کورٹ کے حکم پر میونسپل کارپوریشن مری نے آپریشن کیلئے تیاریوں کو حتمی شکل دے دی

GB News

حکومت اور عسکری قوت کیسے ہم پلہ ہو سکتے ہیں ،چیئرمین سینیٹ

Share Button

چیئرمین سینیٹ میاں رضا ربانی نے قائد ایوان سینیٹر راجہ ظفر الحق اور اپوزیشن لیڈر چوہدری اعتزاز احسن سے رہنمائی مانگ لی کہ انہیں یہ بات سمجھ نہیں آرہی ہے کہ حکومت اور عسکری قوت کیسے ہم پلہ ہو سکتے ہیں ، آئین ،قوانین اور ضابطہ کار کے تحت مسلح افواج کا مکمل اختیار وفاقی حکومت کے پاس ہے اور فوج وزارت دفاع کے تحت اپنے فرائض انجام دیتی ہے ۔ اس امر کا اظہار انہوں نے جمعرات کی شام ایوان بالامیں نیوز لیکس کے معاملے پر بحث کے موقع پر کیا ۔ چیئرمین سینیٹ نے کہا کہ حکومت اور عسکری قوت کو ہم پلہ رکھا جا رہا ہے مجھے سمجھ نہیں آرہی ہے ایسا کیوں ہے ، قائدایوان اور اپوزیشن لیڈر میری رہنمائی کریں کیونکہ آئین اور قانون کے تحت مسلح افواج کا مکمل اختیار وفاقی حکومت کے پاس ہے اور متعلقہ آئینی شق میں وفاقی حکومت کی تشریح کردی گئی ہے ۔ انہوں نے ایوان میں رولز آف بزنس پڑھتے ہوئے کہا کہ فوج وزارت دفاع کے ماتحت ہے اوراس حوالے سے 1973کے رولز آف بزنس واضح ہیں اس حوالے سے میری رہنمائی کی جائے ۔ چیئرمین سینیٹ کی جانب سے اس رہنمائی کیلئے رجوع کرنے پر اپوزیشن لیڈر چوہدری اعتزاز احسن نے ابتدائی طور پر بیان دیا کہ جب آرمی چیف آگے آگے اور وزیردفاع پیچھے پیچھے چلتا ہے تو رولز کے حوالے نہیں چلتے۔

Facebook Comments
Share Button