تازہ ترین

Marquee xml rss feed

پاک فوج نےالیکشن میں دھاندلی نہ ہونےکی یقین دہانی کروائی 2013ء میں بھی انتخابات دھاندلی کا شکارہوگئےتھے،کراچی میں ایم کیوایم اور پنجاب میں ن لیگ نےدھاندلی کی۔پی ٹی آئی ... مزید-کلثوم نوازکی بیماری ڈھونگ ہے،ہمارےبھی وہاں ذرائع ہیں،نعیم الحق کلثوم نوازتیزی سےصحتیاب ہورہی ہیں، ہماری دعائیں ان کیساتھ ہیں،دعا ہے کہ کلثوم نوازجلدازجلد صحتیاب ہوکر ... مزید-عوامی ورکرز پارٹی کا تحریک انصاف ،ن لیگ اور دیگر سیاسی جماعتوں کے امیدواروں کو ایک ہی پلیٹ فارم پر اپنا منشور عوام کے سامنے پیش کرنے کا چیلنج نتخابات کے موقع پر ہی نظر ... مزید-نوازشریف کے ساتھ کیا اختلافات تھے مناسب وقت پر سچ سچ بتائوں گا ، کوئی ٹکٹ کے ساتھ آئے یا بغیر ٹکٹ کے یہاں کے عوام انہیں رد کریں گے، مجھے کشمیریوں کے قاتل راج ناتھ کو جواب ... مزید-صاف پانی سیکنڈل کیس ،نیب کا شہباز شریف کیلئے 25 سے زائد سوالات پر مشتمل سوالنامہ تیار-پشاور،مزدور کسان پارٹی کا انتخابات 2018میں قومی وطن پارٹی کے امیدواروں کی مکمل حمایت کا اعلان-پی ٹی آئی ایک پاکستان کا نعرہ لگا رہی ہے اور پارٹی ٹکٹ امیروں اور سرمایہ داروں میں تقسیم کئے، آفتاب شیر پائو ہم نے پارٹی ٹکٹوں کی تقسیم میرٹ پر کی ہے اور اہل امیدواروں ... مزید-متحدہ مجلس عمل پی کے 79 کے زیر اہتمام علماء کنونشن کل ہو گا،ملک نوشاد خان-تحریک انصاف سمیت دیگرسیاسی جماعتیں ایم ایم اے کے پانچ سالہ دوراقتدارکامقابلہ نہیں کرسکتی ہیں،حاجی غلام علی-آنے والے الیکشن انتہائی اہم اور اس ملک کی تقدیر کے لئے فیصلہ کن ہیں، اسد قیصر

GB News

وفاقی حکومت نے جگلوٹ سکردو روڈ منصوبے کے لئے 86کروڑ روپے جاری کردیئے

Share Button

وفاقی حکومت نے گلگت بلتستان میں جگلوٹ سے سکردو شہر تک 167 کلو میٹر سڑک کے توسیعی منصوبہ پر کام شروع کرانے کیلئے86کروڑ40 لاکھ 70ہزار روپے جاری کردیئے ہیں۔دستاویز کے مطابق وفاقی حکومت نے پبلک سیکٹر ڈو یلپمنٹ پروگرام میں شامل اہمیت کے حامل منصوبوں کیلئے جاری ترقیاتی فنڈز میں سے گلگت بلتستان میں جگلوٹ سے سکردو شہر تک 167 کلو میٹر سڑک کے توسیعی منصوبے کیلئے بھی86 کروڑ40 لاکھ 70 ہزار روپے کی ابتدائی قسط جاری کردی ہے۔جگلوٹ سکردو روڈ کے توسیعی منصوبے کیلئے رواں مالی سال 2017-18کے وفاقی بجٹ میں مجموعی طور پر 8 ارب50 کروڑ روپے مختص کیے گئے تھے جس میں سے اس منصوبہ کیلئے درکار اراضی کے حصول کیلئے1ارب 50کروڑ روپے جبکہ جگلوٹ سے سکردو تک 167 کلو میٹر سڑک کی توسیع اور بہتری کے منصوبہ کیلئے کل 7 ارب روپے مختص کیے گئے تھے۔دستاویز کے مطابق اب تک اس منصوبہ پر10 کروڑ 40 لاکھ روپے خرچ کیے جاچکے ہیں۔واضح رہے کہ قومی اقتصادی کونسل کی ایگزیکٹیوکمیٹی نے رواں سال جولائی میں ہونے والی اجلاس کے دوران جگلوٹ سے سکردو تک 167 کلو میٹر سڑک کی توسیع اور بہتری کے منصوبہ کیلئے مجموعی طور پر کل 32 ارب32کروڑ56 لاکھ روپے کی منظوری دیدی تھی۔تاہم دوسری طرف سات سال قبل3 نومبر 2010 کو ہونے والی قومی اقتصادی کونسل کی ایکزیکٹیو کمیٹی نے منصوبے کیلئے مجموعی طور پر 22 ارب15کروڑ40 لاکھ 37 ہزار روپے کی منظوری دیدی تھی تاہم منصوبہ پر تعمیراتی کام میں تاخیر کے باعث تخمینہ لاگت میں تقریبا 10 ارب روپے کا اضافہ ہوا ہے۔یاد رہے جگلوٹ سکردو روڑ کا توسیعی منصوبہ وہاں کے عوام کا ایک دیرینہ مطالبہ تھا کیونکہ اس سڑک کی خستہ حالی کے باعث یہاں سالانہ کئی ٹریفک حادثات پیش آتے ہیںجس کے نتیجے میں قیمتی انسانی جانیں ضائع ہونے کے ساتھ مسافروں کو دوران سفر شدید زہنی و جسمانی مشکلات کا سامنا رہتا ہے ۔سڑک کی توسیع سے نہ صرف انسانی جانیں ضائع ہونے سے بچ پائیں گی بلکہ مسافروں کیلئے سفر بھی آسان اور پرسکون ہوسکے گا اور اس کا سارا کریڈٹ مسلم لیگ نواز کی صوبائی اور وفاقی حکومت کو ملے گی۔

Facebook Comments
Share Button