تازہ ترین

Marquee xml rss feed

وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کا خصوصی اجلاس کئی گھنٹوں سے جاری ہر ایک وزارت کو عملدرآمد کیلئے پانچ سالوں پر محیط مخصوص سٹرٹیجک پلان کی تیاری کا ہدف دیا ... مزید-منگنی کسی سے شادی کسی سے ،لڑکی نے منگیتر کو سبق سکھا دیا لڑکی نے بے وفائی پر حملہ کر کے منگیتر، اُس کی بیوی اور والدہ کو زخمی کردیا-مرکز میں نیاپاکستان بناہے،اقتصادی طورپرملک کی صورتحال ابتر ہے، آفتاب شیرپاؤ حکومت کی 100دن کی کارکردگی نظرنہیں آرہی،خیبر پشتوخوا اور بلوچستان میں لا پتہ افراد کا مسئلہ ... مزید-بیرون ممالک پاکستان کا موجودہ حکومت پر اعتماد کا اظہار جولائی سے نومبر کے درمیان بیرون ممالک سے 9 ارب ڈالرز سے زائد ترسیلات زر بھیج دیں-بدعنوان عناصر کیخلاف بلاتفریق کارروائی کی جانی چاہئے ، علی امین خان گنڈا پور اپوزیشن احتساب سے بچنے کیلئے حکومت پر بلاوجہ تنقید کر رہی ہے،پی ٹی آئی کسی بدعنوان کو معاف ... مزید-سپیکر قومی اسمبلی کا راجہ ریاض کی جانب سے (ن) لیگ کی قیادت کیخلاف نازیبا الفاظ کے استعمال پر انتباہ جاری آئندہ اس طرح کے الفاظ استعمال کئے تو ان کے خلاف کارروائی کی جائے ... مزید-نوجوان قوم کا قیمتی سر مایہ ہیں انہوں نے ہی مستقبل میں ملک کی باگ ڈور سنبھالنی ہے،ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی حکومت بلوچستان میں نئے تعلیمی ادارے خصوصا ٹیکنیکل تعلیم ادارے ... مزید-کسی کا نام ناجائز طور پر ای سی ایل میں ڈالنا اور پرامن احتجاج سے روکنا درست اقدام نہیں ہے ،ْشیریں مزاری-آرمی چیف سے چین کے نائب وزیرخارجہ کی ملاقات علاقائی سیکیورٹی صورتحال ،باہمی دلچسپی کے امور اور دوطرفہ تعاون بڑھانے پر بات چیت-پاکستان اور بھارت کے درمیان مذاکرات کے علاوہ امن کا کوئی دوسرا راستہ نہیں‘ شاہ محمود قریشی پاکستان افغانستان میں پائیدار امن کا خواہاں ہے‘ خطے کے دیگر ممالک کے ساتھ ... مزید

GB News

شمالی کوریا کے راہنما چھوٹے اور موٹے ہیں لیکن دوستی کرنا چاہتا ہوں،ٹرمپ

Share Button

واشنگٹن :امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے شمالی کوریا کے رہنما کم جونگ کی جانب سے انھیں ’بوڑھا‘ کہنے کہ جواب میں کہا ہے کہ انھوں نے تو کبھی کم جونگ کو ’پست قد اور موٹا‘ نہیں کہا۔دوسری جانب صدر ٹرمپ نے شمالی کوریا کے رہنما سے دوستی کی خواہش بھی ظاہر کی ہے۔واشنگٹن اور پیانگ یانگ کے مابین الفاظ کی جنگ کافی عرصے سے جاری ہے۔

صدر ٹرمپ جو ان دنوں اشیا کے دورے پر ویتنام میں ہیں، نے کہا کہ انھوں نے کِم جونگ ان سے دوستی کرنے کی بہت کوشش کی اور شاید یہ کسی روز ہو بھی جائے لیکن ایسا کب ہو گا اس بارے میں کچھ نہیں کہا جا سکتا۔ویتنام جانے سے قبل صدر ٹرمپ نے شمالی کوریا کے رہنما کے خلاف ٹویٹر پر لفظی جنگ کی۔

یاد رہے کہ شمالی کوریا نے صدر ٹرمپ کے ایشیا کے دورے پر تنقید کی تھی اور وزارتِ خارجہ نے امریکی صدر کو ایک مرتبہ پھر ‘جنگجو’ اور ‘بدمزاج’ قرار دیتے ہوئے اپنے جوہری پروگرام کو جاری رکھنے پر زور دیا تھا۔

ویتنام کے دارالحکومت ہنوئی میں پریس کانفرنس میں ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ ‘یہ کتنا ہی اچھا ہو گا اگر وہ اور کِم جونگ ان دوست بن جاتے ہیں۔جہاں ایک طرف صدر ٹرمپ نے کِم جونگ ان سے دوستی کرنے کی خواہش ظاہر کی وہیں ٹویٹر پر اپنی ناراضی کا اظہار بھی کیا۔

صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ٹویٹ کی ’کم جونگ ان مجھے بوڑھا کہہ کر کیوں با بار بے عزت کر رپے ہیں۔ میں نے انھیں کبھی پست قد اور موٹا نہیں کہا۔ میں نے ان کا دوست بننے کی بہت کوشش کی ہے، ہو سکتا ہے کسی دن یہ ہو بھی جائے۔

واضح رہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ ماضی میں کِم جونگ ان کو ‘پاگل آدمی’ اور ‘راکٹ مین’ قرار دے چکے ہیں۔ویتنام میں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے صدر ٹرمپ نے کہا کہ وہ خطے میں تنازعات کو حل کروانے کے لیے ثالث کا کردار ادا کرنے پر تیار ہیں۔انھوں نے کہا ’میں بہت اچھا ثالت ہوں۔

Facebook Comments
Share Button