تازہ ترین

Marquee xml rss feed

پاک افغان سرحدی علاقے میں ایک اور امریکی ڈرون حملہ، 2 خطرناک دہشت گردوں کو ہلاک کر دیے جانے کی اطلاعات-مستونگ کے مرکزی بازارمیں دھماکے کی اطلاع-آرمی چیف کا آرمی میڈیکل سنٹرایبٹ آباد کا دورہ،ڈاکٹرزاورمیڈیکل سٹاف کی تعریف یاد گارشہداء پرحاضری اور پھول بھی چڑھائے،دہشتگردکی جنگ میں آرمی میڈیکل کورنے قیمتی جانیں ... مزید-طارق فضل چوہدری کی طرف سے وفاقی دارالحکومت میں ایمبیسی روڈ پر درختوں کی کٹائی کا نوٹس لینے پر سی ڈی اے نے رپورٹ پیش کر دی-عمران خان سیاست میں اناڑی ہیں، انہیں آرام کی ضرورت ہے ،ْ دانیال عزیز فرد جرم عائد ہونے کے بعد نیب ٹیم کون سے ثبوت تلاش کرنے کے لئے لندن گئی ہوئی ہے ،ْ میڈیا سے گفتگو ... مزید-وزیر اعظم کی قندھار میں افغان سکیورٹی اہلکاروں پر ہونے والے دہشت گردوں کے حملہ کی سخت مذمت-ایف آئی اے کی جدید بنیادوں پر تنظیم کی جائے،نئی ٹیکنالوجی سے جرائم پر قابو پانے کی صلاحیت حاصل کی جائے، انسانی اسمگلنگ کی روک تھام کیلئے موثر اور عملی اقدامات اٹھائے ... مزید-وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف نے نیب کو کرپٹ ترین ادارہ قراردے دیا نیب کرپشن ختم کرنے کی بجائے کرپشن کا گڑھ بن چکا،مشرف اور بعد کے ادوارمیں نیب کو سیاسی مقاصدکیلئے استعمال ... مزید-سیکرٹری وزارتِ انسداد منشیات اقبال محمود کا اے این ایف ہیڈکوارٹر راولپنڈی کا دورہ-ن لیگ خیبرپختونخواہ دوست محمد خان نے پیپلزپارٹی میں شمولیت کا اعلان کردیا

