تازہ ترین

Marquee xml rss feed

وزیراعلیٰ پنجاب ش�بازشری� کا سابق و�اقی وزیر میر نواز خان مروت کے انتقال پر اظ�ار تعزیت-وزیراعلیٰ کی ورکنگ بائونڈری پر بھارتی ا�واج کی بلااشتعال �ائرنگ سے ش�ید �ونیوالے ش�ریوں کے لواحقین کیلئے مالی امداد کا اعلان ش�داء کے لواحقین کو 5لاکھ �ی کس کے حساب ... مزید-وزیراعلیٰ پنجاب ش�بازشری� کا سعودی عرب کے قومی دن کے موقع پر پیغام-وزیراعلیٰ کی زیرصدارت اجلاس، پاک میڈیکل �یلتھ نمائش کے انعقاد کے انتظامات کا جائز� نمائش ما� رواں کے آخر میں منعقد �وگی،ترک وزارت صحت کے اعلیٰ حکام، ترک اور پاکستانی ... مزید-محرم الحرام ، عوام کے جان و مال کے تح�ظ اورامن و امان کے قیام کیلئے سکیورٹی کے �ول پرو� انتظامات کیے جائیں‘ش�بازشری� گزشت� برسوں سے بڑھ کر سکیورٹی انتظامات کئے جائیں ... مزید-وزیراعلیٰ پنجاب کی سیالکوٹ ورکنگ بائونڈری پر بھارتی �وج کی �ائرنگ و گول� باری کی شدید مذمت قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر اظ�ار ا�سوس، ش�داء کے لواحقین سے دلی �مدردی ... مزید-آئند� مالی سال کے بجٹ میں شعب� تعلیم میں مجموعی طور پر 345ارب روپے کی رقم مختص کی گئی �ے،رانا مش�ود احمد-چیئر مین سینیٹ کا ایوان بالا اجلاس میں وزیر مملکت داخل� کی عدم حاضری پر شدید اظ�اربر�می وزارت داخل� سے متعلق 33 سوالات �یں، وزیر مملکت داخل� ابھی تک ن�یں آئے، ی� سینیٹ ... مزید-پی آئی اے میں مالی بحران کے باعث کیبن کریو کو دو ما� کی ادائیگی ن�یں کی جاسکی ، جون 2017ء تک 3.2 ملین روپے �لائنگ الائونس کی مد میں دیئے گئے، دو ما� کے بقایا جات آئند� ایک ... مزید-پرویز مشر� کا بیان پیپلزپارٹی کے خلا� ساز ش �ے ،این اے 120 الیکشن میں ایک خاص �ضا بنائی گئی ،عوام بلاول بھٹو کے ساتھ �ے،جو ایم این اے بننے کا ا�ل ن�یں و� پارٹی صدارت کا بھی ... مزید

