GB News

گلگت بلتستان میں آئینی اصلاحات کے لئے سفارشات فائنل

گلگت بلتستان میں آئینی اصلاحات کے لئے قائم کمیٹی کی سفارشات کوحتمی شکل دیدی گئی۔جمعرات کے روزآئینی اصلاحات کے لئے قائم دوسری کمیٹی کااجلاس وفاقی وزیرخزانہ اسحاق ڈار کی زیرصدارت ہوا۔اجلاس میں مشیرخارجہ سرتاج عزیز وفاقی وزیرقانون زاہدحامد،وفاقی وزیربرجیس طاہر، وزیراعلیٰ گلگت بلتستان چیف سیکرٹری سمیت دیگرحکام شریک ہوئے۔مشیرخارجہ سرتاج عزیز نے کے پی این کوبتایا کہ اجلاس میں سابقہ کمیٹی کی سفارشات کوفائنل کرلیاگیا اوراب ان سفارشات کووزیراعظم کوبھجوایاجائے گا جس کے بعد وفاقی کابینہ سے سفارشات کی منظوری لی جائے گی۔سرتاج عزیز نے کہا کہ اجلاس میں سابقہ کمیٹی کے تمام ممبران تھے تاہم وفاقی وزیرخزانہ اوروزیرقانون کوبھی اس بارشامل کرلیاگیاتاکہ آئینی اصلاحات کے لئے قانونی اور مالیاتی معاملات کوحل کیاجاسکے۔واضح رہے چندروزقبل وزیراعظم سے وزیراعلیٰ گلگت بلتستان کی ملاقات کے بعدسرکاری بیان میں کہاگیاتھا کہ کمیٹی کی سفارشات کو حتمی شکل دینے کے لئے ایک اورکمیٹی بنادی گئی ہے جس کااجلاس جمعرات کے روزہوا۔دوسری جانب ذرائع کاکہنا ہے کہ سابقہ کمیٹی نے پارلیمنٹ میں گلگت بلتستان سے3نمائندوں کی سفارش کی تھی گلگت،دیامراوربلتستان ڈویژن سے ایک ایک نمائندوں کولیئے جانے کی سفارش کی گئی ہے۔دوسری جانب کونسل سے بعض محکمے گلگت بلتستان کومنتقل کرنے کے معاملے پر ڈیڈلاک پایاجاتا ہے محکموں کی منتقلی کی سفارش کووفاق سے کئی اہم عہدیداروں کی جانب سے شدیدمخالفت کاسامنا ہے۔

Share Button