تازہ ترین

Marquee xml rss feed

حکومت کسی ریٹائرڈ جج کو نگراں وزیر اعظم نہیں بنانا چاہتی-سرگودھا میں مریم نواز کی تصاویر پر کالی سیاہی سے حمزہ لکھ دیا گیا-پی ٹی آئی 2013ء کے الیکشن سے بھی کم سیٹیں جیتے گی-نوزائیدہ بچوں کی اموات، پاکستان دنیا بھر میں پہلے نمبر پر پاکستان میں ہر22میں سے ایک بچہ پہلے مہینے ہی موت کا شکار،صحت کا بجٹ ناکافی ہے،ترجمان یونیسیف-پاکستان دہشت گردی کی مالی معاونت روکنے کے لیے سخت کارروائی نہیں کر رہا،امریکہ پاکستان کو دہشت گردوں کی مالی معاونت کرنے والے ممالک میں شامل کرنے کا فیصلہ آج ہوگا،ترجمان ... مزید-کل جماعتی حریت کانفرنس کی طرف سے سیدعلی گیلانی کی مسلسل غیرقانونی نظربندی کی مذمت بھارت کی عدلیہ اور انتظامیہ کے عدل وانصاف کے حوالے سے مسلمانوں کے ساتھ دوہرا معیار ... مزید-چیف جسٹس نے ائیر پورٹ پر میرے ہاتھ چومے اور پھر میری ہاتھوں کو اپنی آنکھوں سے لگایا ،جاوید ہاشمی-رانا ثناءاللہ اتنی بیہودہ گفتگو کرتے ہیں کہ شرم آ جاتی ہے-نواز شریف نے ہر حال میں لندن جانے کا فیصلہ کر لیا-نواز شریف کی تقاریر پر پابندی کی بجائے انہیں الٹا لٹکا دینا چاہئے

GB News

ٹیکسوں کے خلاف ہڑتال : عدالتوں میں زیر سماعت مقدمات کی کارروائی ملتوی

Share Button

گلگت(خصوصی رپورٹر)ٹیکسوں کے خلاف ہڑتال میں وکلاء تنظیموں نے تمام اعلیٰ اور ماتحت عدالتی کارروائی کا مکمل بائیکاٹ کیا جس کی وجہ سے عدالتوں میں زیر سماعت مقدمات کی کارروائی کو ملتوی کیاگیا گلگت میں پیر کے روز کی ہڑتال میں تمام وکلاء تنظیموں نے بھی عدالتی کارروائی کا بائیکاٹ کیا جس کی وجہ سے سینکڑوں سائلوں کے فوجداری اور دیوانی مقدمات کی سماعت التواء کا شکار ہوئی وکلاء کے بائیکاٹ اوراحتجاج کی وجہ سے عدالتوں میں سینکڑوں سائلوں کے مقدمات کی سماعت نہ ہوسکی۔ ٹیکسوں کے خلاف ہڑتال کی وجہ سے سرکاری اداروں ،سرکاری و نجی تعلیمی اداروں میں حاضری انتہائی کم رہی پیرکے روز کامیاب ہڑتال کی وجہ سے گلگت میں صوبائی ،ڈویژنل اور ڈسٹرکٹ سطح کے سرکاری دفاتر سے ملازمین کی اکثریت بھی ایسی غائب رہی جیسے کہ ہڑتال سرکاری سطح پر کی گئی ہے کئی دفاتر کے دور کے دوران یہ بات سامنے آئی کہ اکثر دفاتر میں 5 فیصد سے زائد ملازمین حاضر ہی نہ تھے جبکہ سرکاری و نجی تعلیمی اداروں میں طلبہ کی حاضری بھی انتہائی کم رہی بلکہ اکثر نجی تعلیمی اداروں کے دروازے ہی بند رہے ۔ ٹیکسوں کے خلاف ہڑتال کے دوران گلگت شہر کے اکثر نجی بنک کے شٹرڈائون رہے جب بنکوں سے رابطہ کیاگیا تو بنک عملے نے بتایا کہ چونکہ اب تک ہمیں کوئی نوٹیفکیشن نہیں ملا ہے جس کی وجہ سے لوگ ہمیں تنگ کرتے ہیں اس لئے بنک میں معمول کا کام جاری رکھا ہے البتہ لوگوں کے ساتھ لین دین کے معاملے کو محدود کر کے مین گیٹ کو بند کر کے چھوٹے دروازے کو کھول کر چھوٹے امور کو انجام دے رہے ہیں ۔

Facebook Comments
Share Button