تازہ ترین

Marquee xml rss feed

پاک افغان سرحدی علاقے میں ایک اور امریکی ڈرون حملہ، 2 خطرناک دہشت گردوں کو ہلاک کر دیے جانے کی اطلاعات-مستونگ کے مرکزی بازارمیں دھماکے کی اطلاع-آرمی چیف کا آرمی میڈیکل سنٹرایبٹ آباد کا دورہ،ڈاکٹرزاورمیڈیکل سٹاف کی تعریف یاد گارشہداء پرحاضری اور پھول بھی چڑھائے،دہشتگردکی جنگ میں آرمی میڈیکل کورنے قیمتی جانیں ... مزید-طارق فضل چوہدری کی طرف سے وفاقی دارالحکومت میں ایمبیسی روڈ پر درختوں کی کٹائی کا نوٹس لینے پر سی ڈی اے نے رپورٹ پیش کر دی-عمران خان سیاست میں اناڑی ہیں، انہیں آرام کی ضرورت ہے ،ْ دانیال عزیز فرد جرم عائد ہونے کے بعد نیب ٹیم کون سے ثبوت تلاش کرنے کے لئے لندن گئی ہوئی ہے ،ْ میڈیا سے گفتگو ... مزید-وزیر اعظم کی قندھار میں افغان سکیورٹی اہلکاروں پر ہونے والے دہشت گردوں کے حملہ کی سخت مذمت-ایف آئی اے کی جدید بنیادوں پر تنظیم کی جائے،نئی ٹیکنالوجی سے جرائم پر قابو پانے کی صلاحیت حاصل کی جائے، انسانی اسمگلنگ کی روک تھام کیلئے موثر اور عملی اقدامات اٹھائے ... مزید-وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف نے نیب کو کرپٹ ترین ادارہ قراردے دیا نیب کرپشن ختم کرنے کی بجائے کرپشن کا گڑھ بن چکا،مشرف اور بعد کے ادوارمیں نیب کو سیاسی مقاصدکیلئے استعمال ... مزید-سیکرٹری وزارتِ انسداد منشیات اقبال محمود کا اے این ایف ہیڈکوارٹر راولپنڈی کا دورہ-ن لیگ خیبرپختونخواہ دوست محمد خان نے پیپلزپارٹی میں شمولیت کا اعلان کردیا

GB News

اسمبلی نہیں حکومت ڈمی ہے،میجر(ر)امین الفاظ واپس لیں، امجد ایڈووکیٹ

Share Button

گلگت( ثاقب عمر سے)پاکستان پیپلز پارٹی گلگت بلتستان کے صدر امجد حسین ایڈووکیٹ نے کہا ہے کہ اسمبلی میں پاور ہے لیکن حکومت میں پاور نہیں ہے اپنی نا اہلی کو اسمبلی پر ڈالنا زیادتی ہے اور اسمبلی کو ڈمی کہنا اسمبلی کی توہین ہے جس نے بھی یہ الفاظ کہے ہیں اپنے الفاظ واپس لینے چاہئیںکیو نکہ اسمبلی ایک مقتدر ایوان ہے جہاں پہ عوامی نمائندے ہو تے ہیں ۔اسمبلی ڈمی نہیں ہے البتہ حکومت ڈمی ضرور ہے اسمبلی میں بیٹھ کر غیر پارلیمانی زبان استعمال کی گئی ہے اور جو قانون سازی نہیں کر سکتے ہیں وہ غیر پارلیمانی زبان استعمال کر نے کے بجا ئے قانون سازی کریں ۔امجد حسین ایڈووکیٹ نے کے پی این سے گفتگو کر تے ہو ئے کہا کہ وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کو گلگت بلتستان کا علم ہی نہیں ہے اور نہ ہی آئینی سیٹ اپ دینا مسلم لیگ کی حکومت کی بس کی بات ہے تا حال جو بھی دیا ہے وہ پاکستان پیپلز پارٹی نے دیا ہے اور آئینی سیٹ اپ بھی پاکستان پیپلز پارٹی نے ہی دینا ہے ۔تین وزارتیں جنگلات ، معدنیات اور سیا حت کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ اٹھا رویں تر میم کے بعد یہ صو با ئی اسمبلی کے سبجکٹ بنتے ہیں اور اختیارات صوبا ئی اسمبلی کو منتقل ہو تے ہیں لیکن اب تک ان سبجیکٹس کو اسمبلی منتقل نہیں کیا گیا ہے پیپلز لائرز فورم عدالت میں ان وزراتوں کے حوالے سے عدالت میں اس لیئے گئی ہے کہ اس میں قانونی ہچ با قی ہے اور یہ قانونی پوائنٹ ہے جس کو لیکر عدالت میں رٹ پٹیشن دائر کی گئی ہے اور اس کا جب فیصلہ آئے گا تب عوام کو معلوم ہو گا ۔انہوں نے کہا طاقت کا سر چشمہ اسمبلی ہے اور (ن) لیگ والے اپنی طاقت کو اجا گر کر نہیں سکتے ہیں اور قانون سازی کے لیئے لکھنا نہیں آتا ہے اور اپنی نا اہلی اسمبلی پہ ڈال دینا زیادتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اسمبلی پر الزام لگانے سے پہلے یہ لوگ قانون سازی کر یں اور عوامی مسائل حل کر نے کے لیئے کام کریں اور اپنی اہمیت کو جاگر کریں اپنی اہمیت کو اجاگر جو لوگ نہیں کر سکتے ہیں وہ مقتدر ایوان کی تو ہین کر نے سے باز رہیں ۔انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) کے اراکین کو معلوم ہی نہیں ہے کہ قانون سازی کس بلا کا نام ہے اور جن کو قانون سازی کا ہی علم نہ ہو وہ کم سے کم ایوان کی عزت کا خیال ریکھیں ۔

Facebook Comments
Share Button