تازہ ترین

Marquee xml rss feed

پاک افغان سرحدی علاقے میں ایک اور امریکی ڈرون حملہ، 2 خطرناک دہشت گردوں کو ہلاک کر دیے جانے کی اطلاعات-مستونگ کے مرکزی بازارمیں دھماکے کی اطلاع-آرمی چیف کا آرمی میڈیکل سنٹرایبٹ آباد کا دورہ،ڈاکٹرزاورمیڈیکل سٹاف کی تعریف یاد گارشہداء پرحاضری اور پھول بھی چڑھائے،دہشتگردکی جنگ میں آرمی میڈیکل کورنے قیمتی جانیں ... مزید-طارق فضل چوہدری کی طرف سے وفاقی دارالحکومت میں ایمبیسی روڈ پر درختوں کی کٹائی کا نوٹس لینے پر سی ڈی اے نے رپورٹ پیش کر دی-عمران خان سیاست میں اناڑی ہیں، انہیں آرام کی ضرورت ہے ،ْ دانیال عزیز فرد جرم عائد ہونے کے بعد نیب ٹیم کون سے ثبوت تلاش کرنے کے لئے لندن گئی ہوئی ہے ،ْ میڈیا سے گفتگو ... مزید-وزیر اعظم کی قندھار میں افغان سکیورٹی اہلکاروں پر ہونے والے دہشت گردوں کے حملہ کی سخت مذمت-ایف آئی اے کی جدید بنیادوں پر تنظیم کی جائے،نئی ٹیکنالوجی سے جرائم پر قابو پانے کی صلاحیت حاصل کی جائے، انسانی اسمگلنگ کی روک تھام کیلئے موثر اور عملی اقدامات اٹھائے ... مزید-وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف نے نیب کو کرپٹ ترین ادارہ قراردے دیا نیب کرپشن ختم کرنے کی بجائے کرپشن کا گڑھ بن چکا،مشرف اور بعد کے ادوارمیں نیب کو سیاسی مقاصدکیلئے استعمال ... مزید-سیکرٹری وزارتِ انسداد منشیات اقبال محمود کا اے این ایف ہیڈکوارٹر راولپنڈی کا دورہ-ن لیگ خیبرپختونخواہ دوست محمد خان نے پیپلزپارٹی میں شمولیت کا اعلان کردیا

GB News

مسلم لیگ ن ٹیکس لگانے کا الزام پیپلزپارٹی کی حکومت پر لگارہی ہے،امجد حسین ایڈووکیٹ

