تازہ ترین

Marquee xml rss feed

وزیراعلیٰ پنجاب کا گجرات میں طالبات پر تیزاب پھینکنے کے واقعہ کا نوٹس،ملزمان کی گرفتاری کا حکم-وزیراعلیٰ پنجاب سے دانش سکولز سے فارغ التحصیل ہوکراعلی تعلیمی اداروں میںتعلیم حاصل کرنے والے طلباء و طالبات کی ملاقات دانش سکول پر تنقید کرنے والے سیاسی لیڈروںنے اپنے ... مزید-سپریم کورٹ کی سفارش پر قائم کمیٹی نے سندھ اور بلوچستان کے اکیس غیر معیاری نجی اور سرکاری لاء کالجز بند کرنے کی سفارش کر دی-چیف جسٹس نے پنجاب میں 600 سے زائد بچوں کے اغوا کی میڈیا رپورٹس کا نوٹس لے لیا-وزیراعلیٰ پنجاب کا پیپلز پارٹی کے رہنما جہانگیر بدر مرحوم کے بھائی کے انتقال پر اظہار تعزیت-وزیراعلیٰ پنجاب سے سندھ کے شیرازی برادران کی ملاقات شیرازی برادران کا عوام کی فلاح و بہبود اور ترقی کیلئے بے مثال اقدامات پر شہبازشریف کو خراج تحسین عوام کی خدمت کا ... مزید-فیس بک کے لوگو کا رنگ نیلا کیوں ہے،ایسا انکشاف جو آپ کے وہم و گمان میں بھی نہ ہو گا-لاہور، ملک کے وزیر اعظم عمران خان ہونگے،اعجازاحمد چوہدری نواز شریف اور زرداری ٹولہ نے اقتدار میں آ کر صرف عوام کا خون چونسا ہے اور اپنی جیبیں بھری ہے ملک کے تباہی کے ... مزید-پشاور، بس ریپڈٹرانزٹ منصوبے پر صوبائی کابینہ کو بریفننگ واحد منصوبہ ہے جو قلیل عرصے اور کم لاگت سے مکمل ہوگا،پرویز خٹک مجموعی لاگت میں بسوں کی خریداری، اراضی، کمرشل ... مزید-عوام کی عدم دلچسپی کے باعث سندھ گیمز کی افتتاحی تقریب نا کامی کا شکار ہوئی ہے ، سید صفدر حسین شاہ

GB News

دھرنے پہ دھرنا

Share Button

اتحاد چوک گلگت میں ایک دھرنا ختم ہوتے ہی دوسرا دھرناشروع ہوگیا اتحاد چوک مسلسل بند ہونے کی وجہ سے گلگت شہرمیں ٹریفک جام معمول بن چکا ہے اورپانچ منٹ کاراستہ ایک گھنٹے میں طے ہوتاہے عوامی ایکشن کمیٹی اورانجمن تاجران نے اتحاد چوک پر22دسمبر سے ٹیکسوں کے خلاف اتحاد چوک پرباقاعدہ ایک خیمہ نصب کر کے دھرنا دیا تھااب کنٹیجنٹ پیڈ ملازمین نے مطالبات کی منظوری تک دھرنادے دیا ہے’اپنے مطالبات کیلئے دھرنے اور جلسے جلوسں و ہڑتالیں ایک معمول بن کر رہ گیا ہے جس سے دوسرے لوگوں کی زندگیاں اجیرن ہو جاتی ہیں اس ضمن میں ضرورت اس بات کی ہے کہ اپنے جمہوری حق کیلئے آواز بلند کرنے والوں کو دوسروں کے جمہوری حق کو پامال کرنے کی اجازت نہیں دی جانی چاہیے اس کے لیے قانون سازی کر کے الگ سے جگہ مختص کی جانا بہت ضروری ہے تاکہ شاہراہیں اور عوامی راستوں کی بندش نہ کی جا سکے’یہ کامیابی سخت اقدامات اور سب کے لیے یکساں قانون کی عملداری ہی سے ممکن ہو سکتی ہے ‘بصورت دیگر اس طرزعمل کا تدارک نہیں کیا جا سکتا۔

Facebook Comments
Share Button