GB News

تیرہ نومبر کو پو را گلگت بلتستان جام کر دیا جا ئے گا،انجمن تا جران

Share Button

گلگت ( ثاقب عمر )انجمن تا جران گلگت بلتستان و کور کمیٹی کے اراکین نے کہا ہے کہ تیرہ نومبر کو پو را گلگت بلتستان جام کر دیا جا ئے گا اور حکومت کے کچھ افراد ہڑتال کو ناکا م بنانے کے لیئے کام کر رہے ہیں اور اس سے قبل انجمن تا جران کو بلا کر دھوکہ دیا گیا اور ابھی ایک بار پھر دھو کہ دینے کی کوشش میں لگے ہو ئے ہیں ۔حکومت کو جتنا وقت دینا تھا دے چکے ہیں مزید کو ئی مہلت نہیں دے سکتے ہیں تمام اقسام کے ٹیکسز کے خاتمے کا نو ٹیفکیشن نہیں ملتا تب تک غیر معینہ مدت تک ہڑ تال جا ری رہے گی اور پٹر ولیم ایسو سی ایشن کے صدر جہانگیر ملک کو ایک روز کی یقین دہا نی کرا ئی گئی ہے پٹر ولیم ایسو سی ایشن کے مقررہ تاریخ تک نو ٹیفکیشن نہیں ملا تو تیرہ نومبر کو وہ ہڑتال میں شامل ہو نگے اگر پٹر ولیم اایسو سی ایشن کے تحفظات دور بھی ہوئے تو ان کی جانب سے مکمل یقین دہا نی کرائی گئی ہے کہ قومی ایشوز پہ جو بھی قدم اٹھا یا جائے گا ساتھ دینگے ۔ہفتے کے روز انجمن تاجران کے صدر محمد ابراہیم ، جنر ل سیکر یٹری مسعود الرحمن ، پی پی پی کے رہنماء میر باز کیتھران ، عوامی ایکشن کمیٹی کے وائس چیئر مین فدا حسین ، اما میہ سپریم کو نسل کے ممبر سید یعصب الدین ، پی ٹی آئی کے رہنماء عزیزاحمد ، گلگت بلتستان کنٹریکٹرز ایسو سی ایشن کے صدر فردوس احمد ، ہو ٹل ایسو سی ایشن کے صدر راجہ ناصر اور منرلز اینڈ جیمز کے رکن راجہ میر نواز میر ودیگر نے ہنگا می پریس کانفرنس کر تے ہو ئے صو با ئی حکومت کے اراکین کے جاری کردہ بیان کو عوام کو دھو کہ دینے کی کوشش قرار دیا اور حکومتی اراکین کے ہڑتال کو ناکام بنانے کی سازش قرار دیتے ہو ئے کہا گیا کہ حکومت کے اراکین صرف اپنے مراعات سے مطلب رکھتے ہیں پنجاب کے وزیر اعلیٰ سے زیادہ گلگت بلتستان کے وزیر اعلیٰ کی تنخواہ اور مراعات زیاد ہ ہیں انہوں نے وفاق میں بھی جاکر اپنے لیئے مراعات مانگے ہیں ۔ اب انہی اراکین اسمبلی کی جانب سے مزید چودہ اقسام کے ٹیکسز لگانے کی تیاری ہے جس کے تحت ہم مر غی اور مال مو یشی پالنے کے بھی ٹیکس ادا کر ینگے ۔ جب تک تمام اقسام کے ٹیکسز کے معطلی کا نو ٹیفیکشن نہیں ملتا تب تک کو ئی ایک دکان نہیں کھلے گی اور مکمل شٹر ڈائون سمیت پہیہ جام ہو گا ۔انہوں نے کہا کہ جس حکومت نے بھی ٹیکس لگا یا ہے ان سے ہمیں کو ئی سروکار نہیں ہے ہم ٹیکس کے خاتمے کا مطا لبہ کر رہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ پہلے بھی پارلیمانی سکیریٹری اور ان کے حکومتی اراکین نے دھو کہ دیا مزید ان کے دھو کے میںکو ئی بھی نہیں آئے گا اور جو بھی فیصلہ ہو گا وہ کور کمیٹی کے اراکین کی مشاورت سے کیا جا ئے گا ۔اس موقع پہ کنٹریکٹر ایسو سی ایشن کے صدر فردوس احمد نے کہا کہ انجمن تا جران کے ہڑتال کی حمایت کر تے ہیں اور تمام سر کاری و غیر سر کاری تعمیراتی کام منجمد ہو نگے کو ئی بھی کام نہیں کیا جائے گا ۔انہوں نے کہا کہ وزیر اعلیٰ نے کونسل کے فعالیت تک ہم سے مہلت مانگ کر ابھی تک ٹیکس ختم نہیں کیا ہے اور 43ارب سے زیادہ ہم ٹیکس دے رہے ہیں لیکن ہمارا سالانہ بجٹ اٹھا رہ ارب ہے ۔اس قم کے ڈمی صو بے میں مزید ہم ظلم بر داشت نہیں رینگے اور تیرہ نومبر ہڑتال کو کامیاب بنایا جا ئے گا ۔

 

Facebook Comments
Share Button