GB News

مراعات یافتہ طبقے کو ہرصورت میں ٹیکس دینا پڑیگا ،وزیر اعلیٰ

Share Button

گلگت(خصوصی رپورٹ)وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا ہے کہ گلگت بلتستان میں جن لوگوں کی کروڑوں روپے کی آمدن ہے انہیں ٹیکس نظام میں شامل کرنا پڑیگا اس کے بغیر ہم ترقی نہیں کرسکتے ہیں مراعات یافتہ طبقے کو ہرصورت میں ٹیکس دینا پڑیگا وہ لوگ آئینیحقوق کی آڑ میں اپنی دولت نہیں چھپا سکتے ہیں جو لوگ آئینی حقوق کی آڑ میں امیروں اور مراعات یافتہ طبقے کو ٹیکس سے بچانا چاہتے ہیں وہ اس قوم اور اس علاقے کی ترقی کے سب سے بڑے دشمن ہیں انہوں نے بدھ ہے روز اسلامی تحریک کے رکن اسمبلی کیپٹن (ر) محمد شفیع کی ایک تحریک التوا پر ہونے والی بحث کے اختتام پر ایوان سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم یہاں گورننس آرڈر 2009ء کے تحت بیٹھے ہوئے ہیں علاقے میں ٹیکس نافذ کرنے کا اختیار گلگت بلتستان کونسل کے پاس ہے اورماضی کے دور حکومت میں گلگت بلتستان کونسل نے باقاعدہ قانون سازی کرکے یہاں پر ٹیکس نافذ کیا ہے انہوں نے کہا کہ ہم گزشتہ 70سال سے تمام اشیا پر ٹیکس دے رہے ہیں باقی جو ٹیکس نافذ کیا ہے وہ ان لوگوں پر ہے جنہوں نے گلگت بلتستان میں اربوں کے وسائل بنائے ہیں اور کروڑوں روپے کی سالانہ تنخواہ لیتے ہیں ان ٹیکسز سے غریب عوام پر کوئی فرق نہیں پڑتا ہے ان ٹیکسز سے نہ آٹا مہنگا ہوتا ہے نہ ٹماٹر ،پیاز مہنگا ہوتا ہے انہوں نے کہا کہ پہلی بار گلگت بلتستان کونسل کے ممبران کو پانچ پانچ کروڑ کے ترقیاتی فنڈز دئیے گئے ہیں مختلف ٹیکسز کی مد میں ڈیڑھ ارب روپے جمع ہوا تھا اس میں سے سوا ارب روپے ترقیاتی منصوبوں کی شکل میں ہمیں واپس ملے ہیں اس فنڈز سے ہم گلگت بلتستان کے شہروں کی سڑکوں کو بہتر بنائینگے انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان میں اس مرتبہ پندرہ لاکھ سیاح آئے ہیں ان سیاحوں کو سہولیات فراہم کرنے اور سیکورٹی فراہم کرنے کیلئے صوبائی حکومت کے پندرہ کروڑ روپے کے اضافی اخراجات ہوئے ہیں اور سیاحوں کی وجہ سے گلگت بلتستان کے ہر ہوٹل والے نے دس سے پندرہ کروڑ روپے منافع کمایا ہے ہم نے کسی ہوٹل والے سے دس روپے بھی نہیں لئے ہیں اگر ملک کے دوسرے کسی ضلع میں اس طرح کی آمدنی ہوتی تو ہوٹل والے سے 30فیصد ٹیکس کی مد میں وصول کرکے سرکاری خزانے میں جمع ہوتے مگر ہم نے سیاحوں کو سہولیات دیں سڑکیں بہتر بنائی تاکہ ان ہوٹل والوں کی آمد ن میں اضافہ ہو اور ٹیکس دینے کے قابل ہوں مگر اس کے باوجود ہم نے ان پر کوئی ٹیکس نہیں لگایا انہوں نے سی پیک کے حوالے سے امریکی وزیر دفاع کے بیان پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ سی پیک ایک گیم چینجز منصوبہ ہے جس سے یقیناً امریکہ کو تکلیف ہوگی امریکہ کو یہ خدشہ ہے کہ یہ منصوبہ کامیاب ہوگیا تو پاکستان کی معیشت مضبوط ہوگی انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان کی تمام سیاسی جماعتیں اور عوام سی پیک منصوبے پر متحد ہیں ہم نے سی پیک کے تحت کیا فائدہ لینا ہے یا کیافائدہ لیا ہے اس پر اختلاف ضرور ہے اور یہ سی پیک منصوبے کے خلاف نہیں ہے سی پیک منصوبہ گلگت بلتستان کی تمام سیاسی جماعتیں اور عوام میں دو رائے نہیں ہے سب متفق ہیں انہوں نے کہا کہ جب کے کے ایچ منصوبہ شروع ہوا تب بھی بعض ممالک نے اس