تازہ ترین

Marquee xml rss feed

بلاول، بختاور اور آصفہ کی یادگارِ شہدائے کارساز پر حاضری جائے حادثہ پر دن بھر رہنماں اور کارکنوں کی آمد جاری رہی، سکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے-سپیکر اور ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی کی دیوالی کے تہوار پر ہندو برادری کو مبارک باد-پاکستان میں بلیو وہیل جیسی ایک اور خطرناک گیم تیار کر لی گئی، کئی نوجوانوں کو نشانہ بنا دیے جانے کا انکشاف, امریکی ایجنسی کی اطلاع پر ایف آئی اے نے جوہر ٹاون سے نوجونواں ... مزید-وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ سے پی سی بی کے چیئرمین نجم سیٹھی کی ملاقات آئندہ فروری میں کراچی میں پی ایس ایل کے 4 میچ کرانے پر اتفاق-ناگہانی صورتحال پر قابو پانے کیلئے بروقت ردعمل فیصلہ کن ہوتا ہے، شیخ انصر عزیز-اسلامی جمعیت طلبہ پاکستان کے تحت آؤبدلیں پاکستان مہم کے دوسرے مرحلے تعلیم سے تعمیر پاکستان کے سلسلے میں (کل) تعلیمی ریفرنڈم ہوگا-امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق ہفتہ 26اکتوبر کو صوابی گرائونڈ میں شمولیتی اجتماع سے خطاب کریں-مشال خان قتل کیس کا مرکزی گواہ اپنے بیان سے منحرف ہو گیا اگلی سماعت 25اکتوبر تک ملتوی گواہوں پر دبائو ڈالا جا رہا ہے وکیل کا الزام،معاملہ جلد ہائی کورٹ میں لے کر جائیں ... مزید-محنت کشوں کیلئے پاکستان پیپلز پارٹی کے منشور کے مطابق اقدامات کررہے ہیں، صوبائی وزیر محنت سید ناصر حسین شاہ-پاکستان پیپلز پارٹی نے میڈیا کو ہمیشہ اہمیت دی اور صحافیوں کے مسائل حل کئے ہیں،وزیر اطلاعات سید ناصر حسین شاہ

