تازہ ترین

Marquee xml rss feed

خادم حسین رضوی کا دھرنا ختم نہ کرنے کا اعلان کردیا-پی ٹی ٓئی کی مشکلات میں اضافہ، باغی رہنماوں نے خاموشی سے بڑی چال چل دی-اسحاق ڈار وطن واپس نہیں آرہے ،معاملات جوں کے توں پڑے ہیں اسلئے ملک کو فل ٹائم وزیرخزانہ کی ضرورت ہے، ایم کیوایم پاکستان اور پی ایس پی کا اتحاد ٹوٹتے ہی دونوں جماعتوں ... مزید-شہباز شریف اور چوہدری نثار کی چھٹی جبکہ شاہد خاقان اور نواز شریف میں دوریاں بڑھنے کا وقت قریب آ گیا ہے ختم نبوت کا مسئلہ اٹھا کیوں، حکومت کو راجہ ظفر الحق کی رپورٹ کو فی ... مزید-دنیا کے مشہور ترین یو سی براوزر کی گوگل پلے اسٹور سے چھٹی-سی پیک سے صوبہ بلوچستان کو سب سے زیادہ ترقی اور فائدہ ہو گا، توانائی انفراسٹرکچر کی فراہمی سے بلوچستان میں معاشی اور سماجی انقلاب آئے گا،نوجوانوں کو روزگار کے بھرپورمواقع ... مزید-پاکستان اور بھارت کے ڈی جی ملٹری آپریشنز کے مابین غیر اعلانیہ ہاٹ لائن رابطہ بھارتی فوج کی لائن آف کنٹرول کی مسلسل خلاف ورزیوں ، بے گناہ شہریوں کو نشانہ بنانے کا معاملہ ... مزید-مریم اورنگزیب کی سینئر صحافی مظہر اقبال کی ہمشیرہ اورسینئر صحافی ذوالفقار بیگ کے چچا کے انتقال پر تعزیت-شیخ رشید کی جانب سے عمران خان کو جمائما سے دوبارہ شادی کرنے کا مشورہ-دھرنا قائدین اور حکومت کے درمیان مذاکرات میں پیش رفت ، تحریک لبیک کے رہنمائوں نے شوریٰ سے مشاورت کیلئے حکومت سے وقت مانگ لیا ، حکومت کا دھرنے کے رہنمائوں کے خلاف مقدمات ... مزید

GB News

عمران خان لندن فلیٹس کی ادائیگیوں کا بتائیں، سپریم کورٹ

Share Button

چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے عمران خان نااہلی کیس کی سماعت کے دوران ریمارکس دیتے ہوئے کہا ہے کہ عمران خان لندن فلیٹس کی ملکیت تسلیم کرتے ہیں تو بتائیں ادائیگیاں کیسے کی گئیں، ہم نے صرف فلیٹ کی ادائیگی کا ثبوت مانگا ہے لندن فلیٹ کی قیمت عمران خان نے ادا کی، یہ ایشو ہم نے اٹھایا ہے درخواست گزار نے نہیںمقدمات جلد نمٹانا چاہتے ہیں۔ جمعرات کو میڈیا رپورٹس کے مطابق چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 3 رکنی بینچ نے عمران خان نااہلی کیس کی سماعت کی۔ عدالتی استفسارپرپی ٹی آئی کے وکیل فیصل چوہدری نے کہا کہ الیکشن کمیشن کے جواب پرجواب الجواب جمع کرادیا ہے، غیرملکی فنڈنگ سے متعلق نصف ریکارڈ موصول ہوگیا ہے، ریکارڈ موصول ہونے پر ایک ہفتے میں جمع کرادیا جائے گا، جس پر چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ انور منصور کو جواب جمع کرانا تھا، ہمیں عدالتی حکم پر عملدرآمد سے غرض ہے، اگست میں کچھ ججز کو بیرون ممالک جانا ہے، ججز اپنی 10 ہفتوں کی چھٹیوں کو کم کرکے 2،2 ہفتوں کی چھٹیاں کررہے ہیں، چاہتے ہیں کہ مقدمہ جلد ختم ہو تاکہ دوسرے کیس بھی سن سکیں لیکن کیس جلد نمٹا نے کی کوشش کرتے ہیں لیکن صورتحال کی وجہ سے تاخیر ہوتی ہے ۔سماعت کے دوران عمران خان کے وکیل نعیم بخاری نے دلائل میں کہا کہ ان کی عمران خان اور انور منصور سے بات ہوئی ہے۔ انور منصور ہارٹ سرجری کے لئے اسپتال میں ہیں، وہ علاج کے بعد 27 جولائی تک واپس آسکتے ہیں، انہوں نے کہا کہ عدالت نے کرکٹ آمدن سے متعلق آبزرویشن دی تھی، لندن فلیٹس کی کرکٹ آمدن سے خریداری پر کسی نے اعتراض نہیں اٹھایا۔حنیف عباسی کے وکیل اکرم شیخ نے نکتہ اٹھایا کہ عمران خان کے خلاف کیس فراڈ کا ہے، ایمنسٹی اسکیم سے فائدہ عمران خان نے اٹھایا، نیازی سروسز نے نہیں، جس پر جسٹس فیصل عرب نے ریمارکس دیئے کہ آپ کے موقف میں تضاد ہے، کبھی کہتے ہیں فلیٹ آف شور کمپنی کا ہے، کبھی آپ کہتے ہیں فلیٹ عمران خان کا ہے جو ظاہر نہیں کیا۔چیف جسٹس میاں ثاقب نثارنے استفسار کیا کہ سمجھ نہیں آرہا یہ مقدمہ ٹرائل ہے یا انکوائری، میں نے بیرون ملک جائیداد نہیں خریدی اس لئے طریقہ کار سے واقف نہیں، آف شور کمپنیاں عموما پیسے چھپانے اور منی لانڈرنگ کے لیے استعمال ہوتی ہیں، ایمانداری کا سوال آگیا ہے جو کہ عوامی عہدہ رکھنے والا شخص ہے، ہم نے صرف فلیٹ کی ادائیگی کا ثبوت مانگا ہے کیونکہ ہم اپنی مکمل تسلی کرنا چاہتے ہیں، عدالت دیکھنا چاہتی ہے کہ کیا لندن فلیٹ کی قیمت عمران خان نے ادا کی، یہ پیسہ پاکستان سے باہر تو نہیں گیا، یہ ایشو ہم نے اٹھایا ہے درخواست گزار نے نہیں، ایک لاکھ 17 ہزارپاونڈ لندن فلیٹس کے لئے ادا کئے گئے، بقایا رقم کیش ادا نہیں ہوئی ہوگی، سوال یہ ہے کہ غیر ملکی کمائی کا کوئی ثبوت ہے، ایک مدت بتادیں جس میں دستاویزات جمع ہوجائیں۔

Facebook Comments
Share Button