تازہ ترین

Marquee xml rss feed

اسفند یار ولی نے بھی عمران خان کے اگلے وزیر اعظم ہونے کی پیش گوئی کر دی عمران خان جیتیں گے یا جتوائیں گے لیکن عمران خان اگلا وزیر اعظم ہے،سربراہ اے این پی-آئی جی پنجاب کا نواب سراج رئیسانی ، ہارون بشیر بلور سمیت دیگر افراد کی شہادت پر گہرے رنج و غم کا اظہار-رحیم یار خان پولیس کے سپیشل آپریشن یونٹ کی کچے کے علاقے میں کارروائی، آپریشن میںڈاکو نادر سکھانی مارا گیا ڈاکوئوں کی قید سے گیارہ مغوی بیوپاریوں کو بحفاظت بازیاب ... مزید-شفاف الیکشن کیلئے ضابطہ اخلاق پر عمل کرنا ہر کسی کیلئے یکساں لازم ہے، خلاف ورزی کی صورت میں بلاتفریق کارروائی کی جا رہی ہے ،صوبائی وزیر اطلاعات احمد وقاص ریاض-الیکشن کمیشن تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کی مبینہ نامناسب تقاریر پر پابندی عائد کرے،مریم اورنگزیب-نگران وزیراعلیٰ پنجاب سے نائیجیریا کے 7 رکنی وفدکی ملاقات نائیجیرین وفد کا دورہ باہمی تعلقات کے نئے دور کا نقطہ آغاز ثابت ہوگا، ڈاکٹر حسن عسکری پاکستان بہت شاندار ملک ... مزید-25 جولائی کو شیر پر مہر لگا کر نواز شریف اور مسلم لیگ (ن ) کو کامیاب بنانا ہے ‘شہباز شریف ان اندھیروں میں بھی منزل تک پہنچائیں گے ، اللہ نے موقع دیا تو پانچ سال میں کئی محاذ ... مزید-پیپلز پارٹی کے گڑھ میں میں پاکستان تحریک انصاف کا تاریخی جلسہ ،عوام کے ٹھاٹھیں مارتے سمندر نے عمران کو لبیک کہا جیکب آباد میں ہزاروں کارکنان نے جلسے میں شرکت کر کے تحریک ... مزید-اٹک پولیس کا سرچ آپریشن، ناجائز اسلحہ بر آمد-الیکشن کمیشن نے مرُدوں کو بھی ووٹ ڈا لنے کی اجازت دے دی ووٹر لسٹ میں سینکڑوں مرُدوں کے نام شا مل

GB News

توانائی بحران نے معیشت کو نقصان اور عوام کی زندگی کو بری طرح متاثر کیا ، سرتاج عزیز

Share Button

اسلام آباد (آئی این پی)ڈپٹی چیئرمین پلاننگ کمیشن سرتاج عزیزنے کہا ہے کہ پا کستان ایک دہائی سے توانائی بحران کا شکار ہے ،توانائی بحران نے معیشت کو نقصان اور عوام کی زندگی کو بڑی طرح طرح متاثر کیا گزشتہ تین سال میں بجلی کے شعبے میں خاطر خواہ کام ہواسی پیک سے 17 ہزارمیگاواٹ بجلی پیدا ہو گی، توانائی بحران نے معیشت کو نقصان اور عوام کی زندگی کو بری طرح متاثر کیا ہے جس کے نتیجے میں 2006 سے 2013 کے درمیان اقتصادی ترقی کی شرح نمو سست ہو کر 3 فیصد سے بھی کم رہ گئی تھی ۔ توانائی کے متبادل ذرائع سے تین ہزار میگا واٹ کے منصوبوں پر بھی کام جاری ہے۔ اضافی بیس ہزار میگا واٹ کے منصوبوں پر کام جاری ہے۔2018 تک 9 ہزار میگاواٹ سی پیک سے حاصل ہوںگے ،پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے تحت چینی کمپنیوں کے ساتھ توانائی کے منصوبوں پر کام جاری ہے۔ماضی میں تھرمل ذرائع سے مہنگی بجلی کے منصوبے لگائے گئے ،درآمدی مہنگے ذرائع کے بجائے ایل این جی مکس اور ہائیڈرل سے سستی بجلی پیدا کرنے کے منصوبوں پر کام جاری ہے۔داسو اور بھاشا ڈیم پر کام شروع کردیا گیا ہے،دونوں منصوبوں سے 9ہزار میگا واٹ بجلی حاصل ہوگی۔ پیداوار میں اضافے کے ساتھ بجلی کی ترسیل اور تقسیم کے نظام پر بھی توجہ دے رہے ہیں ۔ اسلام آباد میں یونیورسٹی آف انجئنرنگ اینڈ ٹیکنالوجی پشاور کی جانب سے پائیدار توانائی اور جدید ٹیکنالوجی پر ایک روزہ بین الاقوامی کانفرنس کا انعقاد کیا گیا جس میں مہمان خصوصی ڈپٹی چئیرمین پلاننگ کمیشن سرتاج عزیز نے شرکت کی ۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مہمان خصوصی سرتاج عزیز نے کہا کہ توانائی بحران نے معیشت کو نقصان اور عوام کی زندگی کو بری طرح متاثر کیا ہے جس کے نتیجے میں 2006 سے 2013 کے درمیان اقتصادی ترقی کی شرح نمو سست ہو کر 3 فیصد سے بھی کم رہ گئی تھی ۔ مگر گزشتہ تین سالوں میں توانائی بحران کو حل کرنے کے لیے بجلی کے شعبے میں خاطر خواہ کام ہوا ہے جس کے نتیجے میں پاکستان اس بحران سے باہر نکل رہا ہے ۔ ڈپٹی چیئرمین سرتاج عزیز نے کہا توانائی بحران کے حل میں سب زیادہ اہم کردار سی پیک توانائی پیکج ہے ، جس سے تقریبا 17 ہزار میگاواٹ بجلی پیدا ہو گی ، اس میں سے نصف 2018 کے اختتام سے پہلے گریڈ میں شامل کر دی جائے گا ۔ جبکہ دوسرے ذرائع سے تین ہزار میگاواٹ منصوبوں پر کام جاری ہے ان منصوبوں کے ساتھ، توانائی کی قلت کا فوری مسئلہ کافی حد تک حل ہو جائے گا ، انھوں نے مزید کہا کہ دو اہم ہائیڈیل منصوبوں یعنی داسو اور بھاشا ڈیم سے بھی کافی حد تک انرجی مکس کو بہتر بنانے میں مدد ملے گی.جس سے ملک میں 9ہزار میگا واٹ بجلی حاصل ہوگی ، انھوں نے کہا کہ ماضی میں تھرمل ذرائع سے مہنگی بجلی کے منصوبے لگائے گئے ، مگر اب درآمدی مہنگے ذرائع کی بجائے ایل این جی اور ہائیڈرل سے سستی بجلی پیدا کرنے کے منصوبوں پر کام جاری ہے۔ ایل این جی کی درآمد سے ملک میں گیس کی قلت کو کم کرنے میں بھی مدد ملے گی . انھوں نے کہاکہ پیداوار میں اضافے کے ساتھ بجلی کی ترسیل اور تقسیم کے نظام کی بہتری اور پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے تحت چینی کمپنیوں کے ساتھ توانائی کے منصوبوں پر کام جاری ہے۔

Facebook Comments
Share Button