تازہ ترین

Marquee xml rss feed

وزیراعلیٰ پنجاب ش�بازشری� کا سابق و�اقی وزیر میر نواز خان مروت کے انتقال پر اظ�ار تعزیت-وزیراعلیٰ کی ورکنگ بائونڈری پر بھارتی ا�واج کی بلااشتعال �ائرنگ سے ش�ید �ونیوالے ش�ریوں کے لواحقین کیلئے مالی امداد کا اعلان ش�داء کے لواحقین کو 5لاکھ �ی کس کے حساب ... مزید-وزیراعلیٰ پنجاب ش�بازشری� کا سعودی عرب کے قومی دن کے موقع پر پیغام-وزیراعلیٰ کی زیرصدارت اجلاس، پاک میڈیکل �یلتھ نمائش کے انعقاد کے انتظامات کا جائز� نمائش ما� رواں کے آخر میں منعقد �وگی،ترک وزارت صحت کے اعلیٰ حکام، ترک اور پاکستانی ... مزید-محرم الحرام ، عوام کے جان و مال کے تح�ظ اورامن و امان کے قیام کیلئے سکیورٹی کے �ول پرو� انتظامات کیے جائیں‘ش�بازشری� گزشت� برسوں سے بڑھ کر سکیورٹی انتظامات کئے جائیں ... مزید-وزیراعلیٰ پنجاب کی سیالکوٹ ورکنگ بائونڈری پر بھارتی �وج کی �ائرنگ و گول� باری کی شدید مذمت قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر اظ�ار ا�سوس، ش�داء کے لواحقین سے دلی �مدردی ... مزید-آئند� مالی سال کے بجٹ میں شعب� تعلیم میں مجموعی طور پر 345ارب روپے کی رقم مختص کی گئی �ے،رانا مش�ود احمد-چیئر مین سینیٹ کا ایوان بالا اجلاس میں وزیر مملکت داخل� کی عدم حاضری پر شدید اظ�اربر�می وزارت داخل� سے متعلق 33 سوالات �یں، وزیر مملکت داخل� ابھی تک ن�یں آئے، ی� سینیٹ ... مزید-پی آئی اے میں مالی بحران کے باعث کیبن کریو کو دو ما� کی ادائیگی ن�یں کی جاسکی ، جون 2017ء تک 3.2 ملین روپے �لائنگ الائونس کی مد میں دیئے گئے، دو ما� کے بقایا جات آئند� ایک ... مزید-پرویز مشر� کا بیان پیپلزپارٹی کے خلا� ساز ش �ے ،این اے 120 الیکشن میں ایک خاص �ضا بنائی گئی ،عوام بلاول بھٹو کے ساتھ �ے،جو ایم این اے بننے کا ا�ل ن�یں و� پارٹی صدارت کا بھی ... مزید

GB News

حکومت مقامی زبانوں کی ترویج کیلئے عملی اقدامات کررہی ہے،تابان

Share Button

گلگت ( پ ر) صوبائی وزیر برقیات حاجی اکبر تابان نے کہا ہے کہ ادبی مید ان میں گلگت بلتستان کی سرزمین نہایت ہی زرخیز ہے۔ ادب ہماری میراث ہے اور اس کی ترقی و ترویج کے لیئے صوبائی حکومت کوشاں ہے۔ گلگت بلتستان میں ادبی میلے کے انعقاد کا مقصد اس خطے کی زبانوں ، ادب اور ثقافتی ورثے کو محفوظ کرنا ہے ۔ ہمارے شعرا ء اور ادبی ورثہ اس بات کا ثبوت ہے کہ اس خطے نے کئے نامور سپوت پیدا کیئے ہیں جو کہ ہمارا اثاثہ ہیں۔ حکومت نے صوبے کی تاریخ میں پہلی مرتبہ 5 کروڈ کی رقم ادب کے شعبے کی ترقی کے لیے مختص کی ہے۔ قراقرام انٹرنیشنل یونیورسٹی میں گلگت بلتستان کے اولین ادبی میلے کی تقریب میں محفل مشاعرہ سے خطاب کرتے ہوئے وزیر برقیات اکبر تابان نے کہا کہ ادب کے شعبے کو ماضی میں نظر انداز کیا جاتا رہا ہے مگر موجودہ صوبائی حکومت مقامی زبانوں کی ترقی اور ادب کے فروغ کے لئے جامع اقدامات کر رہی ہے، ادبے میلے کے انعقاد کے بعد اس سمت میں حکومت کئی اور مثالی اقدامات کرے گی۔ شعرا ء اور ادیبوں کی کاوشوں کو حکومت قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے اور قیام امن کے قیام کے لئے ان کا کردار بھی کسی سے ڈھکا چھپا نہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ عبدالخالق تاج کا ادب کے شعبے میں ایک بڑا نام ہے اور اس اہم شعبے کی ترویج اور ترقی میں اہم اور کلید ی کردار ہے۔ اس سے قبل محفل مشاعرے کے میر محفل صوبائی وزیر سیاحت و ثقافت فدا خان فدا نے کہا کہ ملک بھر کے ددیگر صوبوں سے گلگت بلتستان میں منعقد ہونے والے اولین ادبی میلے میں کثیر تعداد میں ادبی شخصیات کی شرکت کرنے پر گلگت بلتستان کی صوبائی حکومت اور عوام کی طرف سے ان کا شکریہ ادا کیا اور ان کو خوش آمدید کہا ۔انہوں نے مزید کہا کہ مقامی زبانوں کو ترقی دینے اور ان کی ترویج کے لیے صوبائی حکومت عملی اقدامات کر رہی ہے اور مقامی زبانوں کو سلیبس کا حصہ بنانے کے لیے کام کررہی ہے۔ اس عمل سے مقامی زبانوں اور بولیوں کو محفوظ رکھنے میں انتہائی مدد ملے گی۔ ادبی میلے کے دوسرے سیشن میں محفل مشاعرہ کا بھی اہتمام کیا گیا تھا جس میں ملک بھر سے آنے والے شعراء کرام ڈاکٹراباسین یوسفزئی ،صغریٰ صدف، پروفیسر اسحاق، شمس محمد مہمندکے علاوہ گلگت بلتستان سے تعلق رکھنے والے شعراء ، محمد امین ضیائ، جمشید خان دکھی ، عبدالخالق تاج ، ن ظفر وقار تاج ، نظیم دیا ، عزیز الرحمن ملنگی ، لیلیٰ غازی ، عاشق حسین عاشق ، رضا عباس تابش ، نذیر حسین نذیر ، حور شاہ حور، لال جہان، نیت شاہ قلندری ، شیرباز علی گنشی ، اخونزادہ محمد ابراہیم ، غلام عباس صابر، شمس نوازش غذری ،رضا بیگ گھائل، عصمت اللہ مشفق نیازی جاوید حیات کاکا خیل، علی قربان، سیف سمیت جہانگیر بابر نے اپنا کلام پیش کرکے حاضرین سے خوب داد وصول کی ۔

Facebook Comments
Share Button