تازہ ترین

Marquee xml rss feed

مشیرِوزیراعظم کا اختیارات سے تجاوز؛ اہل خانہ کا رعایتی ٹکٹوں پرمختلف ممالک کا مفت سفر-ہیواوے نے نیا چار کیمروں والا انتہائی سستا اسمارٹ فون متعارف کرا دیا-دوسری شادی کرنیوالے شوہر کو6ماہ قید و ایک لاکھ جرمانے کی سزا-گوجرخان، وارڈ نمبر 14صندل روڈ پر قتل کی واردات ، 36سالہ شخص کی لاش گھر سے بر آمد-گوجرخان، ہونہار طالب علم حسیب بٹ کا اعزاز-گوجرخان، گورنمنٹ امجد عنایت جنجوعہ شہید ہائی سکول بھاٹہ کا اعزاز-گورنمنٹ بوائز ہا ئی سکول زرعی فارم راولپنڈی کے ہونہار طالب علم حیان علی خان کی مقابلہ حسن قرائت میں راولپنڈی ڈویژن میں پہلی پوزیشن-مرکزی قبرستان کی سڑک کی تعمیر کیلئے فنڈزفراہم کرنے پر آزاد کشمیر قانون ساز اسمبلی کے ممبر حافظ احمد رضا قادری ایڈووکیٹ کا شکریہ-ْلاہور کے احتجاجی جلسے میں عمران خان او رشیخ رشید نے جو پارلیمنٹ کیخلاف بازاری اور گھٹیا زبان استعمال کی،شدید مذمت کرتے ہیں،پارلیمنٹ پر لعنت بھیجنے وا لے اسی پارلیمنٹ ... مزید-سپریم کورٹ کے حکم پر میونسپل کارپوریشن مری نے آپریشن کیلئے تیاریوں کو حتمی شکل دے دی

GB News

برکس اعلامیے کے بعدامریکہ نے پاکستان سے ڈومورکامطالبہ دہردایا

Share Button

دنیا میں استحکام کے لیے تعمیری کردار ادا کرنے کے لیے برکس اتحاد کے اراکین کی حوصلہ افزائی کرتے ہوئے امریکا نے پاکستان کو ایک بار پھر یاددہانی کرائی ہے کہ وہ دہشت گردی کی جانب اپنے رویے کو تبدیل کرے، عالمی گورننس اور استحکام کے لیے ہم برکس فورم کے تعمیری کردار کی حوصلہ افزائی کرتے ہیں۔خیال رہے کہ برکس سربراہان کے حالیہ اجلاس میں برازیل، روس، بھارت، چین اور جنوبی افریقا نے افغانستان میں جاری اشتعال انگیزی کے فوری خاتمے کا مطالبہ کیا تھا۔یہ پہلا موقع تھا جب برکس نے مبینہ طور پر پاکستان میں موجود عسکریت پسند گروہوں کو علاقائی سلامتی کے لیے خطرہ قرار دیتے ہوئے ان کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا گیا تھا۔برکس اعلامیے پر تبصرہ کرتے ہوئے امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان کا کہنا تھا کہ عالمی گورننس اور استحکام کے لیے ہم برکس فورم کے تعمیری کردار کی حوصلہ افزائی کرتے ہیں۔نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق امریکی عہدے دار نے برکس کی جانب سے شمالی کوریا کے حالیہ جوہری تجربے کی تردید کا بھی خیرمقدم کیا اور پاکستان کو جنوب ایشیائی خطے بشمول واشنگٹن کے دعوے کے مطابق فاٹا) میں فعال عسکریت پسند گروہوں کے خاتمے کی یاددہانی کرائی۔

Facebook Comments
Share Button