تازہ ترین

Marquee xml rss feed

خادم حسین رضوی کا دھرنا ختم نہ کرنے کا اعلان کردیا-پی ٹی ٓئی کی مشکلات میں اضافہ، باغی رہنماوں نے خاموشی سے بڑی چال چل دی-اسحاق ڈار وطن واپس نہیں آرہے ،معاملات جوں کے توں پڑے ہیں اسلئے ملک کو فل ٹائم وزیرخزانہ کی ضرورت ہے، ایم کیوایم پاکستان اور پی ایس پی کا اتحاد ٹوٹتے ہی دونوں جماعتوں ... مزید-شہباز شریف اور چوہدری نثار کی چھٹی جبکہ شاہد خاقان اور نواز شریف میں دوریاں بڑھنے کا وقت قریب آ گیا ہے ختم نبوت کا مسئلہ اٹھا کیوں، حکومت کو راجہ ظفر الحق کی رپورٹ کو فی ... مزید-دنیا کے مشہور ترین یو سی براوزر کی گوگل پلے اسٹور سے چھٹی-سی پیک سے صوبہ بلوچستان کو سب سے زیادہ ترقی اور فائدہ ہو گا، توانائی انفراسٹرکچر کی فراہمی سے بلوچستان میں معاشی اور سماجی انقلاب آئے گا،نوجوانوں کو روزگار کے بھرپورمواقع ... مزید-پاکستان اور بھارت کے ڈی جی ملٹری آپریشنز کے مابین غیر اعلانیہ ہاٹ لائن رابطہ بھارتی فوج کی لائن آف کنٹرول کی مسلسل خلاف ورزیوں ، بے گناہ شہریوں کو نشانہ بنانے کا معاملہ ... مزید-مریم اورنگزیب کی سینئر صحافی مظہر اقبال کی ہمشیرہ اورسینئر صحافی ذوالفقار بیگ کے چچا کے انتقال پر تعزیت-شیخ رشید کی جانب سے عمران خان کو جمائما سے دوبارہ شادی کرنے کا مشورہ-دھرنا قائدین اور حکومت کے درمیان مذاکرات میں پیش رفت ، تحریک لبیک کے رہنمائوں نے شوریٰ سے مشاورت کیلئے حکومت سے وقت مانگ لیا ، حکومت کا دھرنے کے رہنمائوں کے خلاف مقدمات ... مزید

GB News

وفاقی حکومت نے گلگت بلتستان میں کینسر ہسپتال کی تعمیر کیلئے17کروڑ روپے جاری کردیا

Share Button

اسلام آباد(شبیر حسین سے) وفاقی حکومت نے گلگت بلتستان میںکینسر ہسپتال کی تعمیر کیلئے17کروڑ روپے جاری کردیا ہے۔کینسر ہسپتال کو تعمیر کا کام تین برسوں کے دوران مکمل کیا جائے گا جس پر کل 2 ارب34کروڑ28لاکھ روپے لاگت آئیگی۔دستاویز کے مطابق وفاقی حکومت نے پاکستان اٹامک انرجی کمشین کے انتظام گلگت بلتستان میں تعمیر ہونے والے کینسر ہسپتال کے منصوبہ پر تعمیراتی کام شروع کرانے کیلئے17کروڑ روپے کی ابتدائی قسط جاری کردی ہے۔گلگت بلتستان میں بننے والا گلگت انسٹی ٹیوٹ آف نیوکلیئر میڈیسن، آنکولوجی اینڈ ریڈیو تھراپی کی تعمیرکے منصوبے پر کل2ارب34کروڑ28 لاکھ روپے لاگت آئے گی۔ مذکورہ منصوبہ کیلئے وفاقی حکومت نے رواں مالی سال کے وفاقی بجٹ میں85کروڑ روپے مختص کررکھی ہے جس میں گذشتہ ہفتے پلاننگ کمیشن نے اس منصوبہ کیلئے 17کروڑ روپے کی ابتدائی قسط جاری کردی ہے۔زرائع کے مطابق رواں سال 24 جولائی کو ہونے والی سنٹرل ڈویلپمنٹ ورکنگ پارٹی اجلاس نے بھی اس منصوبہ کیلئے2 ارب30کروڑ روپے کی منظوری دیدی تھی۔ واضح رہے کہ پاکستان اٹامک انرجی کمیشن کے زیر انتظام گلگت میں بننے والی مذکورہ کینسر ہسپتال گلگت بلتستان میں اس نوعیت کا پہلاہسپتال ہے،اس سے قبل گلگت بلتستان میںکینسر کا کوئی ہسپتال تعمیر نہ ہوسکا ہے جس کے باعث کینسر کے مرض میں مبتلاء مریض اسلام آباد سمیت ملک کے دیگر علاقوں میں منتقل کئے جاتے تھے تاہم اس منصوبہ کی تکمیل سے گلگت بلتستان میں کینسر کے مرض میں مبتلاء مریضوں کو گھر کی دہلیز پر علاج و معالج کی سہولت دستیاب ہو گی اور کم خرچ اور کم وقت میں ان کا باآسانی علاج ممکن ہو سکے گا۔

Facebook Comments
Share Button