تازہ ترین

Marquee xml rss feed

وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کا خصوصی اجلاس کئی گھنٹوں سے جاری ہر ایک وزارت کو عملدرآمد کیلئے پانچ سالوں پر محیط مخصوص سٹرٹیجک پلان کی تیاری کا ہدف دیا ... مزید-منگنی کسی سے شادی کسی سے ،لڑکی نے منگیتر کو سبق سکھا دیا لڑکی نے بے وفائی پر حملہ کر کے منگیتر، اُس کی بیوی اور والدہ کو زخمی کردیا-مرکز میں نیاپاکستان بناہے،اقتصادی طورپرملک کی صورتحال ابتر ہے، آفتاب شیرپاؤ حکومت کی 100دن کی کارکردگی نظرنہیں آرہی،خیبر پشتوخوا اور بلوچستان میں لا پتہ افراد کا مسئلہ ... مزید-بیرون ممالک پاکستان کا موجودہ حکومت پر اعتماد کا اظہار جولائی سے نومبر کے درمیان بیرون ممالک سے 9 ارب ڈالرز سے زائد ترسیلات زر بھیج دیں-بدعنوان عناصر کیخلاف بلاتفریق کارروائی کی جانی چاہئے ، علی امین خان گنڈا پور اپوزیشن احتساب سے بچنے کیلئے حکومت پر بلاوجہ تنقید کر رہی ہے،پی ٹی آئی کسی بدعنوان کو معاف ... مزید-سپیکر قومی اسمبلی کا راجہ ریاض کی جانب سے (ن) لیگ کی قیادت کیخلاف نازیبا الفاظ کے استعمال پر انتباہ جاری آئندہ اس طرح کے الفاظ استعمال کئے تو ان کے خلاف کارروائی کی جائے ... مزید-نوجوان قوم کا قیمتی سر مایہ ہیں انہوں نے ہی مستقبل میں ملک کی باگ ڈور سنبھالنی ہے،ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی حکومت بلوچستان میں نئے تعلیمی ادارے خصوصا ٹیکنیکل تعلیم ادارے ... مزید-کسی کا نام ناجائز طور پر ای سی ایل میں ڈالنا اور پرامن احتجاج سے روکنا درست اقدام نہیں ہے ،ْشیریں مزاری-آرمی چیف سے چین کے نائب وزیرخارجہ کی ملاقات علاقائی سیکیورٹی صورتحال ،باہمی دلچسپی کے امور اور دوطرفہ تعاون بڑھانے پر بات چیت-پاکستان اور بھارت کے درمیان مذاکرات کے علاوہ امن کا کوئی دوسرا راستہ نہیں‘ شاہ محمود قریشی پاکستان افغانستان میں پائیدار امن کا خواہاں ہے‘ خطے کے دیگر ممالک کے ساتھ ... مزید

GB News

حکومت کا وزارت خزانہ میں مشیر لانے کا فیصلہ

Share Button

لاہور: مسلم لیگ ن کے اہم مشاورتی اجلاس کی اندرونی کہانی نیو نیوز کو حاصل ہو گئی۔ معتبر ذرائع نے نمائندہ خصوصی محمد عاصم نصیر کو بتایا کہ وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار کی بیماری کے باعث وزارت خزانہ میں مشیر لائے جانے کا فیصلہ کیا گیا ہے اور وفاقی وزیر خزانہ کے نیچے کام کرنے کے لیے مفتاح اسماعیل کو مشیر خزانہ لگائے جانے کا قوی امکان ہے۔

اجلاس میں اسپیکر ایازصادق اور وزیر اعلیٰ پنجاب شہبازشریف نے پیپلز پارٹی سے رابطوں پر بریفنگ دی۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ 19 نومبر کے ایبٹ آباد جلسے میں وزیراعظم شاہد خاقان عباسی سمیت دیگر لیگی قیادت بھی شریک ہو گی اور اپنا مقدمہ عوامی عدالت میں بھرپور پیش کیا جائے گا۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ مفاہمت کو ترجیح دی جائے گی۔ اس کے ساتھ شریف خاندان کے یکطرفہ احتساب کے خلاف آواز بھی بلند کی جاتی رہے گی۔ اجلاس تقریبا 3 گھنٹے سے جاری ہے جس میں متعدد اہم فیصلے بھی متوقع ہیں۔

ادھر حکومت نے وزیر خزانہ اسحاق ڈار کو مشترکہ مفادات کونسل کی رکنیت سے ہٹا دیا ہے جس کا نوٹیفکیشن بھی جاری کر دیا گیا ہے۔ وزیر خزانہ کی جگہ وزیر داخلہ احسن اقبال کو مشترکہ مفادات کونسل کا رکن مقرر کیا گیا ہے۔

Facebook Comments
Share Button