تازہ ترین

Marquee xml rss feed

عمران خان کے لیے راستہ صاف، سابق وفاقی وزیر نے این اے 131لاہور سے کاغذات نامزدگی واپس لے لیے پاکستان تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کرنے والے ہمایوں اختر نے عمران خان کے ... مزید-سندھ کے عوام کو وڈیروں نے اپنی طاقت کے زور سے نسل درنسل غلام بنائے رکھا، عائشہ گلالئی پیپلز پارٹی نے سندھ کو 10 میں بہتر بنانے کے بجائے مزید خراب کردیا، ضلع سجاول میں ... مزید-سندھ پولیس کی سطح پر شجرکاری مہم کا فوری طور پر آغاز کیا جائے ، آئی جی سندھ کی ہدایات-شاہ عبدالطیف بھٹائی انسائیکلوپیڈیا کی تین جلدیں شائع ہونا تھیں جن میں سے آج پہلی جلد شائع ہوگئی، نگراں وزیراعلیٰ سندھ شاہ عبداللطیف بھٹائی انسائیکلو پیڈیا سندھی ... مزید-پی پی پی کے حلقہ پی بی 25سے امیدوار شریف خلجی (کل) پریس کانفرنس کرینگے-سندھ کو پیپلزپارٹی اور ایم کیو ایم نے مل کر تباہ کردیا ہے، عوام بنیادی مسائل حل نہ ہونے سے پریشان ہیں، مصطفی کمال سندھ میں اگلا وزیر اعلیٰ پی ایس پی کا یا پھر ہمارا حمایت ... مزید-ایم ایم اے کے انتخابی دفتر پر پولیس کی فائرنگ پولیس اہلکار کو معطل کر کے واقعے کی مزید انکوائری کا حکم دے دیا گیا، پولیس-حکومت اور اس کے کارندوں نے 80 سالہ بزرگ پنشنرز کو عمر کے آخری دور میں بھی شدید عذاب میں مبتلا کررکھا ہے، جنرل سیکریٹری ایمپلائز ایسوسی ایشن چیف جسٹس کے ریمارکس عدالت ... مزید-عابد باکسر نے شہباز شریف کے لیے نئی مصیبت کھڑی کردی جائیداد ہتھیانے کے لیے مجھ سے قتل کروایا گیا،بعد میں مجھے ہی کیسسز میں ملوث کروا کر جعلی مقابلے میں قتل کروانے کی کوشش ... مزید-بلاول بھٹو زرداری انتخابات میں شفافیت پر بات کرنے سے قبل نواز شریف کا ساتھ دینے پر قوم سے معافی مانگیں ،ْفواد چوہدری بلاول کی جانب سے کسی نام نہاد سازش کی جانب اشارہ ... مزید

GB News

پاکستانی امداد میں کمی سرحدی نگرانی کو متاثر کر سکتی ہے، امریکی کانگریس

Share Button

امریکا کی جانب سے پاکستان کو دی جانے والی معاشی اور فوجی امداد کے حوالے سے کانگریس کی رپورٹ جاری کردی گئی، جس کے اعداد و شمار ظاہر کرتے ہیں کہ امریکا کی پاکستانی امداد میں کمی افغانستان میں سرحد پار دہشت گردی خو ختم کرنے کے لیے واشنگٹن کی خواہش کو متاثر کر سکتی ہے۔کانگریس ریسرچ سروس (سی آر ایس ) کی رپورٹ کے مطابق پاکستان کے لیے امریکی اقتصادی اور فوجی امداد 11 ستمبر 2001 (11/9) کے بعد 2 ارب 20 کروڑ ڈالر سالانہ سے کم ہو کر 35 کروڑ ڈالر سالانہ رہ گئی۔تاہم سب سے زیادہ متاثر کوالیشن سپورٹ فنڈ (سی ایس ایف)ہوا، جو پاکستان کو 2200 کلو میٹر طویل افغان بارڈر کی مانیٹرنگ کے لیے دیا جاتا ہے، پاکستان نے افغان سرحد پر طالبان عسکریت پسندوں کی نقل و حمل دیکھنے کے لیے ہزاروں فوجی تعینات کیے ہوئے ہیں۔واشنگٹن کا کہنا ہے کہ پاکستان ان لوگوں کے خلاف کامیاب رہا جنہوں نے ریاست پاکستان کو نقصان پہنچانے کی کوشش کی لیکن سرحد پار سے امریکا اور افغان فورسز پر حملہ کرنے والے افغان طالبان سے لڑنے میں پاکستان نے زیادہ دلچسپی نہیں دکھائی جبکہ پاکستان نے امریکا کے الزام کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ وہ پاکستان اور افغان طالبان کو نشانہ بنا رہا ہے۔پاکستان کے جواب سے مطمئن نہ ہونے پر امریکا نے سی ایس ایف کے ذریعے رقم کی ادائیگی کے لیے شرائط لاگو کردیں جس کے مطابق اگر پاکستان مکمل رقم چاہتا ہے تو اسے حقانی نیٹ ورک کے خلاف کارروائی کرنا ہوگی۔2015 میں امریکی کانگریس نے پاکستان کو سی ایس ایف کی مد میں اضافی طور پر ایک ارب ڈالر تک کی اجازت دی، جس میں سے 30 کروڑ ڈالر حقانی نیت ورک سے متعلق تھے، جس کے لیے سرٹیفکیشن ضروری تھا اور اسے انتظامیہ ختم نہیں کرسکتی تھی۔2016 میں کانگریس نے 90 کروڑ ڈالر منظور کیے جس میں 35 کروڑ ڈالر مشروط تھے جبکہ 2017 میں مزید 90 کروڑ ڈالر منظور کیے جس میں 40 کروڑ مشروط رکھے گئے تھے۔2018 کے لیے کانگریس نے 70 کروڑ ڈالر مزید منظور کیے ہیں جس میں سے 35 کروڑ ڈالر مشروط ہیں جبکہ 2015 یا 2016 میں انتظامیہ کی جانب سے سرٹیفکیٹ جاری نہیں کیا گیا کہ پاکستان کے حقانی نیٹ ورک کو ختم کرنے کے لیے ضروری اقدامات کیے

Facebook Comments
Share Button