تازہ ترین

Marquee xml rss feed

عین ممکن ہے کہ خود عمران خان نے ہی شیخ رشید کو کہا ہو کہ وہ انہیں میڈیا پر جمائما سے شادی کا مشورہ دیں،رحمان ملک شیخ رشید احمد کے عمران خان سے جمائما کی شادی سے متعلق بیان ... مزید-حکومت کے موثر اقدامات اور آپریشن ضرب عضب سے ملک بھر میں دہشت گردی کے واقعات میں نمایاں کمی ہوئی، یہ جنگ دہشت گردوں نے شروع کی لیکن ختم ہم کریں گے،وزیراعلیٰ بلوچستان ... مزید-وزیراعلیٰ بلوچستان کا سول ہسپتال کوئٹہ اور زرغون روڈ چرچ کا دورہ ، زخمیوں کی عیادت کی-ریحام خان نے عمران خان اور ان کے درمیان طلاق کی وجہ بھی علیم خان کو قرار دے دیا-گورنر بلوچستان محمد خان اچکزئی کاسول ہسپتال ٹراما سینٹر کا دورہ ، چرچ حملے میں زخمی مریضوں کی عیادت کی-وزیر اعلی بلوچستان کی زیر صدارت صوبے میں امن و امان کی صورتحال کا جائزہ لینے کیلئے اعلی سطح اجلاس اجلاس میں دہشت گردوں اور شر پسند عناصر کے خلاف مزید مئوثر اور نتیجہ ... مزید-سپر یم کورٹ نے نوازشر یف کیساتھ ہاتھ ہولا رکھا ہے ‘ حدیبیہ پیپر مل کیس میں شریف خاندان کو چھوٹ ملی‘اعتز از احسن جہانگیر ترین نے سپریم کورٹ میں ساری منی ٹریل دی لیکن ... مزید-شہباز شریف نااہل ہو جاتے تو پھرپنجاب میں میرا میچ کس سے پڑتا ،عمران خان اسحاق ڈار نے بستر پر تصویر کھنچوا کو آسکر ایوارڈ کی کارکردگی دکھائی ،سیاسی استحکام کیلئے قبل ... مزید-مناسب نہیں جج شفافیت کے دلائل دیں جبکہ عدلیہ کو وضاحتیں دینے کی کوئی ضرورت نہیں‘ عاصمہ جہانگیر یہ کہنا چاہئے تھا قانون کی بالادستی اور جمہوریت ساتھ ساتھ چلتی ہے یہ ... مزید-مر یم نواز شر یف کا عوام رابط مہم کیلئے ملک گیر جلسے کر نے کا فیصلہ ‘آغاز رواں ماہ رحیم یا ر خان سے کیا جائیگا پاکستان تحریک انصاف اپنی مرضی سے نہیں بلکہ کسی اور کے احکامات ... مزید

