تازہ ترین

Marquee xml rss feed

اسفند یار ولی نے بھی عمران خان کے اگلے وزیر اعظم ہونے کی پیش گوئی کر دی عمران خان جیتیں گے یا جتوائیں گے لیکن عمران خان اگلا وزیر اعظم ہے،سربراہ اے این پی-آئی جی پنجاب کا نواب سراج رئیسانی ، ہارون بشیر بلور سمیت دیگر افراد کی شہادت پر گہرے رنج و غم کا اظہار-رحیم یار خان پولیس کے سپیشل آپریشن یونٹ کی کچے کے علاقے میں کارروائی، آپریشن میںڈاکو نادر سکھانی مارا گیا ڈاکوئوں کی قید سے گیارہ مغوی بیوپاریوں کو بحفاظت بازیاب ... مزید-شفاف الیکشن کیلئے ضابطہ اخلاق پر عمل کرنا ہر کسی کیلئے یکساں لازم ہے، خلاف ورزی کی صورت میں بلاتفریق کارروائی کی جا رہی ہے ،صوبائی وزیر اطلاعات احمد وقاص ریاض-الیکشن کمیشن تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کی مبینہ نامناسب تقاریر پر پابندی عائد کرے،مریم اورنگزیب-نگران وزیراعلیٰ پنجاب سے نائیجیریا کے 7 رکنی وفدکی ملاقات نائیجیرین وفد کا دورہ باہمی تعلقات کے نئے دور کا نقطہ آغاز ثابت ہوگا، ڈاکٹر حسن عسکری پاکستان بہت شاندار ملک ... مزید-25 جولائی کو شیر پر مہر لگا کر نواز شریف اور مسلم لیگ (ن ) کو کامیاب بنانا ہے ‘شہباز شریف ان اندھیروں میں بھی منزل تک پہنچائیں گے ، اللہ نے موقع دیا تو پانچ سال میں کئی محاذ ... مزید-پیپلز پارٹی کے گڑھ میں میں پاکستان تحریک انصاف کا تاریخی جلسہ ،عوام کے ٹھاٹھیں مارتے سمندر نے عمران کو لبیک کہا جیکب آباد میں ہزاروں کارکنان نے جلسے میں شرکت کر کے تحریک ... مزید-اٹک پولیس کا سرچ آپریشن، ناجائز اسلحہ بر آمد-الیکشن کمیشن نے مرُدوں کو بھی ووٹ ڈا لنے کی اجازت دے دی ووٹر لسٹ میں سینکڑوں مرُدوں کے نام شا مل

GB News

اسمبلی نہیں حکومت ڈمی ہے،میجر(ر)امین الفاظ واپس لیں، امجد ایڈووکیٹ

Share Button

گلگت( ثاقب عمر سے)پاکستان پیپلز پارٹی گلگت بلتستان کے صدر امجد حسین ایڈووکیٹ نے کہا ہے کہ اسمبلی میں پاور ہے لیکن حکومت میں پاور نہیں ہے اپنی نا اہلی کو اسمبلی پر ڈالنا زیادتی ہے اور اسمبلی کو ڈمی کہنا اسمبلی کی توہین ہے جس نے بھی یہ الفاظ کہے ہیں اپنے الفاظ واپس لینے چاہئیںکیو نکہ اسمبلی ایک مقتدر ایوان ہے جہاں پہ عوامی نمائندے ہو تے ہیں ۔اسمبلی ڈمی نہیں ہے البتہ حکومت ڈمی ضرور ہے اسمبلی میں بیٹھ کر غیر پارلیمانی زبان استعمال کی گئی ہے اور جو قانون سازی نہیں کر سکتے ہیں وہ غیر پارلیمانی زبان استعمال کر نے کے بجا ئے قانون سازی کریں ۔امجد حسین ایڈووکیٹ نے کے پی این سے گفتگو کر تے ہو ئے کہا کہ وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کو گلگت بلتستان کا علم ہی نہیں ہے اور نہ ہی آئینی سیٹ اپ دینا مسلم لیگ کی حکومت کی بس کی بات ہے تا حال جو بھی دیا ہے وہ پاکستان پیپلز پارٹی نے دیا ہے اور آئینی سیٹ اپ بھی پاکستان پیپلز پارٹی نے ہی دینا ہے ۔تین وزارتیں جنگلات ، معدنیات اور سیا حت کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ اٹھا رویں تر میم کے بعد یہ صو با ئی اسمبلی کے سبجکٹ بنتے ہیں اور اختیارات صوبا ئی اسمبلی کو منتقل ہو تے ہیں لیکن اب تک ان سبجیکٹس کو اسمبلی منتقل نہیں کیا گیا ہے پیپلز لائرز فورم عدالت میں ان وزراتوں کے حوالے سے عدالت میں اس لیئے گئی ہے کہ اس میں قانونی ہچ با قی ہے اور یہ قانونی پوائنٹ ہے جس کو لیکر عدالت میں رٹ پٹیشن دائر کی گئی ہے اور اس کا جب فیصلہ آئے گا تب عوام کو معلوم ہو گا ۔انہوں نے کہا طاقت کا سر چشمہ اسمبلی ہے اور (ن) لیگ والے اپنی طاقت کو اجا گر کر نہیں سکتے ہیں اور قانون سازی کے لیئے لکھنا نہیں آتا ہے اور اپنی نا اہلی اسمبلی پہ ڈال دینا زیادتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اسمبلی پر الزام لگانے سے پہلے یہ لوگ قانون سازی کر یں اور عوامی مسائل حل کر نے کے لیئے کام کریں اور اپنی اہمیت کو جاگر کریں اپنی اہمیت کو اجاگر جو لوگ نہیں کر سکتے ہیں وہ مقتدر ایوان کی تو ہین کر نے سے باز رہیں ۔انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) کے اراکین کو معلوم ہی نہیں ہے کہ قانون سازی کس بلا کا نام ہے اور جن کو قانون سازی کا ہی علم نہ ہو وہ کم سے کم ایوان کی عزت کا خیال ریکھیں ۔

Facebook Comments
Share Button