تازہ ترین

Marquee xml rss feed

خادم حسین رضوی کا دھرنا ختم نہ کرنے کا اعلان کردیا-پی ٹی ٓئی کی مشکلات میں اضافہ، باغی رہنماوں نے خاموشی سے بڑی چال چل دی-اسحاق ڈار وطن واپس نہیں آرہے ،معاملات جوں کے توں پڑے ہیں اسلئے ملک کو فل ٹائم وزیرخزانہ کی ضرورت ہے، ایم کیوایم پاکستان اور پی ایس پی کا اتحاد ٹوٹتے ہی دونوں جماعتوں ... مزید-شہباز شریف اور چوہدری نثار کی چھٹی جبکہ شاہد خاقان اور نواز شریف میں دوریاں بڑھنے کا وقت قریب آ گیا ہے ختم نبوت کا مسئلہ اٹھا کیوں، حکومت کو راجہ ظفر الحق کی رپورٹ کو فی ... مزید-دنیا کے مشہور ترین یو سی براوزر کی گوگل پلے اسٹور سے چھٹی-سی پیک سے صوبہ بلوچستان کو سب سے زیادہ ترقی اور فائدہ ہو گا، توانائی انفراسٹرکچر کی فراہمی سے بلوچستان میں معاشی اور سماجی انقلاب آئے گا،نوجوانوں کو روزگار کے بھرپورمواقع ... مزید-پاکستان اور بھارت کے ڈی جی ملٹری آپریشنز کے مابین غیر اعلانیہ ہاٹ لائن رابطہ بھارتی فوج کی لائن آف کنٹرول کی مسلسل خلاف ورزیوں ، بے گناہ شہریوں کو نشانہ بنانے کا معاملہ ... مزید-مریم اورنگزیب کی سینئر صحافی مظہر اقبال کی ہمشیرہ اورسینئر صحافی ذوالفقار بیگ کے چچا کے انتقال پر تعزیت-شیخ رشید کی جانب سے عمران خان کو جمائما سے دوبارہ شادی کرنے کا مشورہ-دھرنا قائدین اور حکومت کے درمیان مذاکرات میں پیش رفت ، تحریک لبیک کے رہنمائوں نے شوریٰ سے مشاورت کیلئے حکومت سے وقت مانگ لیا ، حکومت کا دھرنے کے رہنمائوں کے خلاف مقدمات ... مزید

GB News

کل بھوشن دہشت گرد ہے، قونصلر رسائی کا حق نہیں رکھتا، پاکستان نے عالمی عدالت انصاف کا دائرہ کار چیلنج کردیا

