تازہ ترین

Marquee xml rss feed

بچے کی ولادت دوہری خوشی لائے گی بچے کی ولادت پر ماں کے لیے 6 اور باپ کے لیے 3 ماہ کی چھٹیوں کا بل سینیٹ میں پیش کر دیا گیا-وزیر اعظم عمران خان 21 نومبر کو ملائشیا کے دورے پر روانہ ہوں گے وزیر اعظم ، ملائشین ہم منصب سے ملاقات کے علاوہ کاروبای شخصیات سے ملاقاتیں کریں گے-متعدد وزراء کی چھٹی ہونے والی ہے 100 روز مکمل ہونے پر 5,6 وفاقی وزراء اور متعدد صوبائی وزراء اپنی ناقص کارکردگی کے باعث اپنی وزارتوں سے ہاتھ دھو بیٹھیں گے-نوازشریف،مریم نوازاورکیپٹن(ر)صفدرکی رہائی کےخلاف نیب اپیل کامعاملہ سپریم کورٹ نے نیب اپیل پر لارجر بنچ تشکیل دینے کا حکم جاری کردیا-ڈیرہ اسماعیل خان میں جشن عید میلاد النبی ؐکی تیاریاںعروج پرپہنچ گئیں-آئی جی سندھ نے حیدرآباد میں واقع مارکیٹ میں نقب زنی کا نوٹس لے لیا-عمر سیف سے چیئرمین پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ کا اضافی چار ج واپس لے لیا گیا-پنجاب کے 10ہزار فنکاروں کے لئے 4لاکھ روپے مالیت کے ہیلتھ کارڈ جاری کئے جائیں گے‘فیاض الحسن چوہان صوبے میں 200فنکاروں اور گلوکاروںمیں ان کی کارکردگی,اہلیت اور میرٹ کی ... مزید-پاکستان میں امیر اور غریب کے درمیان طبقاتی فرق اضافہ ہوگیا ہے ،ْ دن بدن فرق بڑھتا جارہاہے ،ْ ورلڈبینک-وزیراعظم جنوبی پنجاب صوبے سے متعلق جلد اہم اقدامات کا اعلان کرینگے جنوبی پنجاب صوبے کے قیام کیلئے وزیراعظم عمران خان اتحادی جماعتوں اور اپوزیشن ارکان پر مشتمل کمیٹی ... مزید

GB News

ہارڈ ایریا الائونس کی یکسانیت

Share Button

صوبائی محکمہ فنانس نے وفاقی فنانس ڈویژن سے گلگت بلتستان کے سرکاری ملازمین کو کو پچاس فیصد ہارڈ ایریا الائونس کی ادائیگی کیلئے تین ارب روپے مانگے ہیں یہ پچاس فیصد الائونس سرکاری ملازمین کو 2005 سے 2009 تک ادا کیا جائے گا ۔ درحقیقت وفاق سے گلگت بلتستان آکر خدمات سرانجام دینے والے سرکاری ملازمین کو ہارڈ ایر یا کی مد میں پچاس فیصد الائونس ملتا ہے جبکہ گلگت بلتستان کے سرکاری ملازمین کو ہارڈ ایریا الائونس کی مد میں صرف پچیس فیصد الائونس فراہم کیا جاتا ہے چنانچہ یکساں الائونس کی فراہمی کیلئے ملازمین نے سپریم اپیلٹ کورٹ میں اپیل دائر کی تھی ۔ جس پر سپریم اپیلٹ کورٹ کی طرف فیصلہ سناتے ہوئے محکمہ فنانس کو ہدایات جاری کی گئی تھیں کہ گلگت بلتستان کے ملازمین کو بھی ہارڈ ایریا الائونس کی مد میں پچاس فیصد الائونس فراہم کیا جائے ۔الائونس کی یکساں فراہمی اسلئے بھی ضروری ہے کہ اس امتیاز کے باعث ملازمین میں بے چینی و اضطراب لازمی امر ہے پھر جب سپریم اپیلٹ کورٹ اس ضمن میں فیصلہ دے چکی ہے تو اس حوالے سے تاخیر کا کوئی جواز نہیں ہے یہی وہ امتیاز ہے جس کے باعث ملازمین میں اپنی ذمہ داریوں سے راہ فرار اختیار کرنے کا چلن پرورش پاتا ہے جب وفاق سے آنے والے ملازمین کو پچاس فیصد الائونس دیا جا رہا ہے توگلگت بلتستان کے ملازمین کو پچیس فیصد کی ادائیگی ناقابل فہم ہے’ہم امید کرتے ہیں کہ مذکورہ رقم کی وفاق سے وصولی کے بعد گلگت بلتستان کے ملازمین کو پچاس فیصد کے حساب سے ادائیگی کی جائے گی اور آئندہ کے لیے بھی اس پہ عملدرآمد کو یقینی بنایا جائے گا۔ سرکاری ملازمین پاکستان کا اثاثہ ہیں لیکن عمومی طور پہ یہ دیکھنے میں آیا ہے کہ ان کی جانب سے اپنے فرائض کی ادائیگی پہ توجہ کم اور تنخواہوں و الائونسز پہ زیادہ مرکوز رہتی ہے یہی وجہ ہے کہ ہمارے سرکاری اداروں کی حالت زار قابل رحم ہے بلکہ اکثر ادارے زوال و انحطاط کی گہرائیوں کو چھو رہے ہیں اس لیے ان کو چاہیے کہ جہاں وہ اپنے ساتھ ہونے والے امتیازی سلوک کے حوالے سے ہر در کھٹکھٹاتے ہیں وہاں انہیں اپنے فرائض کے سلسلے میں بھی کسی کوتاہی کا مظاہرہ نہیں کرنا چاہیے تاکہ سرکاری ادارے ترقی کی جانب گامزن ہو سکیں۔

Facebook Comments
Share Button