GB News

بھارتی راء کی مذموم سرگرمیاں اور ہماری ذمہ داریاں

Share Button

چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی جنرل زبیر محمود حیات کا کہنا ہے کہ بھارتی خفیہ ایجنسی راء افغانستان اور دیگر علاقوں سے پاکستان بالخصوص بلوچستان میں بدامنی پیدا کرنے کی کوششوں میں مصروف ہے’ہم پاک چین اقتصادی راہداری منصوبے کے خلاف راء کی سازشوں سے بھی واقف ہیں۔بھارتی خفیہ ایجنسی ملک میں بے چینی اورعدم استحکام پیدا کرکے اربوں ڈالر مالیت کے سی پیک منصوبے کو سبوتاژ کرنے کی کوشش کررہی ہے۔پاکستان پرامن بقائے باہمی پر یقین رکھتا ہے جبکہ افغانستان میں استحکام، سلامتی اور سیکیورٹی قائم ہونا پاکستان کی سیکیورٹی کے لیے انتہائی ضروری ہے۔انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ افغانستان میں استحکام کے لیے پاکستان کی دو طرفہ اور کثیرالجہتی کوششیں جاری رکھی جائیں گی۔پاکستان کو علیحدہ کرنے کی کوششیں ماضی میں ناکام ہوئیں اور مستقبل میں بھی ایسا ہی ہوگا، ہم مربوط اجتماعی کوششوں کے ذریعے تمام خطرات سے نمٹنے کیلئے پرعزم ہیں۔یہ بات محتاج بیان نہیں ہے کہ بھارت کی جانب سے کی جانے والی پاکستان مخالف سرگرمیاں کسی سے ڈھکی چھپی نہیں ہیں۔ بھارت نے کبھی پاکستان کو نقصان پہنچانے کا کوئی موقع ہاتھ سے نہیں جانے دیا۔ پاکستان کو دو حصوں میں تقسیم کرنے سے لے کر اپنے ایجنٹوں کے ذریعے پاکستان میں دہشتگردی و بدامنی کو فروغ دینے تک بھارت نے ہمیشہ پاکستان کی پیٹھ میں چھرا گھونپا ہے۔ بھارت نے اپنے ایجنٹوں کے ذریعے ہمیشہ پاکستان کو نقصان پہنچایا ہے، جس کے لیے ملک کے مختلف شہروں میں اپنے ایجنٹوں کی مدد سے قتل و غارت گری اور بم، دھماکے کروا کر ہر موڑ پر پاکستان کو عدم استحکام سے دوچار کرنے کی کوشش کی ہے، جبکہ بھارت کی بدنام زمانہ خفیہ تنظیم راء کی جانب سے پاکستان کے سادہ لوح عوام کو مذہبی، سیاسی اور لسانی عصبیت کی بنا پر آپس میں لڑا کر بھی پاکستان کو عدم استحکام کا شکار کرنے کی کوشش کی جاتی ہے۔ بھارتی ایجنٹوں کی جانب سے ایک عرصے سے علیحدگی پسندوں کو استعمال کرتے ہوئے بلوچستان کو پاکستان سے توڑنے کی کوشش بھی جاری ہے۔ راء بلوچستان میں بدامنی پھیلانے میں سرگرم عمل ہے اور بلوچستان میں علیحدگی پسندوں کی نہ صرف صوبے میں بھرپور معاونت کرتی ہے بلکہ انہیں بے تحاشہ فنڈنگ کرنا، اسلحہ پہنچانا اور دوسرے ممالک کے ویزے فراہم کرنے کا سارا انتظام راء کرتی ہے۔ بلوچستان اور ملک کے دیگر کئی علاقوں سے راء کے ایجنٹس پکڑے جانے کے ساتھ ساتھ بھاری مقدار میں بھارتی اسلحہ بھی متعدد بار پکڑا جاتا رہا ہے۔ اب بھارت نے پاکستان دشمنی میں عالمی قوانین کی بھی دھجیاں بھی بکھیر کر رکھ دی ہیں۔ بھارتی سفارتکار بھی جاسوسی میں ملوث رہے ہیں بھارت نے سفارتی اصولوں کو بھی پامال کرتے ہوئے سفارتکاروں کے روپ میں راء اور آئی بی کے جاسوسوں اور دہشتگردوں کو پاکستان میں متعین کیا۔ پاکستان کلبھوشن یادیو کے بعد بھارت کا ایک اور بڑا جاسوسی نیٹ ورک بے نقاب کرچکا ہے۔ یہ تمام لوگ سی پیک کے حوالے سے کئی سطح پر کام کر رہے تھے، جن میں چین اور پاکستان کے درمیان غلط فہمیاں پیدا کرنے اور کراچی، گلگت بلتستان اور بلوچستان میں عدم استحکام پیدا کرنے میں سرگرم تھے۔ بلوچستان اور سندھ خاص طور پر کراچی میں جاسوسی، تخریبی، دہشت گردی اور عدم استحکام کی سرگرمیوں کی حمایت، چین، پاکستان اقتصادی راہداری سی پیک کو سبوتاژ کرنا، گلگت اور بلوچستان میں بد امنی پھیلانا، تجارتی سرگرمیوں کی آڑ میں اپنے ایجنٹوں اور آلہ کاروں کے نیٹ ورک میں توسیع، مختلف سرگرمیوں کے ذریعے پاکستان اور افغانستان کے تعلقات میں بگاڑ پیدا کرنا، سوشل میڈیا اور سیاسی حلقوں میں بھارتی ایجنٹوں کی دراندازی تاکہ پاکستان کے مفادات کو نقصان پہنچانے کے لیے انہیں پروپیگنڈا کے مقاصد کے لیے استعمال کیا جاسکے۔ پاکستان کو دہشت گرد ریاست قرار دینے کے لیے من گھڑت شواہد پیش کرنا، کالعدم تحریک طالبان پاکستان کے مختلف دھڑوں سے معاملہ کاری، ملک کی مذہبی اقلیتوں کو ریاست مخالف سرگرمیوں پر اکسانا، فرقہ واریت کو ہوا دینا، انسانی حقوق سے متعلق امور پر پاکستان کے خلاف پروپیگنڈا، آزاد جموں وکشمیر میں ایسی تخریبی کارروائیوں کا فروغ دینا جن سے کشمیر کاز کو نقصان پہنچ سکے، مقبوضہ کشمیر میں جاری آزادی کی تحریک کے بارے میں عالمی برادری کو گمراہ کرنا وغیرہ ان بھارتی ایجنٹوں کے مقاصد میں شامل تھا۔پاکستان چین اقتصادی راہداری کے خلاف بھارتی سازشوں کے مکمل ثبوت موجود ہیں اور یہ بھارتی جاسوس، پاکستان چین اقتصادی راہداری کو سبوتاژ کرنے، صوبوں میں عدم استحکام پیدا کرنے، گلگت بلتستان میں بدامنی پھیلانے اور تجارتی سرگرمیوں کے بھیس میں اپنے کارندوں اور ایجنٹوں کے نیٹ ورک کو توسیع دینے کا کام کرتے رہے۔پاکستان سے سفارتکاروں کے روپ میں بھارتی جاسوسوں کے گرفتار ہونے کے بعد یہ بات واضح ہوگئی ہے کہ بھارت نہ صرف دہشت گردی کی سرگرمیوں کے فروغ اور دہشت گردوں کی مالی مدد کرنے میں ملوث پایا گیا ہے، بلکہ بھارت، دو خودمختار ممالک کے درمیان تعلقات برقرار رکھنے کے حوالے سے سفارتی آداب اور طریقہ کار کی خلاف ورزی کا بھی مرتکب ہوا ہے۔پاکستان نے پاک چین اقتصادی راہداری منصوبے کو سبوتاژ کرنے کی بھارتی سازشوں سے چینی حکام کو بھی آگاہ کیا ہے۔پاکستان اور چین سی پیک کے خلاف بھارتی سازشوں کا ڈٹ کر مقابلہ کرنے کا فیصلہ بھی کر چکے ہیں لیکن یہ ہم سب کی ذمہ داری ہے کہ بھارتی سازشوں کے تدارک کیلئے کوئی دقیقہ فروگزاشت نہ رکھیں ۔

Facebook Comments
Share Button