تازہ ترین

Marquee xml rss feed

لڑکی کو ہراساں کرنے والے ڈرائیور کا بیان سامنے آ گیا لڑکی گاڑی کی پچھلی سیٹ پر تھی کیسے ہراساں کر سکتا تھا؟ حلفیہ کہتا ہوں کہ لڑکی کو ہراساں نہیں کیا-جمائما کا شادی کے بعد عمران خان کے ساتھ رہنے والے گھر کو فروخت کرنے کا فیصلہ جمائما گولڈ سمتھ نے پہلی بار اپنے عالیشان گھر کی تصاویر شئیر کر دیں-مشہور کارٹون کیریکٹر ٹام اینڈ جیری اب لائیو ایکشن میں نظر آئیں گے وارنر بروز کی تخلیق کردہ ٹام اینڈ جیری کارٹون کو لائیو ایکشن میں بنانے کی تیاریاں شروع کی جاچکی ہیں-گلوکاری اور اداکاری کے بعد فرحان سعید کی فلم انڈسٹری میں انٹری سکرپٹ کے مراحل مکمل ‘فلم کی عکس بندی کا آغاز رواں برس دسمبر سے کیا جائے گا-اداکارہ ماہ نور کلین اینڈ گرین مہم کا حصہ بن گئیں بحریہ ٹائون میں اپنے گھرکے باہر پودا لگایا اور سٹرک پر جھاڑو بھی دیا-اداکارہ ساکشی تنورنے بچی گود لے لی یہ بچی میری دعاؤں کا انعام ہے جسے پاکر میں بے انتہا خوش ہوں‘اداکارہ-لوک ورثہ فیسٹیول2نومبر کوشکر پڑیاں میں شروع ہوگا-شلپا شندے نے ریب سے متعلق انکشاف کر کے سب کو حیران کردیا شوبز انڈسٹری میں سمجھوتے کے تحت کچھ لو اور کچھ دو کی بنیاد پر چیزیں ہوتی ہیں شوبز میں ریپ یا زبردستی نہیں بلکہ سب ... مزید-اداکار فیصل قریشی نے فلم بنانے کا اعلان کر دیا یہ فلم 2019 میں نمائش کے لیے پیش کی جائے گی-میںہر نئی فلم کو اپنی پہلی فلم سمجھتا ہوں، ایوشمان کھرانہ میری 3 فلمیں ناکام رہیں جو میری زندگی کا سیکھنے کا بہترین تجربہ تھا، بالی ووڈ اداکار