Share Button

سکردو(محمد اسحاق جلال )پیپلزپارٹی کے صوبائی صدر وسابق رکن کونسل امجد حسین ایڈووکیٹ نے کہاہے کہ ہماری حکومت کو ختم ہوئے 4 سال کاعرصہ بیت چکا ہے پیپلزپارٹی کی حکومت کی ہڈیاں بھی سڑ گئی ہیں لیکن اس کے باوجود مسلم لیگ ن کو آج بھی ہماری حکومت نظرآرہی ہے اور الزام لگا رہی ہے کہ گلگت بلتستان میں ٹیکس پیپلزپارٹی کی حکومت نے لگایا ہے ہم نے کوئی ٹیکس نافذ نہیں کیا ہے ٹیکس وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے کل نافذ کیا ہے الٹا چور کتوال کو ڈانٹنے کے مصداق مسلم لیگ ن ٹیکس لگانے کا الزام پیپلزپارٹی کی حکومت پر لگارہی ہے حالانکہ حکومت کے الزام میں کوئی صداقت نہیں ہے مسلم لیگ ن ایک طرف عوام پر ظلم کر رہی ہے دوسری جانب عوام کے زخموں پر نمک پاشی بھی کر رہی ہے جو بڑا مذاق ہے کے پی این سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ مسلم لیگ ن کے ڈرپوک مقامی قائدین وزیر خزانہ اسحاق ڈار کے خلاف بولنے کے بجائے ہمارے خلاف منفی پروپیگنڈے کر رہے ہیں جو سمجھ سے بالاتر ہے ن لیگ ٹیکس کے معاملے پر سٹینڈ لے ڈمی کونسل کوظالمانہ فیصلے مسلط کرنے سے روک دے ورنہ صورتحال بہت سنگین ہو سکتی ہے کیونکہ عوام ٹیکس کے معاملے پر بڑے مشتعل ہیں ہر قانون گلگت بلتستان میں نافذ کیا جارہا ہے مسلم لیگ ن نے ہمارے علاقے کو دیا تو کچھ بھی نہیں ہے لیکن ہمارے پاس جو کچھ وسائل ہیں ان کو لوٹا جارہا ہے انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن ٹیکس کے معاملے پر تماشہ نہ لگائے اگر ہم نے ٹیکس لگایا بھی ہے تو اس کو چاہئے کہ اپنی وفاقی حکومت سے سفارش کر کے اس کو واپس لے مسلم لیگ ن ٹیکس کو واپس نہیں لے گی تو کچھ دن بعد بڑا احتجاج ہوگا انہوں نے کہا کہ حق ملکیت اور حق حاکمیت کی تحریک دفن نہیں ہوئی بلکہ یہ تحریک نئے عزم اور نئے جزبے کے ساتھ آگے بڑھ رہی ہے نومبر میں غذر میں حق حاکمیت اور حق ملکیت کا بڑا جلسہ ہوگا انہوں نے کہاکہ آئینی حقوق کا معاملہ اب دفن ہو گیا ہے کیونکہ ہرطرف سے آزاد کشمیر کے مفادات کے تحفظ کیلئے کام ہو رہا ہے وزیر اعلیٰ خود بھی گلگت بلتستان سے زیادہ کشمیر کے مفادات کا تحفظ چاہتے ہیں ایسے حالات میں کیا ممکن ہے کہ ہمیں آئینی حقوق دیئے جائیں انہوں نے کہاکہ اپوزیشن لیڈر کی تبدیلی میں بڑی رکاوٹیں کھڑی کی جارہی ہیں کچھ لوگ بغض اور مفادات کی بنیاد پر اپوزیشن لیڈر کی تبدیلی کے خلاف ہیں کچھ لوگ حکومتی ایماء پر اپوزیشن لیڈر کی تبدیلی کی مخالفت کر رہے ہیں انہوں نے کہاکہ موجودہ اپوزیشن لیڈر صرف مفادات اور مراعات لے رہے ہیں انہوں نے آج اسمبلی میں اپوزیشن کا کوئی کردارادا نہیں کیا اسمبلی میں نواز شریف کے حق میں اب تک جتنی قراردادیں لائی گئی ہیں ان سب کی اپوزیشن لیڈر شاہ بیگ نے حمایت کی ہے ایسے میں اپوزیشن کہاں سے آگئی ؟ اس لئے ہم اپوزیشن لیڈر کی تبدیلی چاہتے ہیں کیونکہ جس خطے میں اپوزیشن کمزور ہوگی وہاں کی حکومت عوام کے مسائل سے زیادہ اپنے مفادات پر توجہ دیتی ہے یوں خطہ ترقی کی جانب بڑھنے کے بجائے تنزلی کی طرف جائے گا انہوں نے کہاکہ سکردو روڈ کی تعمیر پاک فوج نے شروع کرادی ہے اس لئے ہم سب کو آرمی چیف اور فورس کمانڈر کا شکریہ ادا کرنا چاہئے انہوں نے کہاکہ بلتستان کے عوام مطمئن رہیں کیونکہ ریاستی ادارے بلتستان کے مثالی امن کو برقرار رکھنے کیلئے کام کر رہے ہیں انشاء اللہ بلتستان کا امن خراب نہیں ہوگا ۔

 

Facebook Comments
Share Button