GB News

سکردو میں میونسپل کارپوریشن بن گیا ،حفیظ الرحمن

Share Button

سکردو( محمد اسحا ق جلال ) وزیراعلیٰ حافظ حفیظ الرحمن نے کہا ہے کہ فرقے اور علاقے کی بنیادپر نفرت پھیلانے والوں کا ڈٹ کا مقابلہ کریں گے انہیں ہر گز انتہا پسندی اور علاقائیت کو ہوادینے نہیں دیں گے بہت سارے لوگ ذہنی ، سیاسی ، مذہبی اور علاقائی بیمار ہیں ان کی سوچ فرقے اور علاقے سے باہر نہیں نکلتی ہے جو لوگ اس وقت ہمارے اوپر تنقید کر رہے ہیں انہوں نے اپنے دور میں عیاشی ، شراب وکباب کا اڈہ بنایا یہ لوگ ایک ہوٹل سے نکلتے تھے تو انہیں ایمبولنس میں ڈالا جاتا تھا دوسرے ہوٹل سے یہ لوگ ڈیٹھ باڈی کی طرح نکلتے تھے یہ لوگ شراب میں دھت ہو کر لوٹ کھسوٹ کیلئے کہتے ہیں کہ بلتستان کے ساتھ زیادتی کی جارہی ہے سالٹ ویسٹ منجمنٹ کمپنی کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ایک زمانے میں بلدیہ سکردو میں صرف 25ملازمین تھے اور تین ٹریکٹر تھے لیکن بدقسمتی سے یہ تین ٹریکٹر بھی ناکارہ تھے سابق وزیر اعلیٰ کا تعلق بلتستان سے تھا بتایا جائے کہ انہوں نے ایک سوزوکی خرید کر بلدیہ سکردو کو کیوں نہیں دی سابق دور حکومت میں صرف شاہ ویلاز بنا ہے اور شاہ ویلاز بنا کر ڈھائی لاکھ روپے کرایہ وصول کیا گیا اسلام آباد میں اپنے گھر کو کیمپ آفس ظاہر کر کے دس لاکھ روپے ماہوار کرایہ وصول کیا گیا اور سرکاری خزانے کو بھاری نقصان پہنچایا گیا اس وقت میں جی بی ہاوس کے دو کمروںوالے دفتر میں رہتا ہوں اور جودال روٹی میرے ممبران اسمبلی کھاتے ہیں وہی میں کھاتا ہوں ہم دعویٰ نہیں کرتے ہیں کہ ہم نے دودھ اور شہد کی نہریں بہائی ہیں کچھ مسائل حل کئے ہیں کچھ حل کریں گے انہوں نے کہا کہ مجھے بلتستان میں ایک بھی ایسا بڑا منصوبہ دکھا یا جائے جو کسی اور حکومت نے بنایا ہو سارے بڑے منصوبے ہماری پارٹی نے بنائے ہیں پھر بھی کچھ بیمار ذہنیت کے لوگ فرقے اور علاقے کی بنیاد پر ہمارے اوپر تنقید کر رہے ہیں ہم قبضہ مافیاکیلئے نہیں آئے ہیں ہم نے امن کیلئے بڑے کام کئے ہیں ہمارے دور میں ایک بھی لاش بلتستان نہیں آئی گلگت شہر کسی زمانے میں انتہائی پسندی کا مرکز تھا وہاں ہمیشہ کرفیو کا سماں رہتا تھا مگر ہم نے قربانی دے کر اس شہر کو امن کا گہوارہ بنا یا اگر ہم چور ہوتے تو کبھی کھلی کچہریاں نہ لگا تے اس وقت ہم ہر ضلع میں کھلی کچہری لگارہے ہیں اور عوام کے مسائل جان کر ان کے حل کی ہر ممکن کوشش کر رہے ہیں گلگت بلتستان میں ہمیشہ ٹھیکوں اور نوکریوں کے پیچھے سیاست ہو تی رہی ہے ہم ایسا کرنے نہیں دیں گے انہوں نے کہاکہ فرقے اور علاقے کی بنیاد پر بات کرنے والوں کو باور کرانا چاہتے ہیں کہ اگر ہم فرقہ پرست ہو تے تو کشروٹ کی ترقی کیلئے کام کرتے آج کشروٹ میں ایک گلی نہیں بنائی گئی مگر سکردوروڈ کی تعمیر ضرور شروع کی اگر ہم فرقہ پرست ہوتے تو داریل تانگیر کو ضلع بناتے مگر ہم نے ایسا نہیں کیا اور شگر کھرمنگ کو ضلع بنایا روندو کی ترقی کیلئے ہم کام کررہے ہیں انہوں نے کہاکہ سابق ڈپٹی سپیکر جمیل احمد نے گلگت میں اسمبلی کی بلڈنگ کا ٹھیکہ لیا