تازہ ترین

Marquee xml rss feed

پاک افغان سرحدی علاقے میں ایک اور امریکی ڈرون حملہ، 2 خطرناک دہشت گردوں کو ہلاک کر دیے جانے کی اطلاعات-مستونگ کے مرکزی بازارمیں دھماکے کی اطلاع-آرمی چیف کا آرمی میڈیکل سنٹرایبٹ آباد کا دورہ،ڈاکٹرزاورمیڈیکل سٹاف کی تعریف یاد گارشہداء پرحاضری اور پھول بھی چڑھائے،دہشتگردکی جنگ میں آرمی میڈیکل کورنے قیمتی جانیں ... مزید-طارق فضل چوہدری کی طرف سے وفاقی دارالحکومت میں ایمبیسی روڈ پر درختوں کی کٹائی کا نوٹس لینے پر سی ڈی اے نے رپورٹ پیش کر دی-عمران خان سیاست میں اناڑی ہیں، انہیں آرام کی ضرورت ہے ،ْ دانیال عزیز فرد جرم عائد ہونے کے بعد نیب ٹیم کون سے ثبوت تلاش کرنے کے لئے لندن گئی ہوئی ہے ،ْ میڈیا سے گفتگو ... مزید-وزیر اعظم کی قندھار میں افغان سکیورٹی اہلکاروں پر ہونے والے دہشت گردوں کے حملہ کی سخت مذمت-ایف آئی اے کی جدید بنیادوں پر تنظیم کی جائے،نئی ٹیکنالوجی سے جرائم پر قابو پانے کی صلاحیت حاصل کی جائے، انسانی اسمگلنگ کی روک تھام کیلئے موثر اور عملی اقدامات اٹھائے ... مزید-وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف نے نیب کو کرپٹ ترین ادارہ قراردے دیا نیب کرپشن ختم کرنے کی بجائے کرپشن کا گڑھ بن چکا،مشرف اور بعد کے ادوارمیں نیب کو سیاسی مقاصدکیلئے استعمال ... مزید-سیکرٹری وزارتِ انسداد منشیات اقبال محمود کا اے این ایف ہیڈکوارٹر راولپنڈی کا دورہ-ن لیگ خیبرپختونخواہ دوست محمد خان نے پیپلزپارٹی میں شمولیت کا اعلان کردیا

GB News

گلگت بلتستان کونسل نام کاکوئی ادارہ بھی موجود ہے ،مجھے علم نہیں،زیراعظم

Share Button

اسلام آباد (چیف رپورٹر) وزیراعظم شاہدخاقان عباسی نے کہا ہے کہ گلگت بلتستان کی آئینی حیثیت کے تعین کے لئے آئینی کمیٹی کی جانب سے مجھے کسی قسم کی سفارشات بھیجی گئی ہیں اور نہ ہی مجھے اس بارے میں معلومات حاصل ہیںمجھے اب تک یہ بھی علم نہیں کہ گلگت بلتستان
کونسل نام کاکوئی ادارہ بھی موجود ہے اورمیں اس کاچیئرمین ہوں آئینی مسئلے پرمیں متعلقہ اداروں سے بریفنگ لوں گا پھرکوئی بات کروں گا۔ان خیالات کااظہار انہوں نے اراکین کونسل سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔گلگت بلتستان سے تعلق رکھنے والے کونسل نے منگل کے روزاسلام آباد میںوزیراعظم شاہدخاقان عباسی سے ملاقات کی ملاقات میں ارکان کونسل نے گلگت بلتستان کی آئینی حیثیت اوردیگر مسائل سے وزیراعظم کوآگاہ کیا اوران کے حل کی درخواست کی۔وزیراعظم شاہدخاقان عباسی نے ارکان کونسل سے کہا کہ آپ لوگوں نے ملاقات کرکے بہت اچھا کیا کیونکہ مجھے ابھی تک یہ پتہ نہیں تھا کہ میں گلگت بلتستان کونسل کاچیئرمین ہوں۔اورکونسل نام کاکوئی ادارہ بھی ہے انہوں نے کہا کہ آئینی کمیٹی نے گلگت بلتستان کے آئینی مسئلے سے متعلق کوئی سفارشات نہیں بھیجی ہیں جوں ہی سفارشات آئیں گی آئینی مسئلے پربات ہوگی۔انہوں نے کہا کہ ابھی تک مجھے گلگت بلتستان کے مسائل پرکسی نے کوئی بریفنگ نہیں دی میں کوشش کرتاہوں جلدسے جلد متعلقہ اداروں سے گلگت بلتستان کے بارے میں مکمل بریفنگ حاصل کروں۔گندم کی سبسڈی کے بارے میں بھی متعلقہ ادارے سے معلومات لی جائیں گی۔ارکان کونسل نے وزیراعظم شاہدخاقان عباسی سے کہا کہ چونکہ گلگت بلتستان کے مسائل بہت سنگین ہیں ان کے حل کے لئے ماضی کی حکومتوں نے کچھ نہیں کہا آپ سے ہماری درخواست ہے کہ آپ ہمارے مسائل کے حل کے لئے کرداراداکریں۔ترقیاتی امورمیں تیزی لائی جائے۔تمام ضلعوں کے ہیڈکوارٹرزمیں بڑے منصوبے شروع کئے جائیں۔آئینی حیثیت کامسئلہ جلد حل کیاجائے گندم پرسبسڈی برقراررکھی جائے تاکہ عوام کو کسی قسم کی مشکل پیش نہ آئے۔وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے ارکان کونسل کویقین دلایا کہ گلگت بلتستان کے مسائل کے حل کے لئے وہ ذاتی دلچسپی لیںگے۔ لہذاارکان اسمبلی حوصلہ رکھیں۔انہوں نے کہا کہ جب مجھے کسی چیز کے بارے میں معلومات حاصل نہیں ہیں تو اس بارے میں کسی قسم کی بات کرنا مناسب نہیں ہے۔ ارکان کونسل مطمئن رہیں میں کونسل کی فعالیت کے لئے کام کروں گا۔اورگلگت بلتستان میںترقیاتی امورپرکام تیزکرنے کی ہدایت دیتاہوں۔ادھررکن کونسل سیدعباس رضوی نے کے پی این سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی گلگت بلتستان کے بارے میں بالکل لاعلم تھے انہیں یہ بھی نہیںپتہ تھا کہ ان کے پاس کونسل کے چیئرمین کاعہدہ بھی ہے ہم نے مسائل تحریری طورپران کوپیش کئے ہیں انہوں نے یقین دلایا ہے کہ مسائل حل کریں گے ہم نے وزیراعظم سے آئینی مسئلے کے بارے میں پوچھا تو انہوں نے کہا کہ مجھے کسی کمیٹی نے کوئی سفارشات نہیںبھیجی ہیں اگرسفارشات ان کے پاس آئیں تو وہ اس پرتبصرہ کریںگے۔ ملاقات کے دوران ہم نے اپنے تمام مسائل سے وزیراعظم کوآگاہ کیا۔رکن کونسل سیدافضل نے کہا کہ ہم نے علاقائی مسائل سے وزیراعظم کوآگاہ کیا ہے امید ہے کہ ہمارے مسائل حل کریں گے۔ ملاقات کے لئے وزیراعظم نے وقت دیا جس پرہم ان کے شکرگزار ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ملاقات کاکوئی خاص ایجنڈانہیں تھا۔تعارفی ملاقات تھی جونہایت ہی مفید رہی۔

Facebook Comments
Share Button