Share Button

بھارت نے عالمی عدالت انصاف میں دہشتگرد کلبھوشن یادو کو مبینہ طورپر بنیادی انسانی حقو ق نہ ملنے کا ڈرامہ رچاتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ پاکستان کو یادیو کی سزائے موت کو معطل کرنے کی ہدایات جاری کی جائیں کیونکہ اس فیصلے سے کلبھوشن کے بنیادی حقوق مجروح ہوئے ہیں کلبھوشن بے قصور بھارتی شہری ہے اسے ویانا کنونشن کے تحت اسکے حقوق نہیں دیے جا رہے جبکہ پاکستان نے کلبھوشن یادیو سے متعلق عالمی عدالت انصاف کے دائرہ کار کو چیلنج کردیا، پاکستانی وکیل اوردفتر خارجہ کے افسر نے بھارت کو کراراجواب دیتے ہوئے کہا ہے کہ کمانڈر کلبھوشن یادیو کا کیس عالمی عدالت میںنہیں لا یا جاسکتا ، عدالت بھارتی درخواست مسترد کرے ،بھارتی درخواست میں بہت زیادہ خامیاں ہیں ،ویانہ کنونشن کے تحت عالمی عدالت انصاف کا دائرہ کار محدود ہے ، کمانڈر کلبھوشن یادی قونصلر رسائی کا حق نہیں رکھتا، دہشت گرد کو سزا دینا تمام ملکوں کی ذمہ داری ہے ، عوام اور سرزمین کی حفاظت کیلئے تمام قانونی ذرائع استعمال کریں گے ، کلبوشن کو ایران سے اغوا کر کے پاکستان لا کر اعتراف کروانے کا بھارتی دعویٰ مضحکہ خیز ہے،عدالت نے دونوں اطراف کے دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا۔پیر کونیدرلینڈز کے شہر دی ہیگ میں قائم عالمی عدالتِ انصاف نے انڈین بحریہ کے سابق افسر لبھوشن جادھو کو پاکستان میں پھانسی کی سزا سنائے جانے کے معاملے کی سماعت شروع کی ۔کیس کی سماعت کے پہلے مرحلے میں عالمی عدالت نے بھارت کے دلائل سنے۔پاکستان نے کلبھوشن یادیو سے متعلق عالمی عدالت انصاف کے دائرہ کار کو چیلنج کردیا ۔وزارت خارجہ کے افسر ڈاکٹر فیصل نے عالمی عدالت انصاف میں پاکستان کا موقف پیش کیا ۔ ڈاکٹر فیصل نے کہاکہ کلبھوشن نے پاکستان میںدہشت گردی کی کاروائیوں کا اعتراف ہے اور معصوم شہریوں کو نشانہ بنانے کا اعتراف کرچکا ہے ، پاکستان دہشت گردوں سے نہیں ڈرے گا ، کلبھوشن یادیو کی گرفتاری پر بھارت کو آگاہ کیا مگر بھارت نے کلبوشن یادیو کے پاسپورٹ کے مسئلے پر خاموشی اختیار کیے رکھی ۔ پاکستانی وکیل خاور قریشی نے اپنے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ کمانڈر کلبھوشن یادیو کا کیس عالمی عدالت میںنہیں لا یا جاسکتا ، عدالت سے بھارتی درخواستی مسترد کرنے کی درخواست کرتے ہیں ۔ کمانڈر کلبوشن یادیو کا معاملہ ہنگامی نوعیت کا نہیں ہے ، بھارتی درخواست میں بہت سے خامیاں موجود ہیں ، ویانہ کنونشن کے تحت عالمی عدالت انصاف کا دائرہ کار محدود ہے ، کمانڈر کلبھوشن یادی قونصلر رسائی کا حق نہیں رکھتا ۔ بھارت نے کلبھوشن یادیو کے فرضی پاسپورٹ پر کوئی ردعمل نہیں دیا ۔ بھارتی دلائل میں غلط بیانی سے کام لیا جا رہا ہے ۔ کمانڈر کلبھوشن یادیو کو پاکستان کے صوبے بلوچستان سے گرفتار کیا گیا ۔ بھارت نے پاکستان کی طرف سے فراہم کئے گئے شواہد عدالت میں پیش نہیں کیا ۔ کمانڈر یادیو کے بارے میں تحقیقات کیلئے بھارت سے تعاون کی درخواست کی تھی ۔ عالمی عدالت انصاف میںکلبھوشن یادیو کو ریلیف نہیں دیا جا سکتا۔ڈی جی سائوتھ ایشیا نے کہا کہ عالمی عدالت کو کلبھوشن کی اعترافی ویڈیو دیکھنی چاہئے ۔ بھارتی میڈیا نے عالمی عدالت کے خط کو بھی غلط طور پر پیش کیا ۔ خاور قریشی نے کہا کہ دہشت گرد کو سزا دینا تمام ملکوں کی ذمہ داری ہے ، عوام اور سرزمین کی حفاظت کیلئے تمام قانونی ذرائع استعمال کریں گے ۔ پاکستانی وکیل نے استدعا کی کہ عالمی عدالت کلبھوشن کے معاملے پر بھارت کی درخواست مسترد کر دے ۔ بھارتی درخواست میں بہت زیادہ خامیاں ہیں ۔ بھارت کی اپیل کا مقصد صرف اس لئے آرڈر حاصل کرنا ہے ۔ بھارت کے پاس کلبھوشن یادیو کے جعلی پاسپورٹ کی کیا دلیل ہے ؟۔انہوں نے کہا کہ بھارت نے تسلیم کیا کہ کلبوشن یادیو ان کا شہری ہے مگر اس کا بھارتی پاسپورٹ اور برتھ سٹرٹیفکیٹ پیش نہیں کیا ۔ عالمی عدالت انصاف قرار دے چکی ہے کہ قونصلر رسائی ریاست کا اپنا معاملہ ہے ۔ بھارت نے اگست 1999میں رن آف کچھ میں پاکستان کا طیارہ گرایا تھا جس پر پاکستان عالمی عدالت انصاف میں گیا تھا ۔ خاور قریشی نے کہا کہ کلبوشن کو ایران سے اغوا کر کے پاکستان لا کر اعتراف کروانے کا بھارتی دعویٰ مضحکہ خیز ہے ۔ سماعت کے آغاز میں بھارت نے عالمی عدالت انصاف سے اپیل کی کہ پاکستان کو کلبھوشن یادیو کی سزائے موت کو معطل کرنے کی ہدایات جاری کی جائیں کیونکہ اس فیصلے سے کلبھوشن کے بنیادی حقوق مجروح ہوئے ہیں۔اپنے دلائل کے دوران بھارتی وکلا کی ٹیم کے سربراہ ہریش سالوے نے توجہ پاکستان کے کلبھوشن یادیو تک قونصلر رسائی کے انکار پر ہی مرکوز رکھی۔سالوے کا کہنا تھا کہ موجودہ صورتحال انتہائی سنگین اور ہنگامی ہے، بھارت پاکستان کو مارچ 2016 سے اب تک متعدد مرتبہ کلبھوشن یادیو تک کونسلر رسائی دینے کی درخواست دے چکا ہے۔بھارتی وکیل نے عدالت سے کہا کہ کلبھوشن یادو ایک ‘بے قصور بھارتی شہری ہیں جو من گھڑت الزامات میں ایک سال سے زیادہ عرصے سے پاکستان میں قید ہیں، انہیں ویانا کنونشن کے تحت ان کے حقوق نہیں دیے جا رہے۔جج نے دونوں اطراف کے دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا۔جج نے کہا کہ عالمی عدالت انصاف میں بھارتی درخواست کی سماعت مکمل کر لی گئی ، عدالت بھارتی درخواست پر فیصلہ جلد سنائے گی ۔ عدالتی فیصلے کی تاریخ سے فریقین کو آگاہ کردیا جائے گا ۔ فریقین کے وکلاء عدالت کیلئے دستیاب رہیں ۔

Facebook Comments
Share Button