GB News

چیف سیکرٹری کی پوسٹ کا گریڈ 21سے بڑھا کر 22کرنے کی سفارش

Share Button

اسلام آباد (آئی این پی)سینٹ کی قائمہ کمیٹی برائے امور کشمیر و گلگت بلتستان نے گلگت بلتستان کے چیف سیکرٹری کی پوسٹ کا گریڈ 21سے بڑھا کر 22کرنے کی سفارش کر دی ،جبکہ گلگت بلتستان میں سیاحت کو فروغ دینے کے لئے پبلک اور پرائیویٹ پارٹنر شپ میں ٹوارزم پروموشنل بورڈ بنانے کی بھی تجویز دے دی،کمیٹی نے گلگت بلتستان حکومت سے آغا خان رورل سپورٹ پروگرام کی فنڈنگ سمیت دیگر تفصیلات بھی طلب کر لیں ، کمیٹی کو گلگت بلتستان حکومت کے حکام کی جانب سے بتایا گیا کہ ہم چھ نئے ریسٹ ہائوس بنا رہے ہیں عطاء آباد جھیل کے مقام پر بھی ریزورٹ بنایا جائے گا، گلگت کے نئے ایئرپورٹ کے حوالے سے بھی کام ہورہا ہے،جب تک شتونگ نالے سے پانی کا رخ تبدیل نہیں کیا جائے گا ہم سدپارا ڈیم سے پوری طرح استفادہ حاصل نہیں کر سکتے ، شتونگ نالے سے ایک سو پانچ کیوسک پانی کا رخ موڑیں گے۔بدھ کو سینٹ کی قائمہ کمیٹی برائے امور کشمیر و گلگت بلتستان کا اجلاس سینیٹر پروفیسر ساجد میر کی صدارت میں ہوا۔ چیئرمین کمیٹی نے کہا کہ گلگت بلتستان کی دستوری حیثیت کے معاملے پر سرتاج عزیز کی سربراہی میں کمیٹی بنی تھی ۔اس موقع پر سیکرٹری وزارت امور کشمیر وگلگت بلتستان نے کہا کہ سرتاج عزیز کمیٹی کی چار میٹنگز ہوئیں اور اس کی رپورٹ 28ستمبر کو وزیراعظم کو بھجوا دی گئی ہیں ۔ اس موقع پر سینیٹر رحمن ملک نے کہا کہ وہ رپورٹ ہمیں بھجوا دی جائے۔ گلگت کو صوبے کا درجہ دیا گیا تھا اگر اسے دیگر صوبوں کے برابر درجہ دیا گیا ہے تو اس کو ملنے والی سہولیات اور بجٹ دیگر صوبوں کے برابر نہیں ہیں۔ اس رپورٹ کی سفارشات آئی ہی نہیں ہیں تو یہ معاملہ کمیٹی اجلاس کے ایجنڈے پر کیوں رکھا گیا ہے۔ اس موقع پر چیئرمین کمیٹی نے کہا کہ گلگت میں پاور پراجیکٹس کے سٹاف کی کمی سامنے آئی ہے۔ جس پر سیکرٹری فنانس گلگت بلتستان نے بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ واٹر اینڈ پاور ڈیپارٹمنٹ میں 1478 ریگولر پوسٹیں ہیں جبکہ 4426 ڈائنگ کارڈر پوسٹیں ہیں۔ کل پوسٹیں 5904 ہیں اسی طرح ورکس ڈیپارٹمنٹ میں 2085 ریگولر اور 6894ڈائنگ کارڈر پوسٹیں ہیں۔ ورکس ڈیپارٹمنٹ میں ٹوٹل 8979 پوسٹیں ہیں۔ ہمارے پاس ورکس ڈیپارٹمنٹ میں 2800پوسٹیں شارٹ ہیں۔ 4426پوسٹیں اگر نکال لیں تو ہمارے پاس صرف 1478 باقی بچتی ہیں۔ سیکرٹری فنانس نے کہا کہ 17گریڈ کی پوسٹوں میں 75فیصد حصہ گلگت بلتستان حکومت کا ہے جبکہ 25فیصد حصہ وفاقی حکومت کا ہے۔ اسی طرح 18گریڈ کی پوسٹوں پر 60فیصد حصہ گلگت بلتستان کا ہے۔ چیف سیکرٹری کی پوسٹ گریڈ 21کی ہے جس پر سینیٹر رحمن ملک نے کہا کہ چیف سیکرٹری گریڈ 22کا ہونا چاہئے۔ اس موقع پر نیشنل ہائی وے اتھارٹی حکام کی جانب سے بریفنگ میں کہا گیا کہ گلگت سے شندور تک روڈ کی لمبائی 216کلومیٹر ہے جبکہ چترال سے شندور تک 154کلومیٹر ہے۔ گلگت سے چترال روڈ کے لئے حکومت پاکستان کی طرف سے200ملین کی رقم مختص کی گئی ہے جس پر سینیٹر رحمن ملک نے کہا کہ 200ملین آٹے میں نمک کے برابر بھی نہیں اس میں آپ کیا کریں گے۔ نیشنل ہائی وے اتھارٹی کے حکام نے کہا کہ مارچ تک گلگت سے شندور تک روڈ کی فیزیبلٹی مکمل کرلیں گے۔ روڈ بننے کے بعد پورا علاقہ ترقی کی دوڑ میں شامل ہوجائے گا۔ اس موقع پر واپڈا حکام کی جانب سے بتایا گیا کہ سدپارا ڈیم 2014 میں بناجس سے 17.4میگاواٹ بجلی پیدا ہوتی ہے اس وقت ہمیں روکا گیا کہ شتونگ نالے کا رخ نہیں موڑنا ۔ اس پر سیکرٹری واٹر اینڈ پاور گلگت بلتستان نے کہا کہ جب تک شتونگ نالے سے پانی کا رخ تبدیل نہیں کیا جائے گا ہم سدپارا ڈیم سے پوری طرح استفادہ حاصل نہیں کر سکتے ۔ ہم شتونگ نالے سے ایک سو پانچ کیوسک پانی کا رخ موڑیں گے۔ کمیٹی نے اس معاملے پر محکمہ ماحولیات اور واپڈا کو کمیٹی کے اگلے اجلاس میں طلب کرلیا۔ اس موقع پر سینیٹر رحمن ملک نے کہا کہ سوئٹزر لینڈ گلگت بلتستان کی خوبصورتی کا دس فیصد بھی نہیں ہے۔ گلگت میں پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ میں ٹورازم پروموشنل بورڈ بنایا جائے جو وہاں سیاحت کی سرگرمیوںکو فروغ دے ۔سیکرٹری فنانس گلگت بلتستان نے بتایا کہ ہم چھ نئے ریسٹ ہائوس بنا رہے ہیں عطاء آباد جھیل کے مقام پر بھی ریزورٹ بنایا جائے گا۔ گلگت کے نئے ایئرپورٹ کے حوالے سے بھی کام ہورہا ہے جس پر رحمن ملک نے کہا کہ گلگت بلتستان میں نئے ایئر پورٹبنانے کی کوشش کی جائے۔ گلگت میں صرف سی ون تھرٹی اور اے ٹی آر طیارہ ہی لینڈ کرسکتا ہے۔ وہاں کوئی بڑا جیٹ طیارہ لینڈ نہیں کرسکتا۔ اس موقع پر سینیٹر رحمن ملک کی طرف سے استفسار کیا گیا کہ اگر گلگت بلتستان میں ایک آرگنائزیشن باہر کی فنڈنگ کررہی ہے تو اس کا ریگولیٹر کون ہے؟ ۔کمیٹی نے آغاخان رورل سپورٹ پروگرام کی فنڈنگ اور دیگر تفصیلات آئندہ اجلاس میں طلب کرلیں۔

Facebook Comments
Share Button