روکنے کی کوشش کی تھی مگر کامیاب نہ ہوسکے تھے اب بھی بعض ممالک کوشش کرینگے مگر سی پیک کے خلاف ان کی کوئی سازش کامیاب نہیں ہوگی اس سے قبل ایوان میں تحریک التوا پیش کرتے ہوئے اسلامی تحریک کے رکن اسمبلی کیپٹن (ر) شفیع خان نے کہا کہ امریکی وزیر دفاع نے سی پیک کیخلاف بیان دیا ہے اس حوالے سے ایوان میں بحث ہونی چاہیے انہوں نے کہا کہ اگر گلگت بلتستان کی آئینی حیثیت کا تعین کردیا جاتا تو آج امریکہ کی طرف سے ایسا بیان نہیں آتا انہوں نے کہا کہ پہلے بینکوں سے پچاس ہزار روپے نقد رقم نکالنے پر دوہولڈنگ ٹیکس لگتا تھا اب فنڈز ٹرانسفر کرنے اور کراس چیک پر بھی بینکوں نے ٹیکس کٹوتی شروع کردی ہے اس پر بحث کی جائے ڈپٹی سپیکر جعفراللہ خان نے تحریک التوا کی حمایت کرتے ہوئے کہا کہ گلگت بلتستان متنازعہ علاقہ نہیں ہے یہ پاکستان کا حصہ ہے یہاں کے عوام نے ان علاقوں کو آزاد کراکے پاکستان سے الحاق کیا ہے دنیا کی کوئی طاقت ہمیں پاکستان سے الگ نہیں کرسکتی ہے انہوں نے کہا کہ ہمیں ستر سال سے اس طرح نہیں رکھنا چاہیے ہم نے قرار داد بھی منظور کی ہے ہمیں قومی اسمبلی سینیٹ اور دیگرآئینی اداروں میں نمائندگی دی جائے انہوں نے کہا کہ ودہولڈنگ ٹیکس پی پی نے نافذ کیا ہے ہم مجبوراً برادشت کررہے ہیں پارلیمانی سیکرٹری اورنگزیب ایڈووکیٹ نے کہا کہ امریکی وزیر دفاع کے بیان کی وفاقی حکومت نے مذمت کی ہے ہم بھی مذمت کرتے ہیں انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان کونسل نے2014ء میں گلگت بلتستان میں ٹیکسوں کا نفاذ کیا اب ٹیکس واپس لینے کی باتیں دیوار سے سر ٹکرانے کے مترادف ہے صوبائی وزیر ایکسائز حیدر خان نے کہا کہ سی پیک کے حوالے سے امریکی وزیر دفاع کے بیان سے ہمیں متاثر نہیں ہونا چاہیے گلگت بلتستان کو متنازعہ قرار دیکر پاکستان سے الگ کرنا صرف ایک خواب ہے انہوں نے کہا کہ ایک طرف ہم صوبائی طرز کے اختیارات مانگتے ہیں دوسری طرف ایک روپیہ ٹیکس دینے کیلئے بھی تیار نہیں ہیں اگر ہمیں حق حکمرانی کی جانب جانا ہے تو مناسب ٹیکس دینا ہوگا کاچو امتیاز حیدر نے کہا کہ اس علاقے میں بڑے مسائل ہیں ہمیں توقع ہے کہ سی پیک کی وجہ سے ہمارے مسائل حل ہونگے انہوں نے کہا کہ ایک ایک کرکے تمام ٹیکسز یہاں پر لاگو کیاجارہا ہے فاٹا کے عوام اور نمائندے ٹیکسوں کیخلاف سڑکوں پر نکل آئے ہیں کیا وفاقی حکومت یہ چاہتی ہے کہ گلگت بلتستان کے عوام بھی آئینی حقوق کیلئے سڑکوں پر نکل آئیں راجہ جہانزیب خان نے کہا کہ ہم سی پیک کے حوالے سے امریکی موقف کی مذمت کرتے ہیں انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان کے عوام نے پاکستان سے الحاق کیا ہے پورے ملک میں بہت سے علاقے ایسے ہیں جہاں پر ٹیکس کا نفاذ نہیں ہے ہم ٹیکس دینے کیلئے تیار ہیں مگر اس سے قبل ہمیں قومی اسمبلی اور سینیٹ میں نمائندگی دی جائے سکندر علی نے امریکہ وزیر دفاع کے بیان کی مذمت کرتے ہوئے کہاکہ امریکہ کبھی نہیں چاہیے گا کہ پاکستان ترقی کرے انہوں نے کہا کہ امریکہ کوسی پیک منصوبے کے بعد یاد آیا کہ گلگت بلتستان متنازعہ علاقہ ہے انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان کے عوام لازوال قربانیاں دی ہیں وفاقی حکومت گلگت بلتستان کی آئینی حیثیت کا تعین کرکے قومی اسمبلی اور سینیٹ میں نمائندگی دے ۔

Facebook Comments
Share Button