GB News

دفتری اوقات میں کسی بھی ملازم کی غیر حاضری برداشت نہیں کی جائے گی ، حفیظ الرحمن

Share Button

گلگت(پ ر) وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے ڈائریکٹریٹ آف ایجوکیشن گلگت کا بغیر پروٹوکول ڈھائی بجے اچانک دورہ کیا ملازمین کی حاضری چیک کی۔ ڈائریکٹر ایجوکیشن، ڈپٹی ڈائریکٹر لیگل سمیت متعدد ملازمین کی غیرحاضری پر برہمی کا اظہارکرتے ہوئے نوٹسز جاری کرنے کا حکم دیا۔ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے اپنے دورے کے موقع پر کہاکہ ملازمین ہر صورت اپنی حاضری کو یقینی بنائیں دفتری اوقات میں کسی بھی ملازم کی غیر حاضری برداشت نہیں کی جائے گی ۔ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہاکہ عوام کی شکایات میڈیا اور دیگر ذرائع سے موصول ہورہی ہیں کہ 2 بجے کے بعد سرکاری دفاتر میں ملازمین غیر حاضرپائے جاتے ہیں سیکریٹریز اور دیگر سینئر آفیسران ماتحت دفتروں میں دفتری اوقات کے دوران ملازمین کی حاضری یقینی بنائیں آئندہ کسی بھی سرکاری دفترکا ہنگامی دورے کے موقع پر دفتری اوقات میں ملازمین کی عدم حاضری کی صورت میں معطلی سمیت سخت محکمانہ کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔وزیر اعلیٰ سیکریٹریٹ کا اچانک دورہ کیا صوبائی سیکریٹری داخلہ، سیکریٹری سروسز، سیکریٹری تعلیم، سیکریٹری پلاننگ، سیکریٹری قانون اورماتحت آفیسران کی دفاتر میں موجودگی پر اطمینان کا اظہارکرتے ہوئے دفتری اوقات میں اپنے دفاتر میں موجودگی کوسراہا ۔ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہاکہ صوبے میں ای گورننس کا نظام متعارف کرایا جارہا ہے جو وقت کی اہم ضرورت ہے بائیومیٹرک حاضری کے نظام کو سنٹرلائز سسٹم سے منسلک کیا جائے اور تمام دفاتر میں فائلوں کو بھی کمپیوٹرائز نظام سے منسلک کرنے کیلئے اقدامات کئے جائیں۔ صوبے میں آئی ٹی کا ایک الگ شعبہ بنایاجائے جو تمام نظام کو مانیٹر کرسکے۔وزیر اعلیٰ نے ڈی ایچ کیو ہسپتال ایمرجنسی کا اچانک دورہ کیا۔ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے ایمرجنسی میں موجود مریضوں اور تیماداروں سے مسائل دریافت کئے۔ اس موقع پر وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے موٹر سائیکل سے ایکسیڈنٹ سے زخمی ہونے والے مزیض سے بھی اس کے مسائل پوچھے ۔ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے اس موقع پر ڈی ایچ کیوہسپتال گلگت میں ضروری طبی آلات کی عدم دستیابی کی شکایت کا نوٹس لیتے ہوئے سیکریٹری صحت اور ڈی ایم ایس ڈی ایچ کیوہسپتال گلگت کو تمام ضروری طبی آلات کی ہسپتال میں دستیابی ہر صورت یقینی بنانے کی ہدایت کی۔ وزیر اعلیٰ تحصیل آفس گلگت کا اچانک دورہ کیا۔ اس موقع پر وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے اسسٹنٹ کمشنر گلگت اورماتحت عملے کی تحصیل میں موجودگی کوسراہتے ہوئے کہاکہ سائلین کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کئے جائیں اور دفتری اوقات میں تمام ملازمین کی حاضری کو یقینی بنایاجائے۔وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا ہے کہ قائد نواز شریف کی ہدایت پر ہی گلگت واپس آیا ہوں ہمارے کارکن اور ہمارے عہدیدار، پارٹی کے ورکرزہمارے قائد کی ریلی میں شریک ہیں ہماری جماعت نے مشرف کے دور میں بھی اپنے خرچے پر جماعت کے تقریبات اور لاہورتک جلسوں میں شرکت کی ہے ۔ اسلام آباد سے لاہور ریلی میں ہمارے صوبائی وزرائ، ممبران اسمبلی نے کارکنوں کے ساتھ تعاون کیاہے اپنے تنخواہ سے فنڈز دیئے ہیں کوئی سرکاری وسائل کا استعمال نہیں کیا گیا ہماری جماعت ایک نظریاتی جماعت ہے جو لوگ نظریہ، اصول اور ایک ایجنڈے کے تحت کسی جماعت سے وابستہ ہوتے ہیں ان کے منظور نظر پیسے نہیں ہوتے جو جماعتیں ہم پر تنقید کررہے ہیں ان کا مقصد پیسے بنانا رہا ہے کچھ جماعتوںکا اقتدار میں آنے کا مقصد صرف اپنی تجوریاں بھرنا ہوتا ہے اسی لئے اسلام آباد لاہور ریلی میں سرکاری وسائل کا استعمال کرنے کے الزامات لگا رہے ہیں جو حقائق کے بالکل خلاف ہیں ہمارے کسی کارکن نے سرکاری وسائل کا استعمال نہیں کیا بلکہ جماعت کے ساتھ نظریے اور ایجنڈے کی وجہ سے وابستگی ہے اسی لئے اپنے خرچے پر ہمارے کارکن اسلام آباد سے لاہور ریلی میں شریک ہیں۔

Facebook Comments
Share Button