GB News

وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن کے زیر صدارت جی بی ڈی ڈبلیو پی کا اجلاس

Share Button

گلگت (پ ر)وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن کے زیر صدارت جی بی ڈی ڈبلیو پی کا اجلاس ہوا جس میں چیف کورٹ بلڈنگ کی تعمیر، سپریم اپیلٹ کورٹ کے چیف جسٹس اور دیگر دوججز کے رہائش گاہوں کی تعمیر، گلگت ڈویلپمنٹ اتھارٹی کے زیر تحت منصوبے، 3.2میگاواٹ ہائیڈرو پاور پروجیکٹ بٹوٹ نومل، 6 میگاواٹ ہائیڈرو پاور پروجیکٹ کارگاہ نالہ، 3.5 میگاواٹ ہائیڈرو پاور پروجیکٹ مقپون برج سکردو، پولی ٹیکنیکل کالج گلگت، قربان علی روڈ شاہراہ قراقرم تا مرتضیٰ آبادتا سمائر نگر 15 کلو میٹر شاہراہ کی توسیع اور میٹلنگ اور سکردو کے شاہراہوں کی ری کارپٹنگ جن کی لاگت تقریباً 3ارب 8 کروڑ کے منصوبے کی منظوری دی گئی۔ گلگت بلتستان ڈویلپمنٹ ورکنگ پارٹی کے اجلاس میں9 منصوبوں کی منظوری دی گئی جن میں گلگت میں چیف کورٹ کے بلڈنگ کی تعمیر جس پر تقریباً 48 کروڑ روپے کی لاگت آئے گی، سپریم اپیلٹ کورٹ کے چیف جسٹس اور دیگر دو ججز کی رہائش گاہوں کے تعمیرکی نظرثانی کے منصوبے کی منظوری دی گئی جس پر 11 کروڑ 92 لاکھ47 ہزار روپے کی لاگت آئے گی، گلگت ڈویلپمنٹ اتھارٹی کے موڈیفیکیشن منصوبے کی منظوری دی گئی جس پر 26 کروڑ 13 روپے کی لاگت آئے گی،3.2 میگاواٹ ہائیڈرو پاور پروجیکٹ بٹوٹ نومل گلگت کے نظرثانی منصوبے کی منظوری دی گئی جس پر 32 کروڑ 16 لاکھ روپے کی لاگت آئے گی، 6 میگاواٹ ہائیڈرو پاور پروجیکٹ کارگاہ نالہ گلگت کی منظوری دی گئی جس پر 75 کروڑ روپے کی لاگت آئے گی، 3.5 میگاواٹ ہائیڈرو پاورپروجیکٹ مقپون برج سکردوکی منظوری دی گئی جس پر 74 کروڑ 62 لاکھ روپے کی لاگت آئے گی، پولی ٹیکنیکل کالج گلگت کی نظرثانی منصوبے کی منظوری دی گئی جس پر 20 کروڑ روپے کی لاگت آئے گی، میٹلنگ اورتوسیعی منصوبہ قربان علی روڈ شاہراہ قراقرم تا مرتضیٰ آباد تا سمائر نگر(15 کلو میٹر) نظرثانی منصوبے کی منظوری دی گئی جس پر 6 کروڑ روپے کی لاگت آئے گی اور سکردو کے شاہراہوں کی ری کارپٹنگ کے منصوبے کی بھی حتمی منظوری دی گئی جس پر 15 کروڑ روپے کی لاگت آئے گی۔وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے گلگت بلتستان ڈویلپمنٹ ورکنگ پارٹی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اداروں کی بہتر کارکردگی کی وجہ سے ترقیاتی منصوبوں کی معیار اور رفتار میں بہتری آرہی ہے صوبے میں مالی وسائل کی کمی نہیں ہے وفاقی حکومت گلگت بلتستان حکومت کے ساتھ مکمل تعاون کررہی ہے سرکاری تعمیرات کو جدید اور بین الاقوامی طرز پر تعمیر کیا جائے تمام میگا منصوبوں کی تعمیر سے قبل محکمہ تعمیرات ان منصوبوں کے سٹریکچر اور ڈرائننگ ڈیزائننگ کے بارے میں مکمل 3D بریفنگ تیارکرے ۔وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا ہے کہ گلگت اورسکردو کے شاہراہوں کی میٹلنگ اور پیج ورک کے کام میں تیزی لائی جائے گلگت کے اہم شاہراہ پی آئی اے لنک روڈ، چائنہ ٹریڈ سے منسلک شاہراہ، ڈومیال لنک روڈ، ایئرپورٹ روڈ، پارک لنک روڈ، ہسپتال روڈاور گورنر ہائوس روڈکی میٹلنگ اور پیج ورک کے کام کا فوری آغاز کیا جائے۔ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے پاکستان کی مدرٹریسا جرمن نژاد ڈاکٹر رتھ فائو کی وفات پر انہیں خرات عقیدت پیش کیا ہے اس حوالے سے وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے آج امپھری کے مقام پر لیپروسی ہسپتال امپھری کا دورہ کیا جس کا سنگ بنیاد ڈاکٹر رتھ فائو نے رکھا تھا ۔اس موقع پر وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے ڈاکٹر رتھ فائو ہسپتال کو 10 بیڈ ہسپتال بنانے کا اعلان کیا اور سیکریٹری صحت کو فوری کاغذی کارروائی مکمل کرنے کی ہدایت کی۔ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے ڈاکٹر رتھ فائو ہسپتال میں فوری طور پر ڈاکٹرز کی تعیناتی ،ضروری سٹاف اور ادویات کی فراہمی کے احکامات دیئے۔ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے اس موقع پر کہاکہ صحت کا شعبہ ہمارے حکومت کے اولین ترجیحات میں شامل ہے صوبے کے ہسپتالوں میں بتدریج بہتری آرہی ہے حکومتی اقدامات کی وجہ سے ڈاکٹروں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال کا ماسٹر پلان تیار کیا جارہاہے جس کے تحت 40 کروڑ کی رقم اس ہسپتال پر لگائی جائے گی۔ پنجاب حکومت کے تعاون سے شہید سیف الرحمن ہسپتال کو مثالی ہسپتال بنانے کیلئے 60 کروڑ کا منصوبہ شروع کیاجا رہاہے اور پنجاب حکومت کے تعاون سے 40 کروڑ کے ڈائیلسسز مشینوں کی خریداری عمل میں لائی جارہی ہے صوبے میں مریضوں کو مفت ڈائیلسسز کی سہولت فراہم کی جائے گی صوبے کا پہلا ایم آر آئی سنٹر 15 اگست کو محکمہ صحت گلگت کے حوالے کیا جارہا ہے اور اسی مہینے میں ایم آر آئی مشین کا باقاعدہ افتتاح کیا جائے گا۔

 

Facebook Comments
Share Button