اور پانچ سال میں ٹھیکہ مکمل نہیں کیا جب ان کے خلاف انکوائری کی گئی تو تیس سے پنتیس کروڑ روپے واپس مل گئے دو حکومتیں گزر گئیں لیکن سابق ڈپٹی سپیکر اسمبلی کی عمارت نہ بنا سکے جسکی وجہ سے ہمیں اس کا ٹھیکہ سابق ڈپٹی سپیکر سے چھین کر کسی اور کو دینا پڑا انہوں نے کہاکہ ہم سماجی ایشوز کو نظر انداز کر کے فقہی ایشو ز کو اجاگر کر کے اختلافی بات کر رہے ہیں ہمیں مشترکات پر بات کرنا ہوگی اور انتہا پسندی کو دفن کرنا ہوگا ہم آسمان سے ٹپک کر نہیں آئے عوام کے ووٹ کے ذریعے اقتدار میں آئے ہیں بلتستان کے ساتھ جتنے وعدے کئے تھے ان سب کو ایک ایک کر کے پورا کر دیا ناممکن کو ہم نے ممکن بنا دیا انہوں نے کہاکہ سالٹ ویسٹ منجمنٹ کمپنی کے قیام سے سکردو شہر خوبصورت بنانے میں مدد ملے گی پہلے لوکل گورنمنٹ کے بارے میں لوگ کہتے تھے کہ یہ حکومت کھانے پینے کیلئے موجود ہے مگر اب لوگوں کا یہ تاثر غلط ثابت ہو گیا انہوں نے کہا کہ سکردو میں میونسپل کارپوریشن بن گیا ہے اب اچھا میونسپل کمپلکس بنانے کی ہدایت کی گئی ہے پیپلزپارٹی والے سندھ اور گلگت بلتستان میں صرف جئے بھٹو ، جئے بے نظیر کے نعرے لگاتے ہیں علاقے کی ترقی کیلئے یہ لوگ کچھ بھی نہیں کرتے ہیں ادھر انجمن تاجران سکردو کے صدرغلام حسین اطہر کی قیادت میں ملنے والے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ حفظ الرحمن نے کہاہے کہ انکم ٹیکس توسیعی بل 2012کو مکمل ختم کرنا ممکن نہیں ہے اس بل میں ترمیم کی کوشش کی جارہی ہے اس مقصد کیلئے کمیٹی بھی بنائی گئی ہے کونسل کے ممبران نے مذکورہ بل کو نوٹیفائی کیا ہے غلط فہمی یہ ہوئی کہ پہلے فیصلہ ہوا تھا کہ ٹیکس کی مد میں حاصل ہونے والی آمدنی کا 80فیصد حصہ ہمیں ملے گا مگر ہمیں وہ حصہ نہیں ملا ہے اب ہم سوچ رہے ہیں کہ گلگت بلتستان کے سٹیزن کارپوریٹ سیکٹر پر 50فیصد ٹیکس لگایا جائے گا جو لوگ فائلر ہونگے ان کے اوپر بنکوں کے لین دین پر ٹیکس نہیں کٹیں گے گلگت بلتستان میں اس وقت سو کے قریب بنک موجود ہیں اگر ہم ٹیکس کے بل کو ہی ختم کریں گے تو ان سے ٹیکس کیسے لیں گے انکم ٹیکس بل 2012کے خاتمے سے ہمیں بہت نقصان ہوگا پھر ہم سی پیک کے بعد بننے والی بڑی بڑی صنعتوں سے بھی ٹیکس نہیں لے پائیں گے ٹیکس کے نظام کو ہی اڑا دیں گے تو کوئی فائدہ نہیں ہوگا لہٰذا ایسا نہیں کریں گے تاہم مقامی لوگوں کو ٹیکسز میں رعایت ملے گی غیر مقامی کمپنیوں کو ٹیکس ادا کرنا پڑے گا ٹیکس کی وصولی کے ساتھ ساتھ کرپشن کے خاتمے کیلئے بھی نظام وضع کیا جائے گا آج تک ہمارے ہاں کرپشن کرنے والے کسی کو بھی سزا نہیں ملی انہوں نے کہا کہ کونسل کے 9وفاقی ممبران کسی معاملے میں ووٹ نہیں دے سکتے ہیں ووٹ صرف گلگت بلتستان کے 6ممبران ہی دیتے ہیں فیصلے بھی ان کے اپنے ہوتے ہیں انہوں نے کہاکہ عوامی ایکشن کمیٹی سیاسی ایجنڈا لے کر آرہی ہے لہٰذا انجمن تاجران ان کے ساتھ نہ رہے انجمن اپنے حقوق کیلئے ضرور احتجاج کریں مگر عوام کی ترجمانی کرنے کا انہیں کوئی حق نہیں ہے عوام کی بات کرنے کیلئے عوامی نمائندے موجود ہیں سیاسی بات ہمیں کریں دیں انجمن تاجران سیاست نہ کریں ۔ دوسری جانب و زیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے سکردو میں محکموں کے سربراہان کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ترقیاتی منصوبوں کے ٹینڈر اور پری کے حوالے سے شکایات موصول ہورہی ہے محکمہ تعمیرات تمام ترقیاتی منصوبوں کے ٹینڈر اور پری کے نظام کومکمل شفاف بنائے حکومت کی پالیسی میرٹ ہے۔ کسی قسم کی بے ضابطگی برداشت نہیں کی جائے گی اگر کسی قسم کی بے ضابطگی سامنے آئے تو متعلقہ آفیسران کیخلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ آفیسران اپنے دفاتر کی بجائے فیلڈ وزٹ میں اضافہ کریں اور منصوبوں کے نگرانی کے نظام کو بہتر بنائے سکردو میں بھی بجلی کی کمی کو دور کرنے کیلئے سمارٹ میٹر کا منصوبہ متعارف کرانے کیلئے اقدامات کئے جائیں۔ سٹاف کے نہ ہونے کی وجہ سے محکمہ تعمیرات، برقیات، صحت اور تعلیم کے جو منصوبے مکمل ہونے کے باوجود غیر فعال ہے ان منصوبوں کو فعال کرنے کیلئے سپیشل پے سکیل کے تحت کنٹریکٹ پر ملازمین کی تعیناتی عمل میں لانے کیلئے پالیسی بنائی جارہی ہے۔ و زیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا کہ محکمہ تعمیرات اور محکمہ برقیات کے آفیسران غیر ضروری طور پر سٹیشن سے باہر جانے سے اجتناب کریں۔ بلتستان ڈویژن کی ورک کانفرنس سکردو میں ہی منعقد کی جائے ۔ و زیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا کہ اداروں کی استعداد کار میں اضافہ کیا گیاہے جس کی وجہ سے ترقیاتی منصوبے مقررہ مدت سے قبل مکمل ہورہے ہیں۔ گزشتہ15سالوں سے مردہ منصوبوں کو مکمل کیا گیا ہے۔ و زیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے متعلقہ آفیسرا ن کو ہدایت کی ہے کہ محکمہ تعمیرات کے ریگولر آسامیوں کو جلد مشتہر کرکے میرٹ پر تعیناتیاں عمل میں لائی جاے۔ و زیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا کہ سکردو ڈسٹرکٹ ہسپتال کی تعمیرات ماسٹر پلان کے تحت کی جائے۔ و زیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا کہ محکمہ صحت بلتستان ریجن کے خالی آسامیوں کو جلد مشتہر کیا جائے اور میرٹ پر بھرتیاں عمل میں لائی جاے۔ و زیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا کہ زبیدہ خانم ہسپتال کو پبلک پروائیویٹ پارٹنر شپ کے تحت چلایا جائے گا جس کیلئے معاہدہ طے پایا گیا ہے۔ ہسپتالوں کا نظام آٹومیشن کیا جارہاہے۔ عوام کو بنیادی کی فراہمی یقینی بنانے کیلئے تمام وسائل بروے کار لائے جارہے ہیں۔ و زیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہاکہ خصوصی افراد ہمارے توجہ کے مستحق ہیں لہٰذا سپیشل ایجوکیشن کیلئے مزید زمین فراہم کی جائے گی۔ و زیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا کہ بلتستان میں جرائم کے مکمل خاتمے اور ہوائی فائرنگ کرنے والوں کیخلاف بلاتفریق کارروائی کی جائے بلتستان کے مثبت تشخص کو برقرار رکھاجائے جو کوئی حکومت رٹ کو چیلنج کرے گا اس کیخلاف سخت قانونی کارروائی کی جائے۔

Facebook Comments
Share Button