GB News

تعلیمی اداروں میں انرجی و کولڈ ڈرنکس کی خیر و فروخت و استعمال پر پابندی

Share Button

گلگت (پ ر) سب ڈویژن گلگت کے حدود میں موجود تعلیمی اداروں میں انرجی و کولڈ ڈرنکس کی خیر و فروخت و استعمال پر پابندی عائد کردی گئی۔،تفصیلات کے مطابق پنجاب ایجوکیشن انسٹیٹیوشن فوڈ سٹینڈرڈ ریگولیشن کے تحت کئے جانے والے فیصلے کیمطابق ملک کے دیگر حصوں کی طرح سب ڈویژن گلگت کی حدود میں بھی موجو د تعلیمی اداروں میں انرجی و کولڈ ڈرنکس کی خرید و فروخت اور استعمال پر سب ڈویژن مجسٹریٹ گلگت نوید احمد کی طرف سے مکمل پابندی عائد کر دی گئی ہے ۔پابندی کا اطلاق 14اگست سے ہوگا اور غیر معینہ مدت تک نافذالعمل رہے گا ۔واضح رہے کہ حالیہ دنوں میں پنجاب فوڈ اتھارٹی کیطرف سے کرائی جانے والی تحقیق کے نتیجے میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ ایسے تمام انرجی و کولا ڈرنکس جن میں فاسفورس ایسڈ اور کیفین استعمال کیا جاتا ہے وہ بچوں کی جسمانی نشونما بالخصوص ہڈیوں کیلئے شدید نقصاندہ ہوتا ہے جوکہ بڑھتی عمر میں بچوں کی ذہنی و جسمانی نشونما کو متاثر کر سکتا ہے لہذا اس ریسرچ کے نتیجے میں جہاں ملک کے دیگر حصوں میں تعلیمی اداروں میں ایسے تمام ڈرنکس کے استعمال پر پابندی عائد کی گئی ہے گلگت انتظامیہ نے بھی عوامی مفاد کو مدنظر رکھتے ہوئے اپنی حدود میں موجود پبلک و پرائیوٹ سکولوں ،کالجوں یونیورسٹیز ، پرائیوٹ تعلیمی اداروں ،کوچنگ سنٹروں میں کاربونیٹڈ کولا اور انر جی ڈرنکس کے استعمال پر مکمل پابندی عائد کر دی ہے اور انکے استعمال پر سب ڈویژن گلگت کی حدود میں دفعہ 144کا نفاذ کر دیا گیا ہے جبکہ ایجوکیشن کے آفیسران کو بھی اس فیصلے سے آگاہ کر دیا گیا ہے جو کہ انتظامیہ کے ساتھ ملکر اس فیصلے کے نفاذ کو یقینی بنائیںگے ۔یہ فیصلہ 14اگست 2017سے نافذالعمل ہوگا جسکے حوالے سے تما م تعلیمی اداروں کو آگاہ کردیا جائے گا۔

Facebook Comments
Share Button