تازہ ترین

Marquee xml rss feed

اسفند یار ولی نے بھی عمران خان کے اگلے وزیر اعظم ہونے کی پیش گوئی کر دی عمران خان جیتیں گے یا جتوائیں گے لیکن عمران خان اگلا وزیر اعظم ہے،سربراہ اے این پی-آئی جی پنجاب کا نواب سراج رئیسانی ، ہارون بشیر بلور سمیت دیگر افراد کی شہادت پر گہرے رنج و غم کا اظہار-رحیم یار خان پولیس کے سپیشل آپریشن یونٹ کی کچے کے علاقے میں کارروائی، آپریشن میںڈاکو نادر سکھانی مارا گیا ڈاکوئوں کی قید سے گیارہ مغوی بیوپاریوں کو بحفاظت بازیاب ... مزید-شفاف الیکشن کیلئے ضابطہ اخلاق پر عمل کرنا ہر کسی کیلئے یکساں لازم ہے، خلاف ورزی کی صورت میں بلاتفریق کارروائی کی جا رہی ہے ،صوبائی وزیر اطلاعات احمد وقاص ریاض-الیکشن کمیشن تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کی مبینہ نامناسب تقاریر پر پابندی عائد کرے،مریم اورنگزیب-نگران وزیراعلیٰ پنجاب سے نائیجیریا کے 7 رکنی وفدکی ملاقات نائیجیرین وفد کا دورہ باہمی تعلقات کے نئے دور کا نقطہ آغاز ثابت ہوگا، ڈاکٹر حسن عسکری پاکستان بہت شاندار ملک ... مزید-25 جولائی کو شیر پر مہر لگا کر نواز شریف اور مسلم لیگ (ن ) کو کامیاب بنانا ہے ‘شہباز شریف ان اندھیروں میں بھی منزل تک پہنچائیں گے ، اللہ نے موقع دیا تو پانچ سال میں کئی محاذ ... مزید-پیپلز پارٹی کے گڑھ میں میں پاکستان تحریک انصاف کا تاریخی جلسہ ،عوام کے ٹھاٹھیں مارتے سمندر نے عمران کو لبیک کہا جیکب آباد میں ہزاروں کارکنان نے جلسے میں شرکت کر کے تحریک ... مزید-اٹک پولیس کا سرچ آپریشن، ناجائز اسلحہ بر آمد-الیکشن کمیشن نے مرُدوں کو بھی ووٹ ڈا لنے کی اجازت دے دی ووٹر لسٹ میں سینکڑوں مرُدوں کے نام شا مل

GB News

حکومت مقامی زبانوں کی ترویج کیلئے عملی اقدامات کررہی ہے،تابان

Share Button

گلگت ( پ ر) صوبائی وزیر برقیات حاجی اکبر تابان نے کہا ہے کہ ادبی مید ان میں گلگت بلتستان کی سرزمین نہایت ہی زرخیز ہے۔ ادب ہماری میراث ہے اور اس کی ترقی و ترویج کے لیئے صوبائی حکومت کوشاں ہے۔ گلگت بلتستان میں ادبی میلے کے انعقاد کا مقصد اس خطے کی زبانوں ، ادب اور ثقافتی ورثے کو محفوظ کرنا ہے ۔ ہمارے شعرا ء اور ادبی ورثہ اس بات کا ثبوت ہے کہ اس خطے نے کئے نامور سپوت پیدا کیئے ہیں جو کہ ہمارا اثاثہ ہیں۔ حکومت نے صوبے کی تاریخ میں پہلی مرتبہ 5 کروڈ کی رقم ادب کے شعبے کی ترقی کے لیے مختص کی ہے۔ قراقرام انٹرنیشنل یونیورسٹی میں گلگت بلتستان کے اولین ادبی میلے کی تقریب میں محفل مشاعرہ سے خطاب کرتے ہوئے وزیر برقیات اکبر تابان نے کہا کہ ادب کے شعبے کو ماضی میں نظر انداز کیا جاتا رہا ہے مگر موجودہ صوبائی حکومت مقامی زبانوں کی ترقی اور ادب کے فروغ کے لئے جامع اقدامات کر رہی ہے، ادبے میلے کے انعقاد کے بعد اس سمت میں حکومت کئی اور مثالی اقدامات کرے گی۔ شعرا ء اور ادیبوں کی کاوشوں کو حکومت قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے اور قیام امن کے قیام کے لئے ان کا کردار بھی کسی سے ڈھکا چھپا نہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ عبدالخالق تاج کا ادب کے شعبے میں ایک بڑا نام ہے اور اس اہم شعبے کی ترویج اور ترقی میں اہم اور کلید ی کردار ہے۔ اس سے قبل محفل مشاعرے کے میر محفل صوبائی وزیر سیاحت و ثقافت فدا خان فدا نے کہا کہ ملک بھر کے ددیگر صوبوں سے گلگت بلتستان میں منعقد ہونے والے اولین ادبی میلے میں کثیر تعداد میں ادبی شخصیات کی شرکت کرنے پر گلگت بلتستان کی صوبائی حکومت اور عوام کی طرف سے ان کا شکریہ ادا کیا اور ان کو خوش آمدید کہا ۔انہوں نے مزید کہا کہ مقامی زبانوں کو ترقی دینے اور ان کی ترویج کے لیے صوبائی حکومت عملی اقدامات کر رہی ہے اور مقامی زبانوں کو سلیبس کا حصہ بنانے کے لیے کام کررہی ہے۔ اس عمل سے مقامی زبانوں اور بولیوں کو محفوظ رکھنے میں انتہائی مدد ملے گی۔ ادبی میلے کے دوسرے سیشن میں محفل مشاعرہ کا بھی اہتمام کیا گیا تھا جس میں ملک بھر سے آنے والے شعراء کرام ڈاکٹراباسین یوسفزئی ،صغریٰ صدف، پروفیسر اسحاق، شمس محمد مہمندکے علاوہ گلگت بلتستان سے تعلق رکھنے والے شعراء ، محمد امین ضیائ، جمشید خان دکھی ، عبدالخالق تاج ، ن ظفر وقار تاج ، نظیم دیا ، عزیز الرحمن ملنگی ، لیلیٰ غازی ، عاشق حسین عاشق ، رضا عباس تابش ، نذیر حسین نذیر ، حور شاہ حور، لال جہان، نیت شاہ قلندری ، شیرباز علی گنشی ، اخونزادہ محمد ابراہیم ، غلام عباس صابر، شمس نوازش غذری ،رضا بیگ گھائل، عصمت اللہ مشفق نیازی جاوید حیات کاکا خیل، علی قربان، سیف سمیت جہانگیر بابر نے اپنا کلام پیش کرکے حاضرین سے خوب داد وصول کی ۔

Facebook Comments
Share Button