GB News

حکومت کا وزارت خزانہ میں مشیر لانے کا فیصلہ

Share Button

لاہور: مسلم لیگ ن کے اہم مشاورتی اجلاس کی اندرونی کہانی نیو نیوز کو حاصل ہو گئی۔ معتبر ذرائع نے نمائندہ خصوصی محمد عاصم نصیر کو بتایا کہ وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار کی بیماری کے باعث وزارت خزانہ میں مشیر لائے جانے کا فیصلہ کیا گیا ہے اور وفاقی وزیر خزانہ کے نیچے کام کرنے کے لیے مفتاح اسماعیل کو مشیر خزانہ لگائے جانے کا قوی امکان ہے۔

اجلاس میں اسپیکر ایازصادق اور وزیر اعلیٰ پنجاب شہبازشریف نے پیپلز پارٹی سے رابطوں پر بریفنگ دی۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ 19 نومبر کے ایبٹ آباد جلسے میں وزیراعظم شاہد خاقان عباسی سمیت دیگر لیگی قیادت بھی شریک ہو گی اور اپنا مقدمہ عوامی عدالت میں بھرپور پیش کیا جائے گا۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ مفاہمت کو ترجیح دی جائے گی۔ اس کے ساتھ شریف خاندان کے یکطرفہ احتساب کے خلاف آواز بھی بلند کی جاتی رہے گی۔ اجلاس تقریبا 3 گھنٹے سے جاری ہے جس میں متعدد اہم فیصلے بھی متوقع ہیں۔

ادھر حکومت نے وزیر خزانہ اسحاق ڈار کو مشترکہ مفادات کونسل کی رکنیت سے ہٹا دیا ہے جس کا نوٹیفکیشن بھی جاری کر دیا گیا ہے۔ وزیر خزانہ کی جگہ وزیر داخلہ احسن اقبال کو مشترکہ مفادات کونسل کا رکن مقرر کیا گیا ہے۔

Facebook Comments
Share Button