تازہ ترین

Marquee xml rss feed

مشیرِوزیراعظم کا اختیارات سے تجاوز؛ اہل خانہ کا رعایتی ٹکٹوں پرمختلف ممالک کا مفت سفر-ہیواوے نے نیا چار کیمروں والا انتہائی سستا اسمارٹ فون متعارف کرا دیا-دوسری شادی کرنیوالے شوہر کو6ماہ قید و ایک لاکھ جرمانے کی سزا-گوجرخان، وارڈ نمبر 14صندل روڈ پر قتل کی واردات ، 36سالہ شخص کی لاش گھر سے بر آمد-گوجرخان، ہونہار طالب علم حسیب بٹ کا اعزاز-گوجرخان، گورنمنٹ امجد عنایت جنجوعہ شہید ہائی سکول بھاٹہ کا اعزاز-گورنمنٹ بوائز ہا ئی سکول زرعی فارم راولپنڈی کے ہونہار طالب علم حیان علی خان کی مقابلہ حسن قرائت میں راولپنڈی ڈویژن میں پہلی پوزیشن-مرکزی قبرستان کی سڑک کی تعمیر کیلئے فنڈزفراہم کرنے پر آزاد کشمیر قانون ساز اسمبلی کے ممبر حافظ احمد رضا قادری ایڈووکیٹ کا شکریہ-ْلاہور کے احتجاجی جلسے میں عمران خان او رشیخ رشید نے جو پارلیمنٹ کیخلاف بازاری اور گھٹیا زبان استعمال کی،شدید مذمت کرتے ہیں،پارلیمنٹ پر لعنت بھیجنے وا لے اسی پارلیمنٹ ... مزید-سپریم کورٹ کے حکم پر میونسپل کارپوریشن مری نے آپریشن کیلئے تیاریوں کو حتمی شکل دے دی

GB News

گلگت بلتستان کی آئینی حیثیت :وزیراعظم نے کمیٹی کودوبارہ فعال کردیا، نوٹیفکیشن جاری

Share Button

اسلام آباد(غلام عباس سے)وزیراعظم پاکستان شاہدخاقان عباسی نے گلگت بلتستان کی آئینی حیثیت کے تعین کے لئے بنائی گئی کمیٹی کودوبارہ فعال کردیا اورباقاعدہ نوٹیفکیشن جاری کردیا ہے۔کمیٹی کے سربراہ اور پلاننگ کمیشن کے ڈپٹی چیئرمین سرتاج عزیز نے کے پی این سے گفتگوکرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم نے کمیٹی کوفعال بنانے کے لئے ری نوٹیفائی کردیا ہے۔ سفارشات مکمل ہیں اوراگلے ہفتے وزیراعظم کوپیش کی جائیں گے۔سرتاج عزیز نے کہا کہ29جولائی کوکمیٹی نے کام مکمل کیاتھا اوراسی روزاجلاس ہوناتھا جس میں سفارشات وزیراعظم کے سامنے پیش کی جانی تھیں لیکن اسی روزسپریم کورٹ کے فیصلے کے بعداجلاس ملتوی ہوگیا اورکمیٹی بھی ختم ہوگئی۔اب دوبارہ نوٹیفکیشن جاری ہوگیا ہے اورآئندہ ہفتے وزیراعظم کو سفارشات پیش کی جائیں گی۔اگلے ہفتے کمیٹی کااجلاس ہوگا۔وزیراعظم سفارشات کوکابینہ کے اجلاس میں پیش کریں گے اور اس کے بعد باقاعدہ منظوری لی جائے گی۔واضح رہے سرتاج عزیزکی سربراہی میں قائم کمیٹی نے گلگت بلتستان کے آئینی حقوق کے حوالے سے سفارشات مکمل کی ہیں۔سفارشات کی تیاری میں اہم سٹیک ہولڈرزسے مشاورت کی گئی ہے۔تاہم سفارشات کے نکات کوابھی تک پبلک نہیں کیاگیااوریہ بات ابھی بھی تشنہ طلب ہے کہ آخرگلگت بلتستان کوکون سے آئینی حقوق ملیں گے۔دوسری جانب بعض حلقے اس خدشے کااظہارکررہے ہیں کہ گلگت بلتستان کی آئینی حیثیت کے تعین کے حوالے سے کسی بھی قسم کی پیشرفت مشکل نظرآتی ہے کیونکہ ملکی سیاسی صورتحال کے تناظر میں وفاقی حکومت بھنور میں ہیں اور مسلم لیگ ن اپنی سیاسی بقاکی جنگ لڑرہی ہے اس صورتحال میں گلگت بلتستان پرتوجہ مشکل نظرآتی ہے۔

Facebook Comments
Share Button