تازہ ترین

Marquee xml rss feed

مشیرِوزیراعظم کا اختیارات سے تجاوز؛ اہل خانہ کا رعایتی ٹکٹوں پرمختلف ممالک کا مفت سفر-ہیواوے نے نیا چار کیمروں والا انتہائی سستا اسمارٹ فون متعارف کرا دیا-دوسری شادی کرنیوالے شوہر کو6ماہ قید و ایک لاکھ جرمانے کی سزا-گوجرخان، وارڈ نمبر 14صندل روڈ پر قتل کی واردات ، 36سالہ شخص کی لاش گھر سے بر آمد-گوجرخان، ہونہار طالب علم حسیب بٹ کا اعزاز-گوجرخان، گورنمنٹ امجد عنایت جنجوعہ شہید ہائی سکول بھاٹہ کا اعزاز-گورنمنٹ بوائز ہا ئی سکول زرعی فارم راولپنڈی کے ہونہار طالب علم حیان علی خان کی مقابلہ حسن قرائت میں راولپنڈی ڈویژن میں پہلی پوزیشن-مرکزی قبرستان کی سڑک کی تعمیر کیلئے فنڈزفراہم کرنے پر آزاد کشمیر قانون ساز اسمبلی کے ممبر حافظ احمد رضا قادری ایڈووکیٹ کا شکریہ-ْلاہور کے احتجاجی جلسے میں عمران خان او رشیخ رشید نے جو پارلیمنٹ کیخلاف بازاری اور گھٹیا زبان استعمال کی،شدید مذمت کرتے ہیں،پارلیمنٹ پر لعنت بھیجنے وا لے اسی پارلیمنٹ ... مزید-سپریم کورٹ کے حکم پر میونسپل کارپوریشن مری نے آپریشن کیلئے تیاریوں کو حتمی شکل دے دی

GB News

ہمارا کوئی سیاسی مقصد نہیں، پوری دنیا کے ساتھ مل کر چلنا چاہتے ہیں، چینی صدر

Share Button

چین کے صدر شی چن پنگ نے کہا ہے کہ ہم کسی قسم کے سیاسی مقاصد کو لے کر آگے نہیں جارہے’ ہم پوری دنیا کے ساتھ مل کر کام کرنا چاہتے ہیں’ عالمی معیشت کو لاحق خطرات سے مشترکہ طور پر نمٹناچاہتے ہیں’ ون بیلٹ ون روڈ وژن سے دنیا کے تمام ممالک مستفید ہ وں گے’ منصوبے سے تجارت کو مزید فروغ ملے گا’ خطے میں معاشی خوشحالی آئے گی’ چین تعاون کے ذریعے ترقی کو فروغ دینے کے لئے پرعزم ہے’ ترقیاتی منصوبوں کے لئے پالیسی تعاون فراہم کریں گے۔ پیرکو بیجنگ میں میڈیا کانفرنس سے خطاب میں بیلٹ اینڈ روڈ فورم کے مشترکہ اعلامیہ کے اہم نکات بیان کرتے ہوئے صدر شی چن پنگ نے کہا کہ ون بیلٹ ون روڈ فورم میں دنیا کی اعلیٰ قیادت شریک ہے۔ فورم کے ذریعے دنیا کو مثبت پیغام پہنچا ہے۔ ہم پوری دنیا کے ساتھ مل کر کام کرنا چاہتے ہیں۔ انہوںنے کہا کہ عالمی معیشت کو لاحق خطرات سے مشترکہ طور پر نمٹنا چاہتے ہیں۔ ون بیلٹ ون روڈ وژن سے دنیا کے تمام ملک مستفید ہوں گے۔ روڈ فورم خطے کی معاشی ترقی میں تیزی لائے گا۔ چینی صدر نے کہا کہ منصوبہ خطے میں ترقی کا ضامن ہوگا اور ترقی کے مساوی مواقع فراہم کرے گا۔ بنیادی ڈھانچے ‘ شاہرائوں کا نیٹ ورک اور معیشت کی مضبوطی ترجیحات ہیں۔ ہم کسی قسم کے سیاسی مقاصدکو لے کر آگے نہیں جارہے۔ چین تعاون کے ذریعے ترقی کو فروغ دینے کے لئے پرعزم ہے۔ انہوں نے کہا کہ ترقیاتی منصوبوں کے لئے پالیسی تعاون فراہم کریں گے۔ منصوبے سے خطے میں تجارت کو مزید فروغ ملے گا۔ ون بیلٹ ون روڈ سے خطے میں معاشی خوشحالی آئے گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ شاہراہ ریشم فنڈ کے تحت نئے منصوبوں کے لئے 100ملین یوآن فراہم کئے جائیں گے اس کے علاوہ 300بلین یوآن کا ایک اور فنڈ بھی قائم کیا جائے گا۔ چائنہ ڈویلپمنٹ بنک اور چائنہ امپورٹ ایکسپورٹ بنک بھی بالترتیب 200ارب اور 300ارب یوآن کے فنڈ مختص کریں گے۔

Facebook Comments
Share Button