GB News

راول ڈیم میں کیمیکل اور فضلے سے مچھلیوں کی اموات

وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کے راول ڈیم میں کیمیکل پھینکنے کے معاملے کا مقدمہ مقامی مافیا کے خلاف تھانہ سیکرٹریٹ میں درج کرلیا گیاہے’تھانہ سیکرٹریٹ میں درج کروائی گئی درخواست کے ساتھ راول ڈیم کے پانی کی ابتدائی کیمیکل رپورٹ بھی منسلک کی گئی ہے۔ رپورٹ کے مطابق ڈیم کے پانی کی کوالٹی کے تمام پیرامیٹرز نارمل ہیں تاہم مردہ مچھلیوں کی جانچ میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ پانی میں کوئی زہریلا مادہ موجود تھا جو مچھلیوں کو موت کا سبب بنا۔مقدمے میں راول ڈیم کی آلودگی میں اضافے کا ذمہ دار مقامی مافیا کو ٹھہرایا گیا ہے۔کہا جاتا ہے گذشتہ ایک ماہ سے رات کے وقت ٹرکوں میں فضلہ اور کیمیکل ڈیم میں پھینکا جاتا تھا۔البتہ لیبارٹری ٹیسٹ سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ راول ڈیم کا پانی پینے کے لیے مناسب ہے۔ اس سے بڑا المیہ اور کیا ہو گا کہ ہم اپنے ہاتھوں اپنے ماحول کو تباہ اور صاف پانی کے ذخائر کو آلودہ کر رہے ہیں لیکن اس حوالے سے ہمیں کوئی تشویش لاحق نہیں یہی وجہ ہے کہ ڈیم میں کیمیکل کے باعث لاکھوں کی تعداد میں مچھلیاں مر گئیں اور ان کے باعث علاقے میں تعفن پیدا ہو گیا ‘فشریز ڈپارٹمنٹ کی شکایت کے بعد راول ڈیم کا پانی اور مردہ مچھلیوں کا فرانزک ٹیسٹ کیا گیا جس سے پتہ چلا کہ ایسا کیمیکل کی موجودگی کے سبب ہوا سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ یہ کون لوگ ہیں جوکیمیکل ڈیم میں ڈالتے رہے ایسے کسی بھی مافیا کو ہرگز کوئی رعایت نہیں دی جانی چاہیے اور انہیں سخت سے سخت سزا دی جانا ضروری ہے